certifired_img

Books and Documents

Urdu Section

اِدھر کئی برسوں کے دوران حریت جیسی تنظیموں سے میدان صاف ہو چکا ہے اور ہمیں وادی کے اندر انتہا پسند اسلام کی ایک نئی زبان سننے کو مل رہی ہے۔ غزوۃ انصار الہند اسلامی خلافت قائم کرنے کی بات کر رہا ہے جو کہ وادی کے اندر سیاسی اعتبار سے ایک نیا شوشہ ہے۔ مذہب ہمیشہ سے عسکریت پسندی کا ایک حصہ رہا ہے، لیکن اسلام نے ہمیشہ اپنا کام قومی ریاست کے مروجہ ڈھانچے کے اندر ہی کیا ہے۔

 

سرکار خواجہ غریب اور حضور خواجہ قطب الدین بختیار کاکی  رضی اللہ عنہما  تو متفقہ طور پر اللہ کے ولی اور دوست تھے ۔خواجہ غریب نواز کی شان محبوبی کا یہ عالم تھا کہ جب آپ نے  وصال فرمایا تو آپ کی پیشانی پر قلم قدرت سے لکھا ہوا تھا : حبیب اللہ مات فی حب اللہ ۔یعنی یہ اللہ کا حبیب ہے جو اللہ کی محبت میں جاں بحق ہوا ہے ۔ یہ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم کی اطاعت و فرماں برداری کا انعام ہی ہے کہ حضرت خواجہ غریب نواز علیہ الرحمہ کو اتنا بڑا مقام و مرتبہ ملا ۔اگر وہ اپنے نبی پاک صلی اللہ علیہ وسلم کی اتباع اور ان سنت کو ترک کر دیتے تو اس مقام پر فائز نہ ہوتے ، کیونکہ حضوراکرم صلی اللہ علیہ وسلم کا فرمان ہے : لو ترکتم سنۃ نبیکم لضللتم (مشکوۃ) یعنی اگر تم اپنے نبی کی سنت چھوڑ  دو گے تو گمراہ ہو جاو گے ۔حضر شیخ سعدی علیہ الرحمہ نے اس سلسلے میں خوب فرمایا ہے:خلاف پیمبر کسے راہ گزید  /   کہ ہر گز بمنزل نہ خواہد رسید ۔ترجمہ : خلاف پیمبر جو چلے گا وہ ہرگز منزل مقصود کو نہیں پہنچ سکتا ۔

فرانس میں صورت حال اس وقت بدتر ہوئی جب داعش نے ان بے روزگار نوجوانوں کو اپنی جماعت میں شامل کیا ، جو مسلمان ہونے کا دعوی کرتے ہیں اور ایسے جمہوری ممالک میں رہتے ہیں جہاں انسانی حقوق کا احترام کیا جاتا ہے اور انہیں ان ممالک میں وہ آزادی اور مراعات فراہم کی جاتی ہیں جو انہیں خود اپنے ملکوں میں میسر نہیں ہیں۔ ان دہشت گردوں کو مذہبی یا اسلام یا انسانی حقوق کا کچھ بھی علم نہیں ہے اور وہ اسلام کے سب سے بڑے دشمن ہیں۔

 
The Fate of Extremists انتہاپسندوں کا انجام
Mansour Alnogaidan
The Fate of Extremists انتہاپسندوں کا انجام
Mansour Alnogaidan, Tr. New Age Islam

العودۃ کی گرفتاری جس دن ہوئی اس دن لوگوں کی ایک بھیڑ نے ابن عثیمین کو گھیر لیا اور العودۃ کی حمایت میں کھڑے ہونے کے لئے ان پر دباؤ ڈالا۔ انہوں نے جواب دیا، "تم لوگوں نے اپنی حدیں پار کر دی ہیں۔ تم نے مرکزی حکومتی عمارت کو گھیر لیا اور اس کے دروازے کو توڑ دیا۔ تم نے ریاست کے ناموس کو زد پہنچایا ہے۔ بھیڑ میں سے ایک شخص نے کہا،‘‘تم ایک ذلیل مبلغ ہو’’۔ ایک اور شخص نے کہا، ‘‘تم ایک بزدل انسان ہو’’۔ اس بھیڑ کا ایک رکن اے.زیڈ. بھی تھا –اور یہ وہی نوجوان تھا جو دو سال بعد قتل کی کوشش میں گرفتار کیا جانے والا تھا۔

 
System of the Pious Land, Pakistan  پاک سر زمین کا نظام
Imam Syed Ibn Ali, New Age Islam
System of the Pious Land, Pakistan پاک سر زمین کا نظام
Imam Syed Ibn Ali, New Age Islam

اب کچھ دن پہلے خبر آئی تھی کہ سعودی عرب اسرائیل کے ساتھ تعلقات بڑھا رہا ہے۔ اسلحہ کی ڈیل ہو رہی ہے۔ کس کے خلاف؟ ’’ایران کے خلاف‘‘۔ ادھر یمن میں بمباری ہو رہی ہے۔ شام کا حال کس سے چھپا ہوا ہے؟ عراق میں کیا کچھ نہیں ہو رہا۔ ہر طرف خون ہی خون ہے۔ کیا ابھی امت کے بیمار ہونے میں شک رہ گیا ہے۔ کیونکہ یہ اس امام مہدی کی تلاش نہیں کرتے جس کا اس مولوی صاحب نے اپنی مسجد میں ذکر کیا تھا۔

 

آج ہم جس بھی مسلم ملک کی طرف نظر ڈالتے ہیں ہمارے سامنے بدعنوانی ، نا انصافی ، ظلم اور غربت جیسے بے شمار داخلی مسائل کے انبار نظر آتے ہیں۔ اگر ہم اس کے بارے میں ذرا  بھی سوچیں تو  ہمیں یہ محسوس ہو گا کہ ان میں سے اکثر مسائل خود انسانوں کے ہی پیدا کردہ ہیں۔ بہ الفاظ دیگر یہ کہا جا سکتا ہے کہ بڑے پیمانے پر اس کا تعلق براہ راست یا بالواسطہ طور پر اس نظامِ تعلیم سے ہے جس نے ایسے لوگوں کو پیدا کیا ہے جو اب تک ان مسائل کو زندہ رکھے  ہوئے ہیں۔

 

کوئی ہو جن ہو یا انس، مومن ہو یا کافر، حضرت ابن عباس رضی اللہ عنہ نے فرمایا کہ حضور کا رحمت ہونا عام ہے، ایمان والے کے لئے بھی اور اس کے لئے بھی جو ایمان نہ لایا ہو۔ مومن کے لئے تو آپ دنیا اور آخرت دونوں میں رحمت ہیں اور جو ایمان  نہ لایا اس کے لئے آپ دنیا میں رحمت ہیں کہ آپ کی بدولت تاخیر عذاب ہوئی اور خسف (زمین میں دھنسانے کا عذاب) و مسخ ( شکل بدل دینے کا عذاب) اور استیصال (کسی قوم کو جڑ سے اکھاڑ پھینکنا) کے عذاب اٹھا دیئے گئے--

 
The Secret of Happiness  خوشی کا راز
Ahmed Al-Arfaj
The Secret of Happiness خوشی کا راز
Ahmed Al-Arfaj, Tr. New Age Islam

وہ فلو کی مانند ایک فرد سے دوسرے میں پھیل سکتے ہیں۔ مثال کے طور پر جنازہ کے موقع ہر شخص غمناک ہوسکتا ہے کیونکہ لوگوں کو اپنے ارد گرد کے ماحول میں اداسی اور دکھ کی کیفیت محسوس ہو سکتی ہے۔ مطلب یہ ہے کہ اگر آپ کہیں بھی ایسی جگہ جائیں جہاں درد اور تکلیف ہو تو آپ ضرور اداسی محسوس کریں گے۔یہی خوشی اور جوش و ولولہ جیسے مثبت جذبات کا بھی حال ہے، جو لوگوں کے درمیان آسانی سے پھیل سکتے ہیں جیسا کہ شادیوں اور پارٹیوں میں دیکھا جا سکتا ہے۔ لوگ چہرے کی کیفیت سے فوراً متاثر ہوسکتے ہیں۔

 

مولانا امداد اللہ رشیدی سے ہمارے وہ علما ء بھی سبق لیں جو مسلکی بنیاد پر مسلمانوں کے درمیان اختلافات کو ہوا دیتے رہتے ہیں ۔ مولانا امداد اللہ رشیدی کا معاملہ غیر قوم کے ساتھ تھا پھر بھی انہوں نے انہیں نقصان پہنچانے سے مسلمانوں کو سختی سے باز رکھا۔ یہ ان ملاؤں کے لئے عبرت کا مقام ہے جو مسلمانوں کو آپس ہی میں لڑا کر قوم کو نقصان پہنچانے کے درپے رہتے ہیں ۔

 

طلاق ہو جانے پر خواتین کا سب سے پہلے کسی دوسرے مرد سے شادی کرنا ، اس کے بعد اس سے طلاق لینا اور اس کے بعد پھر سابق شوہر سے شادی کرنا صرف واہیات ہی نہیں بلکہ ایک انتہائی غیر انسانی عمل بھی ہے۔ سب سے پہلے خود مسلمانوں کو ہی اس عمل کے خاتمے کا مطالبہ کرنا چاہئے۔ اب یہ مسلمانوں پر ہے کہ وہ ان قدامت پسند معمولات کو جاری رکھتے ہیں اور امت مسلمہ کی بدنامی اور ذلت و رسوائی کا باعث بنتے ہیں یا وہ یک زبان ہو کر عدالت سے ان خواتین مخالف معمولات کو ختم کرنے کی درخواست کرتے ہیں۔ اب فیصلہ بالکلیہ ان ہی کے ہاتھوں میں ہے۔

 

اگر حسد، غصہ، کینہ، بغض اور اس طرح کی دیگر امراض موجود ہوں تو لاکھ سجدے بھی کرلئے جائیں مگر ان امراض کا علاج نصیب نہیں ہو گا۔ اس لئے کہ ان امراض کا علاج ظاہری عبادت میں ہے ہی نہیں۔ لہذا جب تک خلقِ خدا کی خدمت پر کمربستہ نہ ہوا جائے اور جسمانی تکالیف و مشکلات برداشت نہ کی جائیں، اس وقت تک نہ ان امراض سے چھٹکارہ ملے گا اور نہ توبہ کا سفر طے ہوگا۔

 
The Essence of Prayer  عبادت کی روح
Maulana Wahiduddin Khan
The Essence of Prayer عبادت کی روح
Maulana Wahiduddin Khan, Tr. New Age Islam

لہٰذا ، حقیقت یہ ہے کہ قول و فعل کا ایسا تضاد صرف جعلی عبادت سے ہی پیدا ہوتا ہے –ایسی عبادتیں صرف ایک ذمہ داری سمجھ کر ادا کر لی جاتی ہیں ، ان میں معرفت خدا وندی کا کوئی شعور نہیں ہوتا ہے۔ حقیقی عبادت کی بنیاد صرف خدا کے دائمی ذکر پر ہی ہوتی ہے ، اور جو خدا کو یاد رکھتا ہے اسے کبھی نہیں بھولتا۔

 

ہندوستان کو ایک مخصوص نظر یہ کے لوگ جلانے اور جمہوری اقدار کو دفن کرنے کی سازش کررہے ہیں ۔ بہار جل رہا ہے ،مختلف صوبوں میں نفرت اپنی تمام انتہا سے آگے نکل چکی ہے۔ بہار پر نفرتوں کا سایہ کچھ زیادہ ہی گہرا ہوچکا ہے۔ کیا اقتدار انہیں راستوں کے ذریعہ حاصل کیا جاتا ہے؟ معیشت تباہ ہوچکی ہے ، ہندوستان سے روزگار ختم ہوچکے ، بینک دیوالیہ ، مودی حکومت نے کروڑوں کروڑ کی دولت لے کر مالیہ اور نیرو مودی جیسے لوگوں کو فرار ہونے کا آسان راستہ مہیا کرایا۔

 

سورہ توبہ میں یا قرآن کی کسی دوسری سورت میں جنگ سے متعلق اس طرح کی کسی بھی آیت سے یہ بات روز روشن کی طرح عیاں ہے کہ ان کا اطلاق عمومی نہیں ہے۔ بلکہ ان آیتوں کا نزول ان کفار مکہ کے حق میں ہوا تھا جنہوں نے مدینہ کے اندر امن معاہدے کے تحت رہنے والے مسلمانوں کے خلاف دشمنی کا مظاہرہ کیا اور اس کے بعد پئے در پئے ان پر حملے کئے۔ لیکن جہاد الدفاع کی اجازت صرف اسی صورت میں دی گئی تھی جب امن معاہدے کو توڑا جا چکا تھا۔ ریاست مدینہ کی جانب سے چھیڑے گئے جہاد الطلب میں صرف کفار ہی نہیں بلکہ ان متعدد نام نہاد مسلمانوں سے بھی جنگ ہوئی جن کی شناخت بعد میں منافقوں اور باغیوں کے طور پر کی گئی۔

 

آج کے تناظر میں جب کہ مسلمان اور غیر مسلم اور منافقین سب امن کے ساتھ رہتے ہیں ، اس آیات (90-4:88) کا عمل  نہیں کیا جا سکتا۔ کون لوگ منافق ہیں اس کا فیصلہ کرنا کسی  دہشت گرد تنظیم کا کام نہیں ہے۔ حتی کہ اگر ہم آج بعض علمائے کرام کو کسی کو 'منافق' قرار دیتے ہوئے سنیں تو بھی کس طرح اس کے قتل کو جائز قرار دے سکتے ہیں، جبکہ وہ امن یا امن معاہدے کی حالت میں زندگی گزار رہا ہے؟ انتہا پسند گروہوں کی پہلی غلطی یہ ہے کہ وہ آج کے پر امن ماحول کے اندر جنگ سے متعلق آیت 4:89 کا اطلاق ان لوگوں کو قتل کرنے کے لئے کرتے ہیں جو ان کی نظر میں غیر مسلم یا ‘‘منافق مسلمان’’ ہیں، جبکہ ان کی دوسری غلطی عمداً اس کی اگلی آیت 4:90 کو نظر انداز کرنا ہے ۔۔۔

 

عظیم سعودی خواتین کی فہرست ڈاکٹر سمیرہ اسلام کے تذکرہ کے بغیر مکمل نہیں ہو سکتی۔ وہ پی ایچ ڈی کرنے والی سب سے پہلی سعودی خاتون اور سعودی عرب کی یونیورسٹی میں وائس ڈین بننے والی سب سے پہلی خاتون ہیں۔ 1970 ء میں، ڈاکٹر سمیرہ اسلام نے اس ملک میں لڑکیوں کے لئے یونیورسٹی کی رسمی تعلیم متعارف کرایا۔

 

مجموعی طور پر اس مضمون سے دہشت گرد تنظیموں کو سبق ملتا ہے کہ وہ مندرجہ بالا آیت (22:39)، کی بنیاد پر دہشت گردی کے کسی بھی فعل کو انجام دینے کے لئے کسی بھی قسم کا جواز پیش نہیں کرسکتے اور نہ ہی اپنے عزائم کی تکمیل کے لئے کسی بھی ملک کے مسلمانوں یا غیر مسلموں کو قتل کرنے کا جواز تلاش کرسکتے ہیں۔ اسلام کے حقیقی مقصد کو سمجھے بغیر، اگر وہ مسلسل دہشت گردی کا ارتکاب کرتے رہیں اور معصوم شہریوں کے قتل کو جاری رکھیں تو ان کا یہ عمل اسلامی شریعت پر افترا اور جھوٹ باندھنے کے علاوہ  کچھ نہیں ہو گا۔ اس طرح وہ ان جھوٹ باندھنے والوں کے زمرے میں شامل ہو جائیں گے جن کا ذکر اللہ کے اس کلام میں ہے "اور اس سے بڑھ کر ظالم کون جو اللہ پر جھوٹ باندھے۔" (6:93)

 

اگر ا س میں ان سعودی سلفی فقہاء پر سوالات نہیں اٹھائے جاتے ہیں جنہوں نے سعودی عرب کی درسی کتابوں میں انتہا پسندی کو فروغ دیا ہے تو ہندوستانی سلفی علماء کی جانب سے دہشت گردی کے خلاف اس فتوے کو معمولی ہی سمجھا جائے گا ۔ مثال کے طور پر سعودی عرب میں ساتویں جماعت کے طالب علموں کو اب بھی یہ تعلیم دی جا رہی ہے کہ "اعلائے کلمۃ اللہ کے لئے کافروں سے لڑنا" اللہ کی نظر میں سب سے پسندیدہ عمل ہے۔ دسویں جماعت کے طالب علموں کو یہ تعلیم دی جاتی ہے کہ اسلام چھوڑنے والے مسلمانوں کو تین دن تک جیل میں رکھنا چاہئے اور اگر وہ اپنا فیصلہ نہ بدلیں تو انہیں اپنے اصل مذہب سے پھر جانے کی پاداش میں قتل کر دیا جانا چاہئے۔ چوتھی جماعت کے طالب علموں کو یہ پڑھایا جاتا ہے کہ غیر مسلموں کو "حق کا راستہ دکھایا گیا لیکن انہوں نے یہودیوں کی طرح اسے چھوڑ دیا" اور"عیسائیوں کی طرح حق کو جہالت اور توہم سے بدل دیا ہے۔"

 

غور طلب بات ہے کہ جہاد کا حکم سب سے پہلے مکہ میں اس وقت نازل ہوا جب کہ ابھی جہاد بالسیف  یا دفاعی جنگ کی اجازت بھی نہیں ملی تھی ۔ مکہ کے ابتدائی دور میں صحابہ کرام پر ظلم و ستم کے پہاڑ توڑے جاتے مگر انہیں اپنی حفاظت میں لڑنے کی اجازت نہیں تھی۔دفاعی جنگ کی ممانعت کے لیے بھی مکہ شریف میں تقریبا ستر آیات کریمہ کا نزول ہوا  مگر جہاد کے متعلق پانچ آیات کریمہ نازل ہوئیں ۔اب سوال پیدا ہوتا ہے اگر مکی دور میں  ستر آیات کریمہ کے نزول نے جنگ کی ممانعت کر دی تو  پھر جہاد کے متعلق  تب پانچ آیتیں کیوں نازل  ہوئیں ؟ کیا جہاد کا معنی قتال نہیں ؟ آئیے ہم حسب ذیل میں تحریر میں بخوبی سمجھیں۔

 

قرآن میں دوسری تہذیبوں سے بھی الفاظ مستعار لئے گئے ہیں جن سے سامی تہذیب کا اپنے ہمسایوں سے تعلق کی طرف اشارہ ملتا ہے۔ قرآن کریم میں دو اہم الفاظ "قرطاس" (کاغذ) اور "قلم" یونانی زبان سے لئے گئے ہیں ، جو کہ اس علاقہ کی ثقافتی زبان تھی اور اب یہ ترکی، شام، لبنان، فلسطین اور اردن میں مروج ہے (یہی وجہ ہے کہ انجیل اور عہد نامہ جدید میں سینٹ پال کا رسم الخط یونانی ہے)۔ قطر ایک یونانی لفظ "چارٹس (Chartes)" کی عربی شکل ہے اور "کلام" یونانی لفظ "کلاموس (Kalamos)" سے لیا گیا ہے۔

 
Loving God and Living Fully  خدا کی محبت مسرور زندگی کی ضمانت
Rev. Dr. Richard Howell
Loving God and Living Fully خدا کی محبت مسرور زندگی کی ضمانت
Rev. Dr. Richard Howell, Tr. New Age Islam

اطاعت شعاری صرف جھوٹ بولنے ، زنا کرنے یا متشدد رویہ اختیار کرنے جیسے محض خارجی گناہوں کے ارتکاب سے بچنے کا ہی نام نہیں ہے ، اگرچہ یقینی طور پر اطاعت شعاری میں یہ تمام باتیں شامل ہے۔ بلکہ اطاعت شعاری اپنے اقدار، جذبات اور دلوں کی کیفیات کو بھی خالق کائنات کے حضور پیش کر دینے کا نام ہے۔ خدا عزم مصمم سے کم کا مطالبہ نہیں کرتا ہے: " اپنے رب کو اپنے دل و جان سے محبت کرو۔" (متھیو 38-22:37)۔ اس سے زیادہ کچھ بھی اہم اور کچھ بھی ضروری نہیں ہے۔

 

حضرت علی رضی اللہ عنہ سے کسی نے پوچھا ، کیا وجہ ہے کہ پہلے تینوں خلفا کے دور خلافت بڑے انتظام سے گزرا اور کسی گوشے سے اختلاف و مخالفت نہیں ہوئی مگر آپ کے دور خلافت میں ہر طرف انتشار  اور بے چینی پائی جاتی ہے ؟ آپ نے فرمایا: ان کے دور کے خلافت میں ہم ان کے معاون تھے اور ہمارے دور خلافت کے معاون تم ہو (ایضا ۱۵۸) .حضرت انس رضی اللہ عنہ سے روایت ہے کہ نبی اکرم صلی اللہ علیہ وسلم نے فرمایا : چار آدمیوں کی محبت کسی منافق کے دل میں جمع نہیں ہو سکتی اور نہ ہی مومن کے سوا کوئی ان چاروں سے محبت کر سکتا ہے وہ چار لوگ ابو بکر ، عمر ، عثمان اور علی رضی اللہ عنہم ہیں (ابن عساکر ، الصواعق المحرقہ :۱۱۹)

 

کامل نے کہا کہ درحقیقت ، " اخوان المسلمنو کے بانی حسن البنا ایک صوفی سلسلہ الطريقۃ الحصافیۃ کے ایک رکن تھے۔ اخوان المسلمین کی ساخت سلاسل تصوف کے مطابق ہے۔ ۔۔۔ یہ جاننا کافی ہے کہ سلسلہ التیجانیۃ کے بانی محمد حافظ التیجانی (مرحوم)، حسن النبا کے سب سے بڑے حامی تھے۔ اس کے علاوہ عصام العريان ، جمال حشمت اور صبحي صالح جیسے اخوان المسلمین کے رہنما اسکندریہ میں ایک صوفی بزرگ ابو العباس المرسی کی تقریباتِ یومِ پیدائش میں شرکت کرتے تھے’’۔

 

اگر داعش مغربی افریقہ میں قدم جمانے میں کامیاب ہوگئی تو وہاں سے یورپ اور امریکہ کو تیل کی ترسیل خطرے میں پڑجائے گی جس سے بین الاقوامی مداخلت کا ایک نیا باب کھلنے کا امکان ہے، طویل عدم توجہی کے بعد امریکہ کو اچانک مغربی افریقہ کے ممالک میں دلچسپی پیدا ہوگئی ہے، تازہ ترین جیولاجیکل سروے بتاتے ہیں کہ یہ ممالک تیل کے ذخائر سے مالا مال ہیں۔

 

یہی معاملہ زندگی کے ساتھ بھی۔ ہم سب اس دنیاں میں کئی سالوں سے زندگی گذار رہے ہیں اور طرح طرح کی مشغولیات میں مصروف ہیں اور آخر کار اب ہماری زندگی کا سفر اختتام کو پہنچنے والا ہے ، لہٰذا، ایک طویل سفر پر نکلے ہوئے ٹرین کے ان مسافروں کی طرح جو اب اپنے منزل پر پہنچنے والے ہیں ، ہمیں بھی  ارد گرد بکھرے ہوئے اپنے ساز و سامان کو سمیٹنے کا عمل شروع کرنا ضروری ہے۔

 


Get New Age Islam in Your Inbox
E-mail:
Most Popular Articles
Videos

The Reality of Pakistani Propaganda of Ghazwa e Hind and Composite Culture of IndiaPLAY 

Global Terrorism and Islam; M J Akbar provides The Indian PerspectivePLAY 

Shaukat Kashmiri speaks to New Age Islam TV on impact of Sufi IslamPLAY 

Petrodollar Islam, Salafi Islam, Wahhabi Islam in Pakistani SocietyPLAY 

Dr. Muhammad Hanif Khan Shastri Speaks on Unity of God in Islam and HinduismPLAY 

Indian Muslims Oppose Wahhabi Extremism: A NewAgeIslam TV Report- 8PLAY 

NewAgeIslam, Editor Sultan Shahin speaks on the Taliban and radical IslamPLAY 

Reality of Islamic Terrorism or Extremism by Dr. Tahirul QadriPLAY 

Sultan Shahin, Editor, NewAgeIslam speaks at UNHRC: Islam and Religious MinoritiesPLAY 

NEW COMMENTS

  • I congratulate Mr.Parvez for this lovable article.It is an eye opener for all particularly Wahhabis. Every religion/sect ....
    ( By Dr.A.Anburaj )
  • Good article! Islam stresses moderation and balance in all aspects of life; in beliefs, worship, conduct, relationships, ideas, ...
    ( By Kaniz Fatma )
  • Islam means peace and Muslims believe and should believe in peace. '
    ( By Kaniz Fatma )
  • very good reply "‘It’s Not Jihad but Jahalat’"
    ( By Kaniz Fatma )
  • Hats Off claims to be a critic of all religions but it seems his venom is exclusively directed at just one religion!....
    ( By Ghulam Mohiyuddin Faruki )
  • Hats Off is just trying to find something nasty to say. What does Jacinda Ardern's magnanimous...
    ( By Ghulam Mohiyuddin Faruki )
  • you are incapable of surprises. nothing new here. sort of desertification....
    ( By hats off! )
  • it is a mistake for india to develop "interests" in afghanistan. eventually all muslim....
    ( By hats off! )
  • so new zealand pm is a shining example of tokenism. how about women...
    ( By hats off! )
  • Madness has no religion
    ( By Ghulam Mohiyuddin Faruki )
  • Prof. Hoodbhoy knows humanity and human affairs a lot better than Hats Off does..,.
    ( By Ghulam Mohiyuddin Faruki )
  • The word "Jihad" should be expelled from our lexicon. There is no place....
    ( By Ghulam Mohiyuddin Faruki )
  • scientists (IMHO) probably will get it wrong when they stray into humanities. laws of science are...
    ( By hats off! )
  • You discuss the central idea of this article both historically and theologically. Through your discussion, many significant ....
    ( By Meera )
  • ہندستان ایک ایسا ملک ہے جہاں ہر قوم و مذہب کے لوگ بلا تفریق مذہب و ملت آباد ہیں، ہندستان میں ہندوؤں کے بعد مسلمان ...
    ( By ڈاکٹر ساحل بھارتی )
  • New Zealand's Prime Minister is a shining example for regressive societies. No wonder she sticks in Hats ....
    ( By Ghulam Mohiyuddin Faruki )
  • What she writes is a hundred times better than Hats Off's bilious vomitus.
    ( By Ghulam Mohiyuddin Faruki )
  • Hats Off's hatefulness has reached nihilistic proportions. He is need of help.
    ( By Ghulam Mohiyuddin Faruki )
  • What she writes is a hundred times better than Hats Off's bilious vomitus.....
    ( By H S )
  • آل انڈیا مسلم پرسنل لاء بورڈ کی تجاویز کہ مدارس کو رائٹ ٹو انفارمیشن ایکٹ (معلومات حاصل کرنے کا حق)کے تحت لانے کی تجویز خود ...
    ( By عبدالمعید ازہری )
  • the author does not have proper understanding of Naskh therefore his article is full of errors and does...
    ( By Alifa )
  • With people like Apoorvanand, India can't be so bad. Fortunately there are....
    ( By Ghulam Mohiyuddin Faruki )
  • Jacinda Ardern has set a great example for India...
    ( By Ghulam Mohiyuddin Faruki )
  • Religions should bring us together instead of driving us apart.
    ( By Ghulam Mohiyuddin Faruki )
  • a very simple minded woman with very mediocre capacity of analysis. incapable...
    ( By hats off! )
  • not to worry. it is a matter of parity. islam hates the kuffar as much...
    ( By hats off! )
  • ‘Lesson for World Leaders’: Imam Thanks New Zealand PM after Prayers" another islamist...
    ( By hats off! )
  • Only a hateful ex-Muslim would call Erdogan a "moderate Muslim". A much...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • This is a bogus article because it uses arbitrary, self-serving or false arguments to support its contentions...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • I agree with Mr Sultan Shahin that Islam needs to change itself from within...
    ( By A S MD KHAIRUZZAMAN )
  • Good article! It has given good suggestions. We should do self-introspection and reform ourselves. For ...
    ( By Kaniz Fatma )
  • the west should embrace all the muslims or else... but all Islamic....
    ( By hats off! )
  • Naseer sb., There is no compulsion in any of Jesus's sermons. He never said anything like, "“Kill....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Naseer sb., It is not a question of believing or not believing in the Quran. It is a question of believing.....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Happy Holi, everyone.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • GM sb says "In Christianity, there is no compulsion in religion. 2Ti 2:24 As the ....
    ( By Naseer Ahmed )
  • "It appears" is not the primary evidence. It is the supporting evidence to what the Quran...
    ( By Naseer Ahmed )
  • Hats Off's frenzied animus seems to be eating him from within. I hope he does not explode.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Hats off's literalism is a mirror image of Naseer sb.'s literalism. One...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • More rubbish from Hats Off! Violent extremism, by whatever name, is the same....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )