certifired_img

Books and Documents

Urdu Section

ڈاکٹر دینا ناتھ ورما نے اپنی کتاب ’’آدھونک بھارت‘‘ میں لکھا ہے کہ ہندوستان مسلمانوں کے علیٰحدہ مملکت کا خیال اقبال کا ذہنی تصور ہے۔ ایل پی شرما کی کتاب میں اقبال کے اس خط کا تذکرہ ہے جس میں انہوں نے جناح کو لکھا تھا کہ اگرشمالی ہند میں مسلمانوں کے لئے ایک یازیادہ مملکتوں کا قیام ناممکن ہے تو خانہ جنگی کے سوا کوئی راستہ نہیں ہے۔ جو ہندو مسلم فسادات کی شکل میں کچھ عرصے سے جاری ہے۔ پرتاپ سنگھ کتاب میں اقبال کو تقسیم کے لئے ذمہ دار ٹھہرایا گیا ہے ۔ویریند رسنگھ برن وال کی کتاب جناح میں کہا گیا ہے کہ جناح نے پاکستان کے تصور کو فرو غ دینے کی وجہ سے ہی اقبال کو اپنا روحانی استاد تسلیم کیا تھا۔ اقبال کے رابطہ میں آنے کے بعد جناح کے تیور بالکل بدل گئے۔ آتمہ دیپ  (فوٹو:علامہ اقبال)

اللہ اپنے اختیارات بندوں کو سونپ نہیں دیتا ۔آخری تجربے میں شیخ اور مرید کا تعلق اصل میں استاد اور شاگرد کا ہوتا ہے ۔ داتا گنج بخشؒ ،خواجہ غریب نواز ؒ اور فریدالدین شکر گنجؒ اپنی طرف نہیں ،خلق خدا کو پروردگار کی طرف دعوت دیتے تھے۔سچے ایمان ،صداقت شعاری ،مظلوموں اور محتاجوں کی دست گیری کے لئے ۔مجھے اس میں رتّی برابر بھی شبہہ نہیں کہ تحریک انصاف کی کامیابی کا راستہ گوجر خان سے ہوکر گزرتا ہے۔ مکرّر عرض ہے کہ اختیار اللہ کا ہے، کسی بندے کا نہیں اور یہ تو ہر گز نہیں ہے کہ ان کی سب آرا سے اتفاق کیا جائے ۔ بات وہی ماننی چاہئے ، جس پر دلائل و شواہد موجود ہوں اور کوئی کتنا ہی لائق ودانا ہو، اس کی رائے سے گریز کرنا چاہئے۔ اگر وہ قائل نہ کرسکے ۔  ہارون الرشید

 

میر واعظ کے یہ ارشاد ات اس امر کے غماز ہیں کہ اب کشمیر کی حقیقت پسند قیادت نے زمینی سچائیوں کو محسوس کرلیا ہے اور اب وہ اپنی مجبوریوں ،مصلحتوں اور حدود کے ادراک کے ساتھ حکومت ہند سے گفتگو کے ذریعہ اپنے مسائل کا پائیدار حل تلاش کرنے کے خواہاں ہیں اور اس کے لئے اب وہ اپنے تشدد کے دیرینہ موقف سے بھی دست بردار ہونے کے لئے تیار ہیں۔یادرہے کہ میر واعظ نے اب سے کچھ ہی عرصہ قبل کہا تھا کہ کشمیر کےمسئلوں کے حل کے لئے تشدد کا راستہ اختیار کرنے کے زمانے گزرگئے ۔...

مدارس کے قیام میں سیاسی عوامل بھی کار فرمارہے ۔ کہا جاتا ہے کہ جب حلافت عباسیہ کمزور ہوئی اور خلیفہ وحکمراں آئے دن تبدیلی ہونے لگے تو حکمراں اپنے نام کی بقا کے لیے مدارس تعمیر کرنےلگے ۔مدرسہ مستنصر یہ اس کی واضح مثال ہے۔ اسی طرح معتزلہ کے اثر و رسوخ کو ختم کرنے کو بھی مدارس کے قیام کی تحریک میں اہم مقام حاصل ہے۔ جیسا کہ پروفیسر ضیا الحسن فاروقی تحریر کرتے ہیں:‘‘دراصل سنی مدرسوں کے قیام کا سلسلہ دسویں صدی عیسویں کے نصف آخر سے شروع ہوگیاتھا، آغاز کار میں تو یہ اس چیلنج کے جواب کے طور پر تھا جسے معتزلی طرز فکر نے پیش کیا تھا ۔لیکن بعد میں مقصد یہ بن گیا کہ ان اداروں کے اثر کو کم کیا جائے جنہیں فاطمیوں نے شیعہ مبلغین کی تعلیم وتربیت کے لیے قائم کیاگیا تھا مثلاً فاطمی سپہ سالار جوہر اور خلیفہ المعز کی تعمیر کرائی ہوئی مسجد ازہر 1005۔395ھ ،خلیفہ الحکیم کا قائم کیا ہوا دارالحکمت اور مختلف دار الدعوۃ یعنی اجتماع وتبلیغ کے مرکز’’۔۳  محمود عالم صدیقی

 

ایک مرتبہ جب ہندوپاک کی تقسیم کو روکنے کے لیے ایک اہم ترین میٹنگ سابرمتی آشرم میں چل رہی رہی تھی تودرمیان میں سے گاندھی جی اٹھ کر جانے لگے کہ وہ اپنی بکری کی زخمی ٹانگ پر کھڑیا مٹی لگانے جارہے ہیں۔ جو دیگر اہم شخصیات اس میٹنگ میں موجودتھیں وہ تھیں : سراسٹا فرڈ کرپس ، لارنس ،سرائے ۔وی۔الکونڈر پنڈت نہرو ،سردار ولبھ بھائی پٹیل اور مولانا آزاد ۔جب پندرہ منٹ تک گاندھی جی جہیں آئے تو 2مئی 1946کی اس اہم میٹنگ کے شرکا باہر آنگن میں آگئے وہاں وہ یہ دیکھتے ہیں کہ گاندھی جی اپنی بکری کی ٹانگ پر لیپ لگا کر اس پر پٹی باندھ رہے تھے۔ بکری ذرا چھٹپٹا رہی تھی ۔ یہ دیکھ کر سرپیتھک لارنس بولے، ‘‘کمال ہے گاندھی جی ! اتنی چھوٹی سی بات کے لیے آپ اتنی اہم میٹنگ چھوڑکر آگئے ’’۔قریب میں کھڑے مولانا آزاد نے موقع کی نزاکت کو بھانپتے ہوئے کہا: سرپیتھک !گاندھی جی عظیم ہیں اور اسی وجہ سے وہ عظمت کے اس درجہ کو پہنچے ہیں کہ وہ ان چھوٹی چھوٹی اور معمولی سی دکھائی دینے والی باتوں کو اہمیت دیتے رہے ہیں ۔لوگ انہیں اسی لیے چاہتے ہیں کہ بڑی بڑی باتوں کے ساتھ گاندھی جی چھوٹی چھوٹی باتو کا بھی بے انتہا خیال کرتے ہیں!’’  فیروز بخت احمد

 
جدید خار جیت - Modern Karjism is Wahhabism
Zeeshan Ahmad Misbahi, ذیشان احمد مصباحی

جدید خوارج آج پوری دنیا میں اپنا نیٹ ورک قائم کرچکے ہیں، ان کی ہمنوائی کرنے والے تعلیم یافتہ بھی ہیں اور جاہل عوام بھی، مولوی بھی ہیں اور کالج کے تعلیم یافتہ جوان بھی ۔آج جب کہ ایک عام مسلمان کی سوچ یہ ہے کہ کس طرح جمہوری ملکوں کی مراعات سے فائدہ اٹھاتے ہوئے مسلمانوں کو دینی تعلیمی اور معاشی طور پر مستحکم کیا جائے، کس طرح دعوت تبلیغ کے دائرے کوبڑھایا جائے، کس طرح حکومت کے سامنے اسلام اور مسلمانوں کی پرامن شبیہ پیش کی جائے، ان خارجیت پسندوں کا وتیرہ یہ بن گیا ہے کہ وہ حکومتوں کے خلاف احمقانہ بغاوت کی سوچ میں جی رہے ہیں  ، انتخابات کا بائکاٹ اور عدلیہ وانتظامیہ کی مخالفت کررہے ہیں۔  ذیشان احمد مصباحی

یہ تمام باتیں اپنے آپ میں اس لیے متضاد نظر آتی ہیں کہ ایک طرف پاکستان کی جانب سے بار بار یہ اعلان کیا جارہا ہے کہ دہشت گردوں کو ہند کے خلاف حملے کے لئے پاکستان کی دھرتی کو استعمال کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی اور دوسری طرف لشکر کی طاقت میں مسلسل اضافہ ہوتا جارہا ہے ۔ ان دونوں میں سے کس بات کو غلط کہا جاسکتا ہے ؟ یا تو پاکستان کے دعوے اپنے آپ میں کہیں نہ کہیں کمزور اور کھوکھلے پن کے شکار ہیں یا لشکر طیبہ کی طاقت میں مسلسل اضافے کی خبریں غلط ہیں۔رپورٹ

 

جہاں تک سوال ہے فساد کے بعد مسلم طبقے کے معصوم ، بے گناہ لوگوں کو لشکر طیبہ اور حزب المجاہدین جیسی دہشت گرد تنظیموں میں شامل ہونے کے الزام میں جیل بھیجنے اور ان کو فرضی انکاؤنٹر کے ذریعے قتل کرنے کا تو 2002سے 2008تک 26ایسے فرضی انکاؤنٹر ہوئے جن میں اب تک کی جانچ کے مطابق مرنے والے لوگوں کا کسی بھی طرح سے کسی دہشت گرد تنظیم سے کوئی واسطہ نہیں تھا۔ یہی وجہ ہے کہ سپریم کورٹ کے حکم نامے پر گجرات میں خصوصی جانچ ٹیم (ایس آئی ٹی) بنائی گئی ۔ ڈاکٹر مشتاق احمد

 

مجھے یقین ہے یہ مگر مچھ وائلڈ لائف کے اہلکار وں ،فیصل آباد کی پولیس اور پنجاب بھر کے شکاریوں کونہیں ملے گا کیونکہ یہ لو گ اس کو غلط جگہ تلاش کررہے ہیں، یہ مگر مچھ اب تک نہ صرف اسلام آباد یا لاہور پہنچ چکا ہو گا بلکہ یہ چینی مافیا، آٹا فیا ،رینٹل پاور پلانٹس مافیا او راین آر اومافیا جو ائن کرچکا ہوگا چنانچہ اگر وائلڈ لائف ڈیپارٹمنٹ اسے واقعی تلاش کرنا چاہتا ہے تو اسے فیصل آباد کی بجائے اسلام آباد اور لاہور جانا چاہئے اور مگرمچھ کا پتہ میاں منظور احمد وٹو سے پوچھنا چاہئے کیونکہ ملک میں جب سے چینی کا بحران پیدا ہوا ہے اس وقت سے ملک کے تمام مگرمچھ روزانہ میاں منظور احمد وٹو کے دربار میں حاضری دیتے ہیں۔  رپورٹ

 

اللہ نے امیروں کے مال میں غریبوں کاحق مقرر کیا ہے ، اور زکوٰۃ کی شکل میں ایک لازم جز مقرر کردیا ہے جسے بیت المال کے ذریعہ جمع اور تقسیم کیا جائے گا ۔ آپ ﷺ نے اپنی زندگی میں بیت المال کا عظیم نظم قائم کیا اور صحابہ اکرامؓ نے بھی اس نظم کو برقرار رکھا ۔بیت المال ایک ایسا نظم ہے جس سے مسلمانوں کے انسانی ،مالی اور تنظیمی وسائل کی نہ صرف حفاظت ہوگی بلکہ مسلمانوں کے تمام مالی اور معاشی مسائل حل ہونگے ۔ حضرت ابوبکرؓنے بیت المال میں زکوٰۃ نہ جمع کرنے والوں کے خلاف جنگ کرنے کا اعلان کیا تھا، جب کہ زکوٰۃ کا انکار نہیں کررہے تھے بلکہ بیت المال میں زکوٰۃ جمع کرنے کے بجائے اسے خود اپنے طور پر خرچ کرنا چاہتے تھے ۔  سید زاہد احمد علیگ

 

اس شام کب گولا چھوٹا، کیسے روزہ کشائی ہوئی ، منھ او ر معدے میں ذائقوں کی کیسی آتش بازیاں چھوٹیں ......کچھ یاد نہیں.....بس وہ گلی اور اس کا دستر خوان حافظے میں روشن ہے۔ روزہ دار بچہ آج دہلی شہر کے ایک عالیشان علاقے میں دوسری منزل کے فلیٹ نمبر۔37میں رہتا ہے ،جہاں اسے یہ نہیں معلوم کہ 36نمبر میں کون مقیم ہے اور 38نمبر میں کس کی رہائش ہے؟ ہر دروازے سے روزانہ کچھ چہرے باہر نکلتے ہیں ، پھرپتہ نہیں کب ان ہی دروازوں کے پیچھے جاکر گم ہوجاتے ہیں، خیر.....  نصرت ظہیر

 

عدالت عظمیٰ میں محمد سلیم کی کامیابی بظاہر ایک فرد واحد کی کامیابی ہے جو اس نے بڑی جدوجہد کے بعد حاصل کی ہے۔ لیکن اس کا سب بڑا سبق یہ ہے کہ وہ مسلمان جو محض اس لئے داڑھی کی سنت پر عمل پیراہونے سے کتراتے ہیں کہ اس سے انہیں معاشرہ میں کسی تفریق یا تعصب کا نشانہ بننا پڑے گا انہیں آج یہ سوچنے پر مجبور ہونا پڑا ہے کہ جب ایک کمسن طالب علم شریعت محمدیؐ کی پاسداری کا مقدمہ عدالت عظمیٰ سے جیت سکتا ہے تو وہ آخر کیوں ایک ایسے معاشرہ میں اپنی بنیادی شناخت پر اصرار کرنے سے گریز کرتے ہیں جہاں بھانت بھانت کے لوگ اپنی الگ الگ شناختوں اور پہچان کے ساتھ زندگی بسر کررہے ہیں۔  معصوم مرادآبادی

درحقیقت اسلام نے تعدد ازدواج کی اجازت انسانی مصلحتوں کی وجہ سے دی ہے ،ان میں سے ایک یہ ہے کہ اسلام کے ابتدائے ایام میں مومن مرد کفار ومشرکین سے جنگ کرتے تھے جن میں بہت سارے مسلمان شہید ہوجاتے تھے اور ان کے شہادت کے بعد ان ی اولاد اور ان کی بیویاں بے یارو مدد گار رہ جاتی تھیں ان کی حفاظت کے لیے اسلام نے تعدد ازدواج کو اہم ذریعہ پایا۔اسی طرح ان عورتوں کے لیے بھی تعدد ازدواج اہم ذریعہ تھا جو اسلام قبول کرچکی تھیں لیکن ان کے شوہر وں نے اسلام قبول نہیں کیا تھا ۔ جب وہ مکہ سے مدینہ ہجرت کر کے آئیں تو ان کی حفاظت کے لیے بھی تعدد ازدواج ایک بہترین ذریعہ ثابت ہوا جیسا کہ قرآن میں ہے۔   محمود عالم صدیقی

 

سحری کے لئے جگانے والی اس پرانی رسم میں بھی ایک عجیب مزہ ہے ۔ پہلے زمانے کے پرانے قصبوں اور گاؤں میں آدھی رات کے سناٹوں میں بالخصوص سخت جاڑوں میں ایک شخص ہاتھ میں لالٹین اور ڈنڈالئے ہوئے یا عرب ممالک میں دف بجاتے ہوئے ‘‘سحری کے لئے اٹھ جاؤ’’ کی آوازیں لگاتا ہے تو وہ ایک عجیب سماں ہوتا ہے ۔ بچے سوتے سوتے ڈر جاتے ہیں اور جو بچے جاگتے ہوتے ہیں وہ گھروں سے نکل کے اس کے ساتھ ہولیتے ہیں ۔ مصر، شام اور اردن جیسے ملکوں میں بچے اس کے ساتھ ملکی اور اسلامی ترانے بھی گاتے ہیں ۔    سیدہ عطیہ سلطانہ (جدہ)

 

قرآن کریم کے علاوہ روئے زمین پر کوئی ایسی کتاب موجود نہیں ہے جو انسانی زندگی کا کامل طور سے احاطہ کرنے والی ہو اور ایسا جامع نظام پیش کرنے والی ہو جو اللہ کی سب سے اہم مخلوق کے لیے ہر لحاظ سے مفید و اہم ہو ۔ قرآن کریم کو چھوڑ کر دوسری کتابوں سے انسانی زندگی کے لیے کسی نظام کا تعین کرنا اور اس سے پوری انسانیت کی بھلائی کی بابت امید رکھنا الجھنوں کا شکار ہوجاتا ہے ۔ ہمیں تاریخ میں ایسی بہت سے مثالیں ملتی ہیں کہ لوگوں نے اپنے علم و تجربہ کی بنیاد پر انسانی زندگی کے لئے نظام بنائے لیکن وہ سب یا تو اپنی موت آپ مرگئے یا پھر ان کے بہت سے نقصانات سامنے آئے ۔ دراصل کسی بھی انسانی عقل کی بنیاد پر متعین کردہ نظام کو نہ تمام انسانوں پر نافذ کیا جاسکتا ہے اور نہ ہی اسے زیادہ لمبے وقت تک چلایا جاسکتا ہے۔ کیونکہ انسان کی عقل بہت محدود ہے اور اس کا علم بہت ناقص ہے۔ اس کا بنایا ہوانظام خطاؤں سے خالی نہیں ہوسکتا۔ ...

 

اسی محفل میں امریکہ سے آئی ایک شخصیت بھی موجود تھی جو امریکہ میں ایک مسجد کے امام اور امریکی مسلمانوں کی انجمن کے ایک متحرک رکن ہیں۔ ان کا رد عمل ا س بات پر یہ تھا کہ ‘‘ میرے 7 بچے اور 9پوتے پوتیاں امریکہ میں مقیم ہیں ۔ وہ وہیں پیدا ہوئے اور رہے۔ وہ سب امریکی ہیں اور امریکہ کو ٹوٹتے بکھرتے دیکھنا نہیں چاہتا ۔مگر ہاں میں امریکہ میں رائے عامہ کو منظّم کر کے وہاں کی سول سوسائٹی کو یہ بات سمجھا سکتا ہوں کہ امریکہ نے عراق وافغانستان میں غلطیاں کی ہیں اور اب پاکستان میں یہی غلطی دہرائی جارہی ہے۔  کاشف حفیظ صدیقی

 

How shameful that while Ameerul Momenin Hazrat Ali (A.S.) sought to protect the human rights of his assassin from his bed of martyrdom, and told his family to try to practice forgiveness as it was closer to taqwa, today’s Jihadi Muslims kills their own Muslim brothers in mosques. Do these Muslims deserve to be called Muslims? What sort of Islam is this: the Islam propagated by the Prophet (pbuh) or that of ibn-e-Maljam, the murderer of Hazrat Ali? Asks Ali Zaheer Naqvi.

داؤد پبلک اسکول میں اسلامیا ت کے نام پر جان تھامس کی کتاب پڑھائی جارہی تھی جو دراصل عالمی مذاہب کے تناظر میں لکھی گئی تھی۔اس کتاب میں سیکس وحمل گرانے کے حوالے سے بھی بحث کی گئی ہے۔ اس میں بتایا گیا کہ حمل کو کس وقت گرایا جاسکتا ہے اور اس سلسلے میں قدرتی اور طبی طریقے موجود ہیں۔ اسلامیات کی کتاب کے صفحہ 43میں بتایا گیا  کہ اسلام میں برتھ کنٹرول کے احکامات موجود ہیں جبکہ کتاب میں یہ بھی بتایا گیا کہ پیدائش کو کنٹرول کرنے کیلئے مانع حمل گولیوں کے بجائے کنڈوم استعمال کرنا بہتر ہے۔  کاشف حفیظ صدیقی

نئی تہذیب کی آمد سے قبل مسلم معاشرے میں عورت کا اصل میدان کار ’’گھر ‘‘ تھا۔ اس میدان کار میں علم وفضل کی ممانعت کبھی نہ تھی۔ لیکن جدید تعلیم آئی تو یہ سوال پیدا ہوا کہ ہم اپنی بچیوں کو اسکول ،کالج اور یونیورسٹی بھیجیں نہ بھیجیں۔ ابتداء میں اس کی مزاحمت ہوئی مگر پھر اسکول ،کالج پردے کے ساتھ قبول کرلیے گئے اور کہا گیا کہ ہمیں لڑکیوں سے نوکریاں تھوڑی ہی کرانی ہیں۔ مگر سماجیات اور معاشیات کے جبر نے یہ کام بھی کرالیا ۔ اس پر یہ بات کہی گئی کہ حدود میں نوکری بھی ٹھیک ہے اور اب ہم کہتے ہیں کہ پردہ مشرق کی راہ میں رکاوٹ تھوڑی ہے۔  ....

 

رمضان کو مواسات ،ہمدردی اور غم خواری کا مہینہ قرار دینا اپنے آپ میں ایک وسیع مفہوم رکھتا ہے ۔ روایات میں ہے کہ سرکار دوعالم صلی اللہ علیہ وسلم رمضان کے مہینے میں قیدیوں کو چھوڑ دیا کرتے تھے اور ہر مانگنے والے کو دیا کرتے تھے (بیہقی شعب الایمان) حضرت عبداللہ  ابن عباس روایت کرتے ہیں کہ سرکار دوعالم صلی اللہ علیہ وسلم سب سے زیادہ سخی تھے اور رمضان المبارک میں جب حضرت جبرئیل علیہ السلام آپ سے ملاقات کرتے تھے تو آپ زیادہ سخی اور فیاض ہوجاتے تھے ۔...

 

قیدیوں کو اس لئے نہیں روکا گیا تھا کہ وہ مسلمانوں کو پڑھائیں ۔اصل بات یہ تھی کہ اللہ کے رسول قیدیوں کو روک کر انہیں اسلامی ماحول سے روسناش کرانا چاہتے تھے ۔ آپ انہیں ڈائیلاگ اور انٹر یکشن کی  ترغیب دینا چاہتے  تھے۔اس کے لئے آپ نے یہ ترکیب نکالی کہ انہیں استاذ کا درجہ دے دیا تاکہ بغیر کسی دل آزادی کے صحابہ کے ساتھ ان کا انٹریکشن ہوسکے۔ مقصد یہ تھا کہ اساتذہ کو شاگرد وں سے ٹکرادیا جائے۔ آپ نے ایسا کر کے کوئی رسک نہیں لیا تھا۔ آپ اپنے صحابہ کی تعلیم سے پوری طرح مطمئن تھے۔  آصف ریاض

 

زکوٰۃ کے آٹھ مصرف ہیں، فقرا جن کے پاس کچھ نہ ہو، مساکین جن کو ضرورت کے مطابق رزق میسر نہ ہو، مگر صاحب نصاب نہ ہوں، عاملین جو مسلمان بادشاہ کی طرف سے صدقات وغیرہ وصول کرنے پر مامور ہوں ، مؤلقۃ القلوب جن کے اسلام لانے کی امید ہو، یا اسلام میں کمزور ہوں، اکثر علما کرام کے نزدیک رسول اللہ ﷺ کے بعد یہ مدباقی نہیں رہی، رقاب قیدیوں کو فدیہ دے کر آزاد کرانا ، غلاموں کو خرید کر آزاد کرنا یا غلاموں  کو بدل کتابت ادا کر کے آزادی دلانا ، غار مین مقروض کا قرض ادا کرنا یا جو شخص کسی ضمانت میں پھنس گیا ہو اس کی زرضمانت ادا کردینا ۔  مولانا ندیم الواجدی

 

مسلم دنیا کےدلوں دماغوں پر اس جنگ کے اثرات کاتجزیہ کرنے سے پہلے ہمیں یہ بات سمجھ لینی چاہئے کہ دہشت گردی کو کبھی بھی اس طرح عالمی نہیں ہوسکتی ہےکہ اس کا عالمی سطح پر مقابلہ کرنا پڑے ۔یہ ہمیشہ ادھر ادھر ہونے والے واقعات کی صورت میں اور مقامی نوعیت کی رہے گی۔ یہ ممکن ہے کہ کبھی کبھی دہشت گردی کے واقعات بار بار اور دنیا کے مختلف حصوں میں اس طرح ایک ساتھ ہونے لگیں کہ وہ ایک عالمی مظہر نظر آئیں ۔مگر کسی متحدہ کمان یا افراد وآلات حرب کی فراہمی کے کسی متحدہ وسیلے کی ناموجودگی میں دہشت گردی کبھی بھی ریاست کی منظم طاقت اور یقینی طور پر موجودہ دور کی سب سے بڑی طاقت کا مقابلہ نہیں کرسکتی۔  سید شہاب الدین

 

بالخصو ص مہاتما بدھ نے اپنی زندگی اور تعلیم کے زور سے ہندوستانیت کے منتشر اجزا کو جمع کر کے اس کو ایک عالمگیر بیداری تحریک کی شکل دے دی۔ گوتم بدھ کی پیدائش 557عیسوی میں شاکیہ خاندان کے دارالحکومت کپل وستو میں ہوئی ۔ یہ ذات کے چھتر یہ تھے ۔ ان کے والد کانام شدودھن اور والدہ کا نام مایا دیوی(مہامایا) تھا۔ مہاتما بدھ کا بچپن کا نام گوتم سدھارتھ تھا۔ یہ والدین کے اکلوتے فرزند تھے لہٰذا شدودھن کی وفات کے بعد وہی تختِ حکومت کے اکلوتے وارث تھے۔ جب یہ صرف سات دن کے ہی تھے تو ان کی والدہ کا انتقال ہوگیا لہٰذا راجہ شدودھن نے ان کو بہت ہی نازونعم سے پالا پوسا ۔  سمیع الدین خان شاداب

 

یونیورسٹی کے اقامتی بالوں کا جائزہ لیا گیا اور پتہ چلا کہ 12سو کے قریب طلبا غیر مجازی طور پر ہاسٹلز میں مقیم ہیں۔ ان میں بعض پر الزام ہے کہ وہی امن وقانون کو بگاڑ نے کے لئے ذمہ دار تھے۔ بعض کو پولس نے طلبا کے قتل کے الزام میں گرفتار بھی کیا ۔ ا س کے بعد یونیورسٹی مرحلہ وار کھلی فضا بالکل بدلی ہوئی تھی ۔ چند ہی روز میں تعلیم کا ماحول اور طلبا واسٹاف میں تحفظ کا احساس بحال ہوگیا ۔تعلیمی سرگرمیاں تیز ہوگئیں ۔مجوز ہ پروگرام کے مطابق امتحانات بھی ہوئے اور داخلوں کا پیچیدہ اور طویل عمل بھی بخیر خوبی پورا ہوا ۔    سید منصور آغا

 


Get New Age Islam in Your Inbox
E-mail:
Most Popular Articles
Videos

The Reality of Pakistani Propaganda of Ghazwa e Hind and Composite Culture of IndiaPLAY 

Global Terrorism and Islam; M J Akbar provides The Indian PerspectivePLAY 

Shaukat Kashmiri speaks to New Age Islam TV on impact of Sufi IslamPLAY 

Petrodollar Islam, Salafi Islam, Wahhabi Islam in Pakistani SocietyPLAY 

Dr. Muhammad Hanif Khan Shastri Speaks on Unity of God in Islam and HinduismPLAY 

Indian Muslims Oppose Wahhabi Extremism: A NewAgeIslam TV Report- 8PLAY 

NewAgeIslam, Editor Sultan Shahin speaks on the Taliban and radical IslamPLAY 

Reality of Islamic Terrorism or Extremism by Dr. Tahirul QadriPLAY 

Sultan Shahin, Editor, NewAgeIslam speaks at UNHRC: Islam and Religious MinoritiesPLAY 

NEW COMMENTS

  • The Muslims took their law from the Romans and the Jews. Islam is Medieval and is not practicable in the modern society.
    ( By A. John )
  • Rohingyas were mercilessly slaughtered by the Myanmar army in a well planned ethnic cleansing. Does Hats Off know what he is talking about?
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Where is the need for making such thoughtless and wild allegations against the writer of a harmless piece?
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • most of the islamic nations somehow (miraculously) manage to have a very low minority burden but the populace starts screaming...
    ( By hats off! )
  • the legendary emigre word soup maker is back again with another of her mixed vegetative soup, served with some semantic mincemeat and assorted grammar....
    ( By hats off! )
  • When one can allege that the U.S. government can be complicit in attacking its own Defense Department's Pentagon building in the capital city...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • "How did it fracture like brittle bone then if it wasn’t melted" - mr. naseer ahmed. that sentence is a jem...
    ( By hats off! )
  • GM Sb is a doctor but his education may not be relevant to what is being discussed. What can I say about his intelligence when ...
    ( By Naseer Ahmed )
  • Islam does not want its followers to go the extremes of hardship. Allah Almighty says in the Quran, "Allah intends ...
    ( By Ghulam Ghaus Siddiqi غلام غوث الصديقي )
  • Hidayat, the Arabic word, literally means guidance, instruction, righteousness or the true path. The word hidayat is comprehensively....
    ( By Ghulam Ghaus Siddiqi غلام غوث الصديقي )
  • Mr Qazi has very correctly pointed out the message of moderation in the Quran, an aspect which the Muslims...
    ( By arshad )
  • Naseer sahib imputes that I had implied "any random destructive force or fire can cause a high rise building to collapse...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Oh really? What does GM sb comprehend? That any random destructive force or fire can cause a high rise building to collapse along the path ...
    ( By Naseer Ahmed )
  • Mohammad Hussain, Christianity makes it as a duty for the citizen to wage war to save one's country if war is thrust!'
    ( By Joyson Duraisingh )
  • Ak Bhat, Al( the) + Ah ( God)= The God'
    ( By Joyson Duraisingh )
  • Joyson Duraisingh the non muslims have freedom to worship in their own way . It is an estabished ....
    ( By Ghulam Ahmad Dar )
  • @Gulam Ahmad Dar No consensus on idol worship, whatever may be the consequences
    ( By Joyson Duraisingh )
  • Secularism is very important .we should not divide the Indians. All are equal.pl.dont show your gods in public..they are statues.maintain .....
    ( By John Vedhamuthu )
  • Dinabandhu Nayak you are right,sir'
    ( By Akshaya Sahu )
  • Mohammad Hussain Manusmriti has been diluted since long. No body has seen this scripture perhaps except you.Hinduism is a auto adjusting ...
    ( By Akshaya Sahu )
  • Dinabandhu Nayak sir, slavery is unknown to Hinduism - cruel joke at its zenith!'....
    ( By Joyson Duraisingh )
  • There is nothing as gazwa-hind like things in islamic scruptures.as far as the word kafir is concerned...it simply means non-beliver.this is not for non-muslims....but ....
    ( By Reshi Siftain )
  • Stop Talibani bagdaddi culture respect SUFI Ahmediays etc be respectful to others'
    ( By Rudra Kumar Varma )
  • Islam will dominate the world insha Allah'
    ( By Muzafer Sheikh )
  • @Rakesh Rawat and Rabindra Dutta Roy But the refugee Muslims are much eager to enter into U S for living. ------and calling US as terrorist. ---
    ( By Rabindra Dutta Roy )
  • Why leave the great USA.
    ( By Rabindra Dutta Roy )
  • @Rabindra Dutta Roy onslaught concept is inhetited to muslims by the very Qoran. The word "Kafir" and "Gajwa e Hind" is itself a discriminatory, inflammatory ...
    ( By Rakesh Rawat )
  • The Prophet said, "And beware of going to extremes in religious matters for those who came before you were destroyed because...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • it is very nice, India has Prime Minister that talks of Ganesh Surgical Transplant. Here we have ....
    ( By Aayina )
  • What is hidayat? When God gives hidayat, is it the same hidayat that is given by his prophets ...
    ( By Kaniz Fatma )
  • Dear Ghulam Ghaus Saheb. Before putting his opinion, Allama Ghulam Rasool Saeedi (RA) himself admits that it is my own research, He writes: ہماری تحقیق کے ...
    ( By misbahul Hoda )
  • Hats Off's criticism of this article is contrived and hollow.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Allama Saeedi has not given details of abrogation [naskh] in his Tibyanul Quran. When writing Tibyan, he himself benefitted from the usuliyeen such as Allama ...
    ( By Ghulam Ghaus Siddiqi غلام غوث الصديقي )
  • looks like the easiest thing to become today is a two-cent islamic expert. every "researcher...
    ( By hats off! )
  • We want to end triple talaq, not just pay lip service to the cause....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • janab! to kya saeedi sahab ke nazdeek sir Ayate saif ko bunyad bana kar kisi Ghair Muslim, kafir o Mushrik ko Qatal karna, bela wajah...
    ( By nazir banarasi )
  • Totally irrelevant and inane comment from Hats Off.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Getting tired of the routine? No "nothing to do with religion" chorus of one? ....
    ( By hats off! )
  • Was it a demolition job to start with, or was it an indiscriminate act of violence and destruction ....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Naked majoritarian hegemony is the gift that RSS's 70 years of hate prachar have bestowed....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )