certifired_img

Books and Documents

Books and Documents

The Wars That Pakistan Began and Lost
Syed Badrul Ahsan

From Kutch to Tashkent promises to be a source of delight for researchers of sub continental and especially Pakistani history. In broad measure, it is mirror into the negative psychological make-up that has consistently defined Pakistan's political and military leaders since the country was created in 1947. One wonders if any lessons have been learned.……

'Faisal I of Iraq'
Oren Kessler

As Mr. Allawi writes, a "form of realistic, purposeful and constructive patriotism also died with Faisal, to be replaced with the far more strident, volatile and angry Arab nationalism that swept the Arab world after the end of the Second World War." Today much of the Arab world remains in thrall to that negative nationalism—one opposed to Israel, America and a vaguely defined "imperialism" but unable to articulate what it supports....

 

The Emergence of violent Islamism in the heart of the Western world, and the "war on terror" proclaimed against it, led to some interesting ideological trends. One might be described as progressive Islamophobia: a school of thought which, from a left-of-centre perspective, insisted that militant Islam was really a reactionary force ….

 

The world of Hindu gods and goddesses is varied and complex. Nobody really knows how many gods and goddesses are actually there. Spiritual masters and Indian scholars are unanimous, however, that although the Puranas and other scriptures refer to numerous gods and goddesses, Vedic monotheism considers these godly figures to be various aspects of a single god.…..

 

The War on Terror unleashed immense violence in several Muslim-majority countries, either through outright invasions and occupations or through drone strikes and special operations undertaken by the CIA and various branches of the American military. The ideological justification for these wars rests upon the construction of a nebulous enemy—driven either by an adherence to Islam or,….

 

The Crucible of Iraq

Hallucinations merge with reality in wartime. Your eyes and memory play tricks on you. You experience things and then wonder if you experienced them.  Morality is turned upside down. Killers prey on the weak, the vulnerable and the innocent in the name of God or the state or some twisted ethnic loyalty. Murderers and assassins are rich and powerful statesmen. American soldiers blow up houses on a whim, obliterating entire families. Death is a lucrative industry.….

 

People’s  Poet: Sahir Ludhianvi
Farooq Sulehria

It will not be an exaggeration to state that progressive Urdu writers have popularised Marxist ideas in the Indian Subcontinent more successfully than the Marxist apparatchik….. 

The Islamophobes Have Arrived

This is a book about western hypocrisy and western fear. It is also about the artificiality of race and the hateful idiocy of its spawn, racism. The content is simultaneously provocative and thoughtful. Kundnani indicts a system based on prejudices and falsehoods and presents a future that is bleak at best unless that system changes. The Islamophobia of western governments has already caused at least two wars this century…..

Islamic Economy During Khilafat-e-Rasheda (Part 25) خلافت راشدہ کا اقتصادی جائزہ حصہ 25
Khurshid Ahmad Fariq

علی حیدر رضی اللہ عنہ کے مختصر دور خلافت میں انصار خلافت کے ناخداؤں میں سے تھے ۔ ان کو اعلیٰ فوجی اورسول عہد  ے ملے جن سے شیخین اور عثمان غنی کے عہد میں وہ محروم رہے تھے ۔ سقیفہ بنی ساعدہ میں ابو بکر صدیق کے انتخاب سےجن دو  فریقوں  کو سخت مایوسی ہوئی تھی وہ علی حیدر رضی اللہ عنہ اور ان کا ہاشمی خاندان اور انصاری شاخ خزرَج کے سربرآور دہ لیڈر سعد بن عُبادہ رضی اللہ عنہ اور ان کے اہل  خاندان تھے ۔ حالیہ ناکامی  نے دونوں  فریقوں  کو ایک دوسرے سے قریب او رکامیاب  فریق  کے مقابلہ  میں متحد کردیا تھا ۔

 

Islamic Economy During Khilafat-e-Rasheda (Part 24) خلافت راشدہ کا اقتصادی جائزہ حصہ 24
Khurshid Ahmad Fariq

عثمان غنی رضی اللہ عنہ نے اپنے عہد میں فاروقی سنت پر عمل کیا لیکن علی حیدر رضی اللہ عنہ کاطریق کار اپنے تینوں پیشرووں سے مختلف تھا ۔ انہوں نے نہ تو غلاموں کو کچھ دیا نہ مسلمانوں کے درمیان فرق مراتب قائم رکھا 3؎ ۔ انہوں نے عمر فاروق رضی اللہ عنہ کے دیوان العطا کی درجہ بندی تو بر قرار رکھی لیکن نئی تنخواہیں مقرر کرنے میں فرق مراتب کا اصول ترک کردیا اسی طرح وہ اس روپیہ  پیسہ او رمال و متاع کی تقسیم میں بھی مساوات سے کام لیتے جو غنیمت کی راہ سے آتا یا تنخواہیں دینے کے بعد بچ رہتا تھا ۔

 

Islamic Economy During Khilafat-e-Rasheda (Part 23) خلافت راشدہ کا اقتصادی جائزہ حصہ 23
Khurshid Ahmad Fariq
ہجرت سےپہلے علی حیدر رضی اللہ عنہ کی مالی حالت او رمعاشی سرگرمیوں  سے ہم بے خبر ہیں،بظاہر ایسا  معلوم ہوتا ہے کہ ان کا کوئی  مستقل ذریعہ نہیں تھا اور وہ اپنے والد ابو طالب کی وفات کے بعد رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے زیر کفالت زندگی بسر کرتے تھے ۔ ہجرت کے بعد جب ا ن کی عمر بائیس تئیس سال سے زیادہ نہ تھی دو ڈھائی بر س تک وہ سخت عسرت میں مبتلا رہے ۔ ایک وقت ایسا بھی آیا جب انہوں نے فی کھجور ایک ڈول کے حساب سے کسی  یہودی کےکنوئیں سے پانی کھینچ کر پیٹ بھرا 1؎ ۔ 2 ؁ ھ میں ان کی شادی رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی صاحبزادی فاطمہ رضی اللہ عنہ سے طے ہوئی تو وہ بالکل تہی دست تھے ۔

 

Islamic Economy During Khilafat-e-Rasheda (Part 22) خلافت راشدہ کا اقتصادی جائزہ حصہ 22
Khurshid Ahmad Fariq

علی حیدررضی اللہ عنہ کا انتخاب غیر معمولی حالات میں ہوا تھا ۔ انہیں نہ عثمان غنی  رضی اللہ عنہ نے خلیفہ مقرر کیا تھا نہ بڑے صحابہ کے کسی انتخابی پینل نے  بلکہ ان لوگوں کے ہاتھوں وہ اس عہدہ پر فائز ہوئے تھے جنہوں نے چالیس دن عثمان غنی کی حویلی کا محاصرہ کر کے انہیں قتل کر ڈالا تھا ۔ جیسا کہ گذشتہ اوراق میں بیان کیا جا چکا ہے ، پہلے ابوبکر صدیق اور پھر عمر فاروق کے خلیفہ ہونے پر بطور احتجاج مدینہ کے سیاسی افق پر تین پارٹیاں نمودار ہوگئی تھیں ۔ سب سے بڑی اور طاقتور پارٹی علی حیدر رضی اللہ عنہ کی تھی، دوسری طلحہ بن عبیداللہ رضی اللہ عنہ کی اور تیسری زبیر بن عوّام رضی اللہ عنہ کی ۔

 

Islamic Economy During Khilafat-e-Rasheda (Part 21) خلافت راشدہ کا اقتصادی جائزہ حصہ 21
Khurshid Ahmad Fariq

عثمانی خلافت میں ا س طبقہ نے ہر دوسرے طبقہ سے زیادہ شاندار اقتصادی ترقی کی منزلیں طے کیں ۔ غیر ہاشمی قریش میں سب سے بڑا اور با حوصلہ خاندان بنو اُمیّہ کاتھا جس کے ایک ممتاز رکن خلیفہ وقت عثمان غنی رضی اللہ عنہ تھے ۔ مدینہ ، حجاز اور پڑوسی  ملکوں سے ہونے والی معتدبہ تھوک تجارت اسی طبقہ کے  ہاتھ میں تھی ۔ اس طبقہ کے ایک گروہ  نے مفتوحہ  علاقوں  میں جائدادیں  بھی حاصل کرلی تھیں ۔ بنو امیّہ کے کچھ خاندان تجارت میں مشغول تھے او ر کچھ  سرکاری عہد وں پر فائز تھے ۔ حکومت  کے بیشتر اعلیٰ  پرُ منفعت مناصب  پر یہی  خاندان چھایا ہوا تھا ۔

Islamic Economy During Khilafat-e-Rasheda (Part 20) خلافت راشدہ کا اقتصادی جائزہ حصہ 20
Khurshid Ahmad Fariq

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم زندگی میں کئی موقعوں پر عثمان غنی رضی اللہ عنہ نے اسلامی خدمت یا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کی خوشنودی کے لئے ہر دوسرے صحابی سے زیادہ دل کھول کر روپیہ خرچ کیا ۔ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم اور ان کے ساتھی ہجرت کر کے مدینہ آئے تو و ہاں کا پانی انہیں پسند نہیں آیا شہر کے باہر ایک اچھے پانی کاکنواں تھا ۔ رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کااشارہ پاکر عثمان غنی رضی اللہ عنہ نےیہ کنواں دس ہزار روپے او ربقول بعض دو ہزار میں خریدلیا ، ایک ماخذ میں کنویں کی قیمت ساڑھے تیرہ ہزار 2؎ روپے اور دوسرے میں ساڑھے سترہ 3؎  ہزار بتائی گئی ہے۔

 

Islamic Economy During Khilafat-e-Rasheda (Part 19) خلافت راشدہ کا اقتصادی جائزہ حصہ 19
Khurshid Ahmad Fariq

عثمان غنی رضی اللہ عنہ اور مُطعم بن جُبیر رضی اللہ عنہ نے رسو ل اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے کی تو انہوں نے ان دونوں گھرانوں  کے مخالفانہ رویہ اور معاندانہ طرز عمل کو ان کی محرومی کاذمہ دارقرار دے کر شکایت رد کردی تھی 1؎ ۔ ہجرت سے پہلے خاندان عبد شمس اور نوفل کی تجارت جزیرہ نمائے عرب ، شام اور عراق میں فروغ پر تھی اور ان کے متعدد گھرانے خوب مالدار تھے لیکن ایک طرف رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم سے بدر، اُحد اور خندق کی جنگوں کی تیاری کے عظیم مصارف اور دوسری طرف ان کے ایک گراں  قدر تجارتی قافلہ کے مسلمانانِ مدینہ کے ہاتھوں  لٹنے نیز عراق وشام  کی تجارتی شاہراہوں کے مسلمان ترکتاز کے باعث مسدور ہوجانے سے ان کی خوش حالی  اور تجارت پر کاری ضرب لگی تھی ۔

 

Islamic Economy During Khilafat-e-Rasheda (Part 18) خلافت راشدہ کا اقتصادی جائزہ حصہ 18
Khurshid Ahmad Fariq

فاروقی اور عثمانی فتوحات میں کچھ بنیادی فرق تھے ۔ دور فاروقی میں عرب فوجیں عراق، شامی اور مصری حکومت سےبڑے بڑے معرکوں میں لڑکر جیتی تھیں ۔ ہزیمت کے بعد ان حکومتوں کے سربراہ یا تو ملک چھوڑ کر چلے گئے تھے یا انہوں نے عربوں کےسامنے گھٹنے ٹیک کر خود کو ان کے رحم و کرم پر چھوڑ دیا تھا ۔ عربوں نے اُن سے جزیہ اور لگان کامطالبہ کیا اور باوجود یکہ جزیہ ذلت کا ایک بد نما نشان تھا اور لگان کی شرح بھی سابقہ لگان سے زیادہ تھی،انہیں مجبوراً دونوں قبول  کرنا پڑے گا ۔ جن  علاقو ں  کے حاکم بغیر  لڑے یا معمولی جھڑپوں کے بعد صلح کے لئے تیار ہوگئے تھے اُن سے بھی جزیہ اور لگان طلب کیا گیا تھا اور چونکہ وہ بھی فارس، شام اور مصر کی عظیم الشان حکومتوں کے سقوط سے مبہوت تھے اور عرب طاقت سے مرعوب ، اس لئے انہیں  یہ دونوں مطالبے قبول کرنا پڑے تھے ۔

 

Islamic Economy During Khilafat-e-Rasheda (Part 17) خلافت راشدہ کا اقتصادی جائزہ حصہ 17
Khurshid Ahmad Fariq

عمر فاروق رضی اللہ عنہ کی تجہیز و تلقین کے بعد پینل کے پانچ رکن خلافت کی گتھی  سلجھانے ایک مکان میں جمع ہوئے ۔ مکان کے دروازہ پر عمر فاروق کی حسب ہدایت الیکشن نگران ابو طلحہ رضی اللہ عنہ نے مع پچاس مسلح انصاریوں کے جگہ لے لی ۔ جب کافی وقت ردّ وقدح میں  گذر گیا اور کوئی فیصلہ نہ ہوسکا بلکہ گتھی سلجھنے کی  بجائے اور زیادہ اُلجھ گئی تو عبدالرحمٰن بن عوف رضی اللہ عنہ نے خلافت کی امیدواری سےدست بردار ہونے کا ارادہ کرلیا، اسی وقت اُن کی عمر چھیا سٹھ سال تھی ، رئیس آدمی تھے خوش خورد خوش پوش ، اعزار کے علاوہ خلافت میں ان کے لئے کوئی مادی کشش نہیں تھی ،بلکہ  وہ سمجھتے تھے کہ اگر میں خلیفہ ہوا تو عمر فاروق کی سی خشک اور دکھی زندگی بسر کرنا  میرے لئے نا ممکن ہے اور اگر میں نے ایسی  زندگی بسر نہ کی تو میری خلافت کامیاب نہ ہوسکے گی اور خلافت کے امیدواروں کے ہاتھوں  مجھے ہر گز چین و سکھ نصیب نہیں ہوگا۔

 

Islamic Economy During Khilafat-e-Rasheda (Part 16) خلافت راشدہ کا اقتصادی جائزہ حصہ 16
Khurshid Ahmad Fariq
عمر فاروق رضی اللہ عنہ کا نظریہ تھا کہ چونکہ رسو ل اللہ صلی اللہ علیہ وسلم قریش تھے  اس لئے ان کا جانشین بھی قریشی ہونا چاہئے نیز یہ قبیلۂ قریش میں حکومت کی ذمہّ داریوں سے عہدہ برآ ہونے کی ساری عرب قوم سے زیادہ صلاحیت ہے ۔ اس نظریہ کے ماتحت انہوں نے انصار کامطالبۂ خلافت سقیفہ بنی ساعدہ میں شد و مد کے ساتھ مسترد کردیا تھا اور اس خوف سے کہ کہیں انصار خلافت کی خواہش پروان چڑھانے کی جد وجہد شروع کر دیں انہیں بڑے عہدوں سے الگ رکھا تھا ۔ عمر فاروق رضی اللہ عنہ کا دوسرا نظریہ تھا کہ خلافت کو خاندان نبوت سے بھی الگ رہنا چاہئے 1؎ ۔

 

Islamic Economy During Khilafat-e-Rasheda (Part 15) خلافت راشدہ کا اقتصادی جائزہ حصہ 15
Khurshid Ahmad Fariq

عمر فاروق رضی اللہ عنہ کی والدہ حَنتمہ ایک معزز اور خوش حال قرشی گھرانے کی خاتون تھیں اور والد خطاب بھی خاندانی آدمی تھے لیکن ناسازگار حالت کے باعث دنیوی خوشحال سےبہرہ ور نہیں ہوسکے ۔ عمر فاروق نے ہوش سنبھالا تو گھر میں عسرت کا ماحول تھا ۔ بچپن میں ان پر ایسا وقت بھی پڑا جب فاقے کی نوبت آگئی ۔ خلیفہ ہوکر کبھی بچپن کی روکھی پھیکی زندگی کا اپنی موجودہ پر نعمت و پر عظمت زندگی سے مقابلہ کر کے حیرت کیا کرتے تھے ۔ ایک موقع پر انہوں نے کہا : میری زندگی میں ایسا وقت بھی  آیا جب کھانے کے لئے روٹی تک نہیں  تھی، میں اپنی مخزومی خالاؤں کے گھر جاکر ان کے لئے کنوئیں سے میٹھا پانی نکال  لاتا اور وہ مجھے مٹھی بھر بھر کر کشمش دے دیتی تھیں 3؎ ۔ بچپن کے ایک موڑ پر وہ اپنی ماں کے چچا زاد بھائی عُمارہ بن ولید کے خادم  کی حیثیت  سے بھی نظر آتے ہیں ۔ عُمارہ تجارت کے لئے شام یا یمن کے سفر پر تھے اور عمر فاروق ان کی خدمت کرتے اور کھانا پکا کر کھلاتے 4؎ ۔

 

Islamic Economy During Khilafat-e-Rasheda (Part 14) خلافت راشدہ کا اقتصادی جائزہ حصہ 14
Khurshid Ahmad Fariq

زکات۔ اس ٹیکس کا مدنی قرآن نے 9 ؁ ھ یا اس کے لگ بھگ اعلان کیا تھا لیکن اس کے ضمن  میں آنے والی اشیاء کی وضاحت نہیں کی تھی ۔ عہد نبوی  میں دولت کے ان اصناف پر یہ ٹیکس لیا جاتا تھا : سونا، چاندی ، اونٹ ، گائے ،بکری ،بھیڑ ، گیہوں ، مکّا  (ذُرہ) جو، کھجور اور کشمش ۔ زروسیم پر ٹیکس کی شرح ڈھائی فی صد سالانہ تھی لیکن پچاس روپے یا اس کی قیمت کےسونے چاندی  پر ٹیکس معاف تھا ۔ کان اور دقینے سے حاصل کئے ہوئے سونے چاندی کی شرح پانچ فیصد تھی 1؎ ۔ پانچ اونٹوں ، تیس گاؤں اور چالیس بکریوں سےکم پر بھی زکات نہیں تھی ۔پانچ اونٹوں پر ایک بکری، تیس گاؤں پر ایک بچھڑا اور چالیس بکریوں  پر ایک بکری واجب تھی بشرطیکہ یہ مویشی تجارت کے لئے ہوتے اور ذاتی ضرورت کے کام نہ آتے ۔

 

Islamic Economy During Khilafat-e-Rasheda (Part 13) خلافت راشدہ کا اقتصادی جائزہ حصہ 13
Khurshid Ahmad Fariq

عمر فاروق رضی اللہ عنہ کی شاندار فتوحات نے مسلمانوں کی نظر میں ان کی قدرو منزلت تو بڑھائی ہی تھی، دیوان العطاء نے ان کی شخصیت میں  اور زیادہ کشش پیدا کردی ۔ اگر کہا  جائے کہ وہ قومی ہیرو بن گئے تھے تو بیجا نہیں ہوگا ۔عربوں کے سواد اعظم نے دیوان العطا ء کا پر جوش خیر مقدم کیا، لوگ عمر فاروق رضی اللہ عنہ کی درازی عمر کی دعائیں مانگنے لگے، مجلسوں میں ان کی تعریف ہونے لگی محفلوں میں ان کے اقدامات کو سراہا  جانے لگا۔

 

Islamic Economy During Khilafat-e-Rasheda (Part 12) خلافت راشدہ کا اقتصادی جائزہ حصہ 12
Khurshid Ahmad Fariq

فاروقی فوجوں نے دو تین سال کے مختصر عرصہ میں شام ، عراق اور فارس کا ایک بہت بڑا اور و سائل سے بھر پور علاقہ فتح  کر لیا  ، اس فتح  کے دوران ان کی فوجوں  نے دشمن  کے دیہاتوں ، قصبوں ، شہروں اور بازاروں  پر بیسیوں ترکتازیاں  کیں اور درجنوں معرکوں میں بڑی بڑی فوجوں کو زیر کیا ، اِن ترکتازیوں  اور فتوحات  کے نتیجہ  میں ان کے ہاتھ کثیر  مقدار میں مال غنیمت آیا، عربی روایت  نے اس غنیمت  کی مجموعی قیمت  رائج الوقت  سکوں میں محفوظ  نہیں رکھی لیکن اس کے گراں قدر ہونے کا اعتراف کیا ہے ۔

 

Islamic Economy During Khilafat-e-Rasheda (Part 11) خلافت راشدہ کا اقتصادی جائزہ حصہ 11
Khurshid Ahmad Fariq

عمر فاروق رضی اللہ عنہ نے ان اصناف کو مع شرح لگان بر قرار رکھا لیکن ایک بڑی ترمیم یہ کی کہ زیر کاشت اراضی کے علاوہ قابل کاشت اراضی پر بھی لگان لگا دیا خواہ عملاً اس پر کاشت نہ ہوتی ہو اور دوسرا تصرف یہ کیا کہ گیہوں  اور جو کی ہر مربع جریب پر آٹھ آنے کے ساتھ عراق پر قابض عرب فوجوں کی خوراک کے لئے ایک فقیر کا بھی اضافہ کردیا ۔ایک ؟ کا اطلاق سولہ سو مربع گز زمین پر ہوتا تھا اور اتنی زمین پر پیداوار ہونے والے غلّہ کو بھی عرب ایک جریب کے نام سے یاد کرتے تھے ۔

 
Peace and Jihad in Islam
Sayyid Muhammad Rizvi

The word “jihad” does not mean “holy war”. This is a Western rending of a broader concept in Islamic teaching. Ask any expert of Arabic language and he will tell you that “jihad” does not mean “holy war”. The term “holy war” has come from the Christian concept of “just war,” and has been used loosely as an Islamic term since the days of the Crusades….

Islamic Economy During Khilafat-e-Rasheda (Part 10) خلافت راشدہ کا اقتصادی جائزہ حصہ 10

مصر، شام ، میسور پوٹامیہ ، عراق ، اذربی جان اور فارس میں جہاں عمر فاروق رضی اللہ عنہ نے دس سال کے مختصر عرصہ میں اسلام کا سیاسی  و اقتصادی تسلط قائم کیا ، دنیا کی تین تمدن قومیں ۔ عیسائی ، یہودی اور پارسی آباد تھیں چھٹی اور ساتویں صدی عیسوی میں شام، مصر اور لبیا کی بزَ نطی عیسائی اور عراق و فارس کی پارسی حکومتیں  فوجی طاقت اور شاہی شان و شوکت میں دنیا کی ساری حکومتوں سے بازی  لے گئی تھیں ۔ ان  حکومتوں  کے تہ در تہ سیاسی اقتدار کے مضبوط قلعوں کو عمر فاروق رضی اللہ عنہ کی جس فوجی مشین نے مسمار کیا اس کی تشکیل  بنیادی طور پر انہی مالی وسائل سے ہوئی تھی جن کا رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم اور ان کے جانشین  ابوبکر صدیق رضی اللہ عنہ  بندوبست کر گئے تھے اور جن کی بنیادیں مدنی قرآن کے مجوزہ فراہمی دولت  کے ان تین اصولوں پر استوار ہوئی تھیں : مال غنیمت (2) جزیہ اور (3) زکات لیکن یہ مالی وسائل اتنے وسیع نہیں تھے کہ ان کی مدد سے دنیا کی مضبوط ترین قوموں کے قصر حکومت  گرادئے جاتے ۔

 


Get New Age Islam in Your Inbox
E-mail:
Most Popular Articles
Videos

The Reality of Pakistani Propaganda of Ghazwa e Hind and Composite Culture of IndiaPLAY 

Global Terrorism and Islam; M J Akbar provides The Indian PerspectivePLAY 

Shaukat Kashmiri speaks to New Age Islam TV on impact of Sufi IslamPLAY 

Petrodollar Islam, Salafi Islam, Wahhabi Islam in Pakistani SocietyPLAY 

Dr. Muhammad Hanif Khan Shastri Speaks on Unity of God in Islam and HinduismPLAY 

Indian Muslims Oppose Wahhabi Extremism: A NewAgeIslam TV Report- 8PLAY 

NewAgeIslam, Editor Sultan Shahin speaks on the Taliban and radical IslamPLAY 

Reality of Islamic Terrorism or Extremism by Dr. Tahirul QadriPLAY 

Sultan Shahin, Editor, NewAgeIslam speaks at UNHRC: Islam and Religious MinoritiesPLAY 

NEW COMMENTS

  • For Hats Off this is just another opportunity to say something hateful about Muslims! The guy is obsessed with anti-Muslim hatered.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • never mind taxila. or konark. The holy cow of monumentality - taj mahal.
    ( By hats off! )
  • Excellent article. Changed my ignorant mindset. May this idea spread to all the muslims of the world.
    ( By Sahil Raza )
  • Dear sister Teresa, Thanks for this meaningful review. I hope this review will encourage both serious readers and peace....
    ( By SAJID ANWAR )
  • The Crown Prince is only strengthening the monarchy and consolidating the anti-Iran front. He....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Taj Mahal's deterioration is symbolic of a paradigmatic shift in our values.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • This is so dumb really Turks, Arabs and Persians are not...
    ( By What? )
  • Dear Sister Teresa, You have wonderfully given the gist of the book and created curiosity among the readers ....
    ( By Rajat Malhotra )
  • An anti-reform AIMPLB gives Islam a bad name and is like a curse on the Muslim community. We need new leadership.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • ully agree with this press bulletin. Indian Muslims must reject the leadership of such regressive clerics.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Ghaus Sb says: “The way you are speaking in your comment shows you are not a Muslim.” From what I say, he can....
    ( By Naseer Ahmed )
  • Ghaus Sb says: Those who say, fitna means “shirk” and opine that the early Muslims fought to end fitna” must have meant “to end that ...
    ( By Naseer Ahmed )
  • Good article. The is only One G-d and Muhammad was the final messenger and prophet of G-d. As I write this, G-d is known ...
    ( By Lenny SB )
  • Please read my article on subject of "there is no compulsion in Religion...
    ( By Ghulam Ghaus Siddiqi غلام غوث الصدیقی )
  • Related article...
    ( By Ghulam Ghaus Siddiqi غلام غوث الصدیقی )
  • Naseer sb, Please read my comment again and again. You did not get my comment. I did not say both...
    ( By Ghulam Ghaus Siddiqi غلام غوث الصدیقی )
  • Arbitration is of two kinds - binding and non-binding. When the parties choose binding arbitration, the decision of the arbitrator is binding on the parties ...
    ( By Naseer Ahmed )
  • All right thinking Muslims must welcome such a course. Academic independence of the Universities must be protected and respected. There ....
    ( By Naseer Ahmed )
  • Referring to your comment: 7/18/2018 5:04:08 AM, to you both views are valid and fitna could mean “shirk or polytheism” also. The Quran clearly commands ...
    ( By Naseer Ahmed )
  • What do I mean by acceptance? Read the Quran carefully. There isn’t any verse that calls for tolerance of the peaceful rejecter of Islam. There ...
    ( By Naseer Ahmed )
  • The title question sums up the matter of the article. The answer is the course will discuss in detail how Muslim clerics and fundamentalists misinterpret ...
    ( By arshad )
  • Site Web Israel and Myanmar give more rights to muslims, than muslims give rights to Kafirs,...
    ( By Shan Barani )
  • Good article. The is only One G-d and Muhammad was the final messenger and prophet of G-d. As I write,..
    ( By Lenny SB (Shivarsi) )
  • I fully agree with Faizur Rahman sahib. Such "courts" should be called "Arbitration centers.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • A course on "Uses of religions to gain political power" would be entirely appropriate. By the way, Obama refused to use the label "Islamic....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • بہت بہت شکریہ جناب! اللہ عز و جل آپ کے مبارک کلمات کو مستجاب کرے۔ آمین بجاہ سید المرسلین صلی اللہ علیہ وسلم
    ( By misbahul Huda quadri )
  • fve questions
    ( By hats off! )
  • بہت عمدہ ۔ اللہ تعالی ہم مسلمانوں کو صوفیائے کرام کے نہج پر شریعت و طریقت کو سمجھنے اور اس پر عمل کرنے ...
    ( By Ghulam Ghaus Siddiqi غلام غوث الصدیقی )
  • Mushrik and muwahhid, Muslims and non-Muslims all equally need to adopt the path of tolerance. One sided tolerance is not helpful. This point should also ...
    ( By Ghulam Ghaus Siddiqi غلام غوث الصدیقی )
  • Naseer sb, Muhammad bin Ishaq said that Az-Zuhri informed him from Urwah bin Az-Zubayr and other scholars that (until there is no more fitnah) the Fitnah ...
    ( By Ghulam Ghaus Siddiqi غلام غوث الصدیقی )
  • An excellent read that contextualises many pertinent issues connected to Muslims and Islam! Your angle ....
    ( By Meera )
  • Naseer sb, Can you suggest me how many books have you read on theology? From your comments it appears you have been inspired by orientalist ...
    ( By Ghulam Ghaus Siddiqi غلام غوث الصدیقی )
  • Naseer sahib, What is theology? Why do you use theology in general term? In your comment you meant that those who follow theology are following ....
    ( By Ghulam Ghaus Siddiqi غلام غوث الصدیقی )
  • Before I say anything further, could you please explain your questions? What do you mean by acceptance?....
    ( By Ghulam Ghaus Siddiqi غلام غوث الصدیقی )
  • Tolerance in Muslim society earlier was because of low level of outward piety. Intolerance grows as the level of outward piety grows. Outward piety is ...
    ( By Naseer Ahmed )
  • The Muslim nation (with the exception of one or two Muslim countries) as a whole has been blind and deaf to the above advice and ...
    ( By Rashid Samnakay )
  • I fully agree with Rashid sahib.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • At this rate Hats Off may soon get some insight into his unquenchable hatred of Muslims.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • This is the time when the anti-Muslim hate propaganda of the BJP/RSS is at full blast to cover up for the absence of any acchhe ...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Excellent book review! As the reviewer says, "secularism cannot be used as a pretext to ignore discrimination on grounds....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )