certifired_img

Books and Documents

Books and Documents

A Spiritual Magazine with a Difference
Suleiman Khan, New Age Islam

For one thing, unlike most other ‘Islamic’ magazines, it is not linked to any particular Muslim sect. Discussions about minor details of jurisprudence or Fiqh and rituals and debates about external forms of piety, such as about dress and deportment, may be a major focus of many other ‘Islamic’ magazines—but these do not find any space in Spirit of Islam, whose focus, its masthead announces, is ‘global peace and spiritual living’. Absent, too, from its pages are heated polemics seeking to prove the veracity of one Muslim sect and the falsity of the rest, hagiographical accounts of Muslim religious and political figures, past and present, uncritical laudatory accounts of Muslim history, diatribes against so-called ‘enemies of Islam’....

جاگیر دارانہ جمہوریت میں عوام او رمنتخب امیدواروں میں جو فرق او ردوری ہوجاتی ہے اس کی وجہ سےاگرکبھی آمریت یا مارشل لاء کے خلاف تحریک چلائی جاتی ہے تو اس میں کامیابی کے ا مکانات اس لئے کم ہوجاتے ہیں کہ حکومت کے بدلنے کے ساتھ ہی یہ جاگیر دار نمائندےاپنی وفاداریاں بدل لیتےہیں کیونکہ ان میں سےبہت کم ہیں جو اپنی مراعات و آسائشوں کو خطرے میں ڈالنے کی ہمت رکھتے ہوں ۔ جاگیردار خاندانوں کی وفاداریاں بدلنے کی وجہ سے ہمارے سیاسی نظام میں کوئی استحکام پیدا نہیں ہوا ۔

 

معاشرہ کوبرائیوں سے کیسے پاک کیا جائے؟ اس مقصد کو پورا کرنے کےلئے بنیاد پرست جماعتیں دو راستے اختیار کرتی ہیں ۔ تبلیغ کا اور اگر اس کے ذریعے لوگ راہ راست پر نہ آئیں ۔ تو دوسری صورت تشدد اورطاقت کے استعمال کی ہے۔ کہ جس کےذریعے لوگ راہ راست پر نہ آئیں  تو دوسری صورت تشدد اورطاقت کااستعمال کیا ہے ۔ کہ جس کے ذریعے مخالف قوتوں کا صفایا کردیا جائے ، یا انہیں طاقت کے ذریعے دبا کر رکھا جائے ۔ اس لئے مصر میں اخوان المسلمون ناصر نے عرب نیشنل ازم کی مخالفت کی ۔

 

Black describes court proceedings against Serb President Slobodan Milosevic who was killed in a NATO prison on 11 March 2006 when it was clear that 'there had been no crimes, except those of the NATO alliance, and the attempt to fabricate a case against him collapsed into farce'. Since the conviction of President Milosevic 'was clearly not possible after all the evidence was heard, his death became the only way out for the NATO powers. His acquittal would have brought down the entire structure of the propaganda framework of the NATO war machine and the Western interests that use it as their armed fist'......

 

بنیاد پرستی کی تحریکوں کو مزید تقویت احیاء کی تحریکوں سے ملتی ہے ۔ احیاء کی تحریکوں کی بنیاد سنہرے ماضی کے تصور پر ہوتی ہے ۔ ان کےنظریئے کے مطابق مذہب کے ابتدائی دور میں جب کہ وہ اصلی اور حقیقی شکل میں تھا، اس وقت معاشرے میں امن و امان ، خوش حالی اور مسرت تھی،مگر جیسے جیسے زمانہ آگےبڑھتا گیا،مثالی معاشرہ تبدیلیوں کے نتیجے میں بدعنوانیوں سے آلودہ ہوتا چلا گیا ۔ یہاں تک کہ اس کی اصلی شکل مسخ ہوگئی ۔ اور اس کی پاکیزگی گناہوں اور نئی تبدیلیوں کی گندگی میں دب کر گم ہوگئی ۔

 

ہندوستان میں مسلمان معاشرہ تین عناصر پر مشتمل تھا ۔ فاتحین مہاجرین اور مقامی مسلمان۔ ان میں فاتحین خود کو سب سے برتر اور اعلیٰ سمجھتے تھے ۔ کیونکہ انہوں نے فتوحات کے ذریعے اقتدار قائم کیا تھا اس لئے ملک کے ذرائع میں ان کاحصہ سب سے زیادہ تھا اس لئے وہ حکمران طبقے  بن گئے تھے اس کے بعد وہ لوگ تھے کہ جو ہجرت کر کے آئے تھے چونکہ ان کا تعلق ایران وسط ایشیا سے تھا ۔ اس لئے نسلی طور پر وہ فاتحین کے گروہ سے تعلق رکھتے تھے ۔ اور انتظامیہ میں ان کی مدد کرتے تھے ۔

 

مطالعہ پاکستان کا مضمون لازمی طور پر تمام بیچلرز کی ڈگری حاصل کرنے والوں کو پڑھایا جائے اور کسی طالب علم کو اس وقت تک ڈگری نہیں ملے گی جب تک کہ وہ مطالعہ پاکستان میں کامیابی حاصل نہ کرلے اس سلسلے میں یہاں تک کیا گیا کہ پروفیشنل کالجوں میں بھی مطالعہ پاکستان کو لازمی مضمون قرار دیا تاکہ انجینئرز اور ڈاکٹر اپنی پیشہ وارانہ قابلیت میں ماہر ہوں یا نہ ہوں مگر یہ کہ وہ ایک ‘‘محب وطن پاکستانی’’ ضرور ہوں ۔

 

The Arab-Israeli conflict is the single most enduring as well as the most intensely scrutinized topic of Middle Eastern politics in the past century. Diplomatically, it compares to the Eastern Question concerning the future of the Ottoman Empire that earlier haunted European statecraft: both endured for more than a century, engaged a large cast of regional and international players, and consumed a disproportionate amount of attention. I consider my ideas about resolving the Arab-Israeli conflict as one of my two most significant contributions to American foreign policy.....

 

ہمارے معاشرے میں تعلیم کا یہ دوھرا معیار کوئی نئی بات نہیں کیونکہ اس کا تعلق طبقاتی معاشرے سے ہوتا ہے مگر اس کا مزید طاقتور بنانے میں برطانوی اقتدار کا مفاد بھی تھا لیکن آزادی کے بعد بھی معاشرے میں اس تفریق کو برقرار رکھا گیا کیونکہ اس صورت میں ان کی حیثیت مستحکم او ر مضبوط رہی اس دوہرے معیار کو مزید اس وقت اور تقویت ملی جب تعلیم کو مکمل طور پر اسلامی بنانے کا فیصلہ ہوا اور یہ اسلامی تعلیم عام اسکولوں او ر تعلیمی اداروں تک محدود ہے۔

 

The Qur’anic pronouncements on justice as listed in the foregoing are clear, concise and unambiguous and together establish one of its revolutionary principles. Until the advent of Islam and for centuries to come, the poor and the weak were denied justice while the rich and the mighty enjoyed a privileged form of justice that institutionalized oppression and injustice in human society. The Qur’an abolished all this, and paved the way for the establishment of societies, in which the weakest could take the strongest to the court of law and get justice.....

 

ہمارے ملک میں بھی حکمران طبقے اسی ذہن و دماغ کے ساتھ تاریخ کو اپنے تسلط میں رکھ کر اسے مسخ کرتے ہیں اور اس کے ذریعہ اپنی بدعنوانیوں کو صحیح ثابت کرتےہیں ، ان کی کوشش ہوتی ہے کہ اپنی غلطیوں اور حماقتوں کو یا توبالکل ختم کردیا جائے یا انہیں اس طرح سے پیش کیا جائے کہ وہ جھوٹ کے لبادے میں روپوش ہوجائیں وہ اپنے وقار اورعزت کو جھوٹی روایات کی بنیاد پر باقی رکھنا چاہتے ہیں پاکستان میں اس کی مثال محمود الرحمٰن کمیشن رپورٹ سےدی جاسکتی ہے جسے عوام کے اصرار کے باوجود اس بہانے کی بنیاد پر نہیں چھپا گیا کہ اس میں ملک کے بارے میں ایسی احساس معلومات ہیں کہ ان کے ظاہرہونے سے اس کے تحفظ کو خطرہ پیدا ہوجائے گا ۔

 

The film won the Grand Jury Prize at the Indian Film Festival of Los Angeles in 2004 and was nominated for the Golden Leopard award at the Locarno International Film Festival the same year. Black Friday's music was provided by the rock band Indian Ocean and the title track Bandeh has since become a contemporary cult hit......

 

ایک زمانے تک تاریخ اسکولوں میں پڑھائی جاتی تھی مگر آہستہ آہستہ اسے اسکولوں سے ختم کرکے اس کی جگہ معاشرتی علوم کو متعارف کیا گیا ہے اس لئے طالب علموں کو تاریخ کے بارے میں اب کوئی معلومات نہیں رہیں چونکہ کالجوں میں یہ اختیاری مضمون ہے اس لئے یہ طالب علم کی مرضی پر ہوتاہے کہ وہ اسے لے یا نہ لے اکثریت اس مضمون کو اس لئے اختیار نہیں کرتی کہ وہ اسکول کے زمانے میں اس سےناواقف ہوتے ہیں اور انہیں اس میں کوئی دلچسپی نظر نہیں آتی ۔

 

حقیقت میں دیکھا جائے تو تاریخ کا کام یہ ہے کہ وہ لوگوں کے شعور کو بڑھائے اور ان کی فکر میں وسعت پیدا کرے او ریہ تب ہی ممکن ہے جب تاریخ کو ‘‘عالمی اور انسانی تاریخ کی حیثیت سے پڑھایا جائے کیونکہ جب تاریخ میں عالمی انسانیت کاتصور آئے گا تو اس میں مذہب ، نسل ، فرقہ واریت اور قومیت کے لئے کوئی جگہ نہیں ہوگی کیونکہ عالمی تاریخ اس زمین پر انسان کے ارتقاء پر بحث کرتی ہے اور اس میں انسانی معاشرے کے تمام پہلو آجاتےہیں ۔

 

تاریخ کا ایک المیہ یہ ہوا کہ سیاست دانوں اور بااقتدار طبقے کے زیر اثر آکر ان کی تمام کاوشیں ، سیاسی اور معاشی خرابیوں کو صحیح ثابت کرنے کےلئے استعمال ہونے لگیں ایک مرتبہ جب معاشرے میں آمرانہ طرز حکومت قائم ہوگئی اور طاقتور ادارے اس کی مدد کی غرض سےتشکیل پا گئے تو پھر وہ تمام پہلو جو جمہوریت ، لبرل ازم ، سیکولرازم اور سوشلزم کے بارے میں عوام کو معلومات فراہم کرتے تھے اور جن کی مدد سے وہ سیاسی و معاشی اور معاشرتی حالات کا تجزیہ کرسکتے تھے ان سب کو تاریخ کے مطالعہ سے خارج کردیا گیا اس مرحلے پر پیشہ ور اور سرکاری مورخین نے وہی کام سر انجام دیا جو ان سےپہلے درباری مورخین کیا کرتے تھے۔

 

جب مسلمانوں نے ہندوستان میں اپنی حکومت کی بنیاد رکھی تو مساوات کو یہاں بھی عملی جامعہ نہیں پہنا یا گیا ۔ یہاں صورت حال یہ تھی کہ محکوم رعایا غیر مسلم تھی اور اکثریت بھی تھی جب مسلمان اقلیت میں ۔ اس کا حل مسلمان حکمران طبقے نے یہی نکالا کہ اکثریت پر قوت و طاقت کے ذریعے حکومت کی جائے اس بات کی کوئی کوشش نہیں ہوئی کہ ہندوستانی معاشرے میں جہاں ذات پات کی تقسیم تھی وہاں نچلی ذات کےلوگوں  کا سماجی مرتبہ بڑھا کر ان کی ہمدردیاں حاصل کی جائیں جو لوگ مسلمان بھی ہوئے تو ان کو معاشرے میں برابر کا درجہ نہیں دیا گیا۔

 

ہمارے ہاں تاریخ کو مذہب سے منسلک کرکے اسے اسلامی تاریخ یا مسلمانوں کی تاریخ سے موسوم کرنا شروع کردیا۔ اسلامی تاریخ کی اصطلاح نے ہمارے مورخین کو خاصی الجھن میں مبتلا کردیا کیونکہ جب اسلامی تاریخ میں غیر اسلامی فعال نظر آئے تو یہ سوال پیدا ہوا کہ کیا سب اسلامی تاریخ ہے۔؟ اسلامی تاریخ کو اس الجھن سے نکالنے کےلئے ہمارے مورخین نے یہ فرق پیدا کرنے کی کوشش کی کہ اسلامی تاریّخ میں صرف رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم اور خلفائے راشدین کے عہد تک محدود ہے۔

 

عالمی تہذیبوں کے مطالعے کے بعد ہی ہم اس نتیجے پر پہنچیں گے کہ تہذیب و تمدن کی تخلیق کسی ایک قوم کی اجارہ داری نہیں رہی ہماری تمام روایات اور اقدار کی جڑیں انہی عالمی تہذیبوں میں ملیں گی۔ ہمارے عقائد نظریات اور توہمات انہی تہذبیوں میں پائیں جائیں گے ۔ ہمارے معاشرہ کوئی تنہا اور مجروشئے نہیں بلکہ عالم برادری کا ایک حصہ ہیں اور ہماری تہذیب کی جڑیں عالمی تہذیبوں میں ہیں ۔

 

ہماری تاریخ نویسی کا سرمایہ اس وقت ہمارے پاس تین قسموں میں ہے۔ عہد سلاطین و عہد مغلیہ کی تاریخ نویسی، عہد برطانیہ کی تاریخ نویسی، اور برصغیر کی آزادی کے بعد کی تاریخ نویسی۔ ان تینوں قسموں کی تاریخ نویسی کی کیا کیا خصوصیات ہیں؟ او رانہیں کن رجحانات کے تحت لکھا گیا ہے؟ ان سوالات کا جواب دینے کے لئے ان کا مختصر تنقیدی جائزہ لیا جائے گا۔

انسانی تاریخ میں ہر نظریے کے ماننے والوں کی جانب سے یہ کوششیں ہوتی رہی ہیں کہ وہ زوال پذیر ، فرسودہ اور مضمحل معاشرے کی ترقی کاخواب اسی میں دیکھتے ہیں کہ اپنے نظریے کا دوبارہ سےاحیاء کیا جائے۔ اس کی تعلیمات کو اسی شدت کےساتھ نافذ کیا جائے ۔ لیکن یہ ایک تاریخی حقیقت ہے کہ ایسی تمام تحریکیں چاہے ان کاتعلق کسی نظریے سے ہو ہمیشہ ناکام رہی ہیں ۔ تاریخ اس بات کی شاہد ہے کہ آج تک کوئی نظریہ اپنی قوت و طاقت کھونے کےبعد دوبارہ اس قابل نہیں ہوا کہ اس کا احیاء کیا جاسکے ۔

انگریزی حکومت کے زمانے میں جو ذہنی و فکری تبدیلیاں یورپ میں ہورہی تھیں، اس سے ہندوستان بھی متاثر ہوا اور اس اثر سے یہاں اصلاحی تحریکیں شروع ہوئیں، جدید تعلیم کا آغاز ہوا اور اہل ہندوستان قدیم دور سےنکل کر جدید دور میں داخل ہوگئے یہ کہنا مشکل ہے کہ ہندوستان نے جو کچھ انگریزی اقتدار کے زمانے میں حاصل کیا یہی کچھ وہ آزادانہ طور پر کتنے عرصے میں اور کیا کیا قربانیاں دے کر حاصل کرتا ، یہ صحیح ہے کہ زمانے کی رفتار کو کوئی استبدادی نظام نہیں روک سکتا ، فروسودہ ادارے اور روایات ختم ہوکر رہتی ہیں ۔لیکن یہ عمل ترقی یافتہ غیر ملکی اقتدار کی صورت میں تیز ہوجاتا ہے۔

 

تاریخ میں یہ اصول عام رہا ہے کہ جب کسی ملک پر غیرملکی قابض ہوجاتےہیں تو مفتوح قوم کا ایک طبقہ فاتح سےمفاہمت کرکے اس کے ساتھ اقتدار میں شریک ہوجاتا ہے۔ چنانچہ سکندر لودھی کےزمانے میں کاسیتھوں نے فارسی زبان سیکھنی شروع کی تاکہ حکومت کی ملازمتیں انہیں مل سکیں ۔ ان کی فارسی زبان دانی کے باوجود بجائے سیکھنی شروع کی تاکہ حکومت کی ملازمتیں انہیں مل سکیں ۔ ان کی فارسی زبان دانی کے باوجود بجائے اس کے ان کی عذر ہوتی ، ان کا مذاق اڑایا گیا اور ان کی فارسی میں ہینگ کی بو آتی رہی ۔

 

معاشرےمیں خواص اور عوام کے مفادات ہمیشہ علیحدہ علیحدہ ہوتےہیں ۔ اس لئے ایک ایسے معاشرے میں جہاں بادشاہت ہو ، اور شخصی حکومت ہو وہاں حکمران کی طاقت لامحدود ہوتی ہے یہ اس کے اختیار میں ہوتا ہے کہ جسے چاہے نواز دے اور جسے چاہے ذلیل و خوار کردے۔ اس کے منہ سے نکلا ہوا ہر لفظ قانون ہوتاہے اور حکومت کے تمام ادارے اس کی مرضی و خواہش کے تابع ہوتے ہیں۔ اس لئے ایک ایسے معاشرے میں خواص کا طبقہ جس میں امراءفوج کے جنرل و افسر، دفتروں کے عہدیدار اور ملازمین شاملہ ہوتےہیں اپنے حکمران کی خوشنودی کے خواہاں رہتے ہیں۔

With time, the Qur’an admonishes against various mundane as well as grave vices such as foul talk, miserliness, bearing a false witness, adultery (Zina)3 killing of innocent people, and all manners of abominable acts (Fawahishah),4 and reiterates its exhortation against unwedded relationships....

فن تعمیر کی اس تعریف کو ذہن میں رکھتے ہوئے جب ہم ہندوستان میں مسلمانوں کے عہد میں جو تعمیرات ہوئیں ان پر نظر ڈالتے ہیں تو یہ بات واضح ہوکر ہمارے سامنے آجاتی ہے کہ فن تعمیر ، جس  تصور یا جس ذہن کی نمائندگی کرتاہے وہ بادشاہ کی الوہیت اور عظمت ہے اور اس کا اظہار صرف ایک طبقے کی ثقافت ہے اور یہ حکمران طبقہ حکمرانوں  امراء اور جاگیرداروں کا تھا ۔ ان تمام عمارات میں  جو انہوں نے تعمیر کرائیں ،ان میں ان کا محدود طبقاتی پس منظر اور ذہنیت موجود ہے۔

 


Get New Age Islam in Your Inbox
E-mail:
Most Popular Articles
Videos

The Reality of Pakistani Propaganda of Ghazwa e Hind and Composite Culture of IndiaPLAY 

Global Terrorism and Islam; M J Akbar provides The Indian PerspectivePLAY 

Shaukat Kashmiri speaks to New Age Islam TV on impact of Sufi IslamPLAY 

Petrodollar Islam, Salafi Islam, Wahhabi Islam in Pakistani SocietyPLAY 

Dr. Muhammad Hanif Khan Shastri Speaks on Unity of God in Islam and HinduismPLAY 

Indian Muslims Oppose Wahhabi Extremism: A NewAgeIslam TV Report- 8PLAY 

NewAgeIslam, Editor Sultan Shahin speaks on the Taliban and radical IslamPLAY 

Reality of Islamic Terrorism or Extremism by Dr. Tahirul QadriPLAY 

Sultan Shahin, Editor, NewAgeIslam speaks at UNHRC: Islam and Religious MinoritiesPLAY 

NEW COMMENTS

  • Hats Off thinks this is an apostate website
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Hats Off lies again! I distinctly said, "We do not know whether....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Hats Off's simplistic and self-serving theories will never delve into....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Criticizing some aspect of a religion, especially one's own religion....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • I agree! The Grand Design is nothing more than to make us more. .
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Yes, Islam is mercy and compassion, not retaliation.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Your article is well- contextualised and surely presents field...
    ( By Meera )
  • This article is a direct lift from my article. Kya dahshatgard aise hote Hain.
    ( By Arshad )
  • Apney no such bhi Kahan hai uska tarjuma Urdu me karden to hum jaisey hechmadan apke aalimana afkar ke durre bebaha...
    ( By Arshad )
  • ARMAN purey nahi hongey whatever tricks he may play.
    ( By Arshad )
  • ah! another green horn sociologist and wanna-be political scientist! there is not a single subject in which...
    ( By hats off! )
  • being a stealth jihadi, 'we' know you will always side with the most obstructive muslim available. no ....
    ( By hats off! )
  • Talash-e-haq main zameer afaqi ki bey zameeri dekhi ke woh "HAQ" Ye'ni Allah ki talash....
    ( By Qaseem )
  • oh! rational mohammad yunus, where are you?
    ( By hats off! )
  • We" are the people! Hats Off's question is more inane than pertinent...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Preaching of "True Islam" may not be as benign as it sounds, unless....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • "It is curious that a community facing such persecution....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Right wing demagogues and right wing populism seem to be the twin....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Dear Rajendraji, Shah Waliullah's most influential work Hujjatullah al-Baligha...
    ( By Sultan Shahin )
  • That is a lie cooked up by left historian .Akbar was some what less cruel...
    ( By Madhuraj Patinhare Covilakam )
  • Dear Naseer Saheb. Ap ki baat kafi sadah or lubhauni (Eye-Catching) maloom...
    ( By misbahul Huda )
  • Doctor tahiul quadri mujadid e rawa hai Inhone 1300 + se zyda...
    ( By Sibgat uk )
  • who the heavens is this 'we'? how many of you are there...
    ( By hats off! )
  • Commendable piece and frightening too. One feels that the water has risen well above the head and ...
    ( By Skepticles )
  • Dear sir I want to read book on shah waliullh in hindi editions pls info me book'
    ( By Rajendra J.Tekale )
  • We do not know whether the doctor or the woman is telling the truth. Let the General Medical Council ...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Only a malicious liar would call me or Thapar a Hindu hater. Lying and smearing are Hats Off's only tools of trade.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Hats Off is stuck in some medieval version of Islam that he projects on me and others. Lying ....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • a good example of how muslims should live in half-naked....
    ( By hats off! )
  • one hindu hater always loves another hindu hater.
    ( By hats off! )
  • if positive psychology is basically lying, obfuscating and misleading people....
    ( By hats off! )
  • An excellent testimony on what religions should be and can be! The author is a practitioner of "positive psychology....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Excellent article! A good example for our ulama
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Why do right-wing bhakts hate Thapar so much...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Only a moron cannot distinguish between Hindus and Hindutvawadis. The latter are the dispensers of hate, just like Hats Off.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Poor Hats Off! He is frustrated because his hate prachar is not working.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • is this why every religion describes all other religions....
    ( By hats off! )
  • the true scotsman. no doubt. the 'real' muslims, ....
    ( By hats off! )
  • go home jojo. get back to where you once belonged. get back!'
    ( By hats off! )
  • Dear friends, Female full and partial face covering so called HIJAB has nothing to do with Neither Islam nor the Holy Quoran. It ...
    ( By Maq Jirzeem )