certifired_img

Books and Documents

Urdu Section

اگرچہ گلوبلائزیشن کو مثبت طور پر دیکھا جاسکتا ہے ، لیکن بہت سے دانشور اسے استعماریت اور ثقافتی حملے کی علامت سمجھتے ہیں ، جس سے لوگوں کی شناخت اور ثقافتی انفرادیت کو خطرہ ہے۔ اسی طرح ، القاعدہ اور داعش کی تخلیق صرف عراق اور شام کی فوجوں کو تباہ کرنے کے لئے نہیں ہوئی تھی بلکہ اس کا مقصد ان کے ثقافتی اور تاریخی ورثہ اور ان کی قومی شناخت کو بھی تباہ کرنا تھا۔ یہی وجہ ہے کہ داعش نے ان دونوں ممالک کے تاریخی مقامات کو تباہ کر دیا ہے۔

 

لیکن وہ اپنی ذاتی اور سماجی زندگی کو انسانی فطرت کے بنیادی قوانین اور ہدایت کے مطابق گزارنے سے گریزاں ہے ، جسے قرآن کریم سے اخذ کر کے ہمارے سامنے "شریعت" کی شکل میں پیش کیا گیا ہے۔ اپنی مخلوق کی بنیادی خوبیوں اور خامیوں کو اللہ ہی بہتر جانتا ہے۔ اسی لئے اس نے انسانی فطرت اور سماجی رویے کے اصولوں کی ہدایت کے طور پر "شرعی" قوانین پیش کئے۔ قرآن کی آیات سجدہ انسانوں سے شعوری طور پر "شرعی" قوانین کی تابعداری کا بھی مطالبہ کرتی ہیں۔ اور اسی سے ایک مسلمان کے سجدے اور کائنات کے دیگر تمام اشیاء کے سجدوں کے درمیان امتیاز پیدا ہوتا ہے۔

 

عین اس وقت جب مسلمانوں پر چوطرفہ حملے ہورہے ہیں ، جب علی گڑھ مسلم یونیورسٹی اور جامعہ ملیہ اسلامیہ فرقہ پرستوں کے نشانے پر ہیں، مسلمانوں کی درسگاہیں ان کے دشمنوں کو ایک آنکھ نہیں بھارہی ہیں ، یہ سوال میرے ذہن میں اپنی پوری شدت کے ساتھ اس وقت آیا جب ہمارے ایک دوست نے یہ پوچھا کہ مسلمان پچھلے ایک ہزار سال سے کیا کررہے ہیں؟ یہ تو آج تک اپنا ایک نصاب تعلیم و تربیت بھی طے نہیں کر سکے ہیں۔

 

فرانس کے صدر کے مطابق دشمن اسلامی دہشت گردی ہے جس نے مذہب اسلام کو اغوا کر لیا ہے۔ لیکن مشرق وسطی میں ہر ریاست کے پاس دہشت گردی کی اپنی ایک الگ ہی تعریف ہے - ترکی کے لئے پی کے کے (Partiya Karkerên Kurdistanê ‘‘کردش ورکر پارٹی’’) کے کُرد اور پی وائی ڈی (Partiya Yekîtiya Demokrat‎) دہشت گرد ہیں، اسرائیل کے لئے حماس کے فلسطینی دہشت گرد ہیں ؛ سعودی عرب کے لئے یمنی حوثی دہشت گرد ہیں ، متحدہ عرب امارات کے لئے اخوان المسلمین دہشت گرد ہیں، اور اسی طرح یہ فہرست مزید طویل ہو سکتی ہے۔

 
Religious Extremism  مذہبی انتہا پسندی
Javed Ahmad Ghamidi
Religious Extremism مذہبی انتہا پسندی
Javed Ahmad Ghamidi

رسول اللہ صلی اللہ علیہ وسلم کے بعد بھی یہ سنت پوری شان کے ساتھ قائم رہی، لیکن بعد کے زمانوں میں جب حکمران اپنے اعمال کی وجہ سے اِس کے اہل نہیں رہے تو جمعہ کا منبر خود اُنھوں نے علما کے سپرد کر دیا۔ مذہب کے نام پر فتنہ و فساد کو اصلی طاقت اِسی سے حاصل ہوئی۔ یہ صورت حال تبدیل ہونی چاہیے اور ہمارے حکمرانوں کو پورے عزم و جزم کے ساتھ فیصلہ کرنا چاہیے کہ اِس نماز کا اہتمام اب حکومت کرے گی اور یہ صرف اُنھی مقامات پر ادا کی جائے گی جو ریاست کی طرف سے اِس کے لیے مقرر کر دیے جائیں گے۔ اِس کا منبر حکمرانوں کے لیے خاص ہو گا۔

 

صرف یہی نہیں بلکہ اور بھی دیگر متعدد حقائق سے اس کی تصدیق ہوتی ہے:جلسہ گاہ ایسے بڑے بڑے بینر سے بھرے ہوئے تھے جن سے مسلمانوں اور دیگر اقلیتوں کے لئے نیتش سرکار کے منصوبوں کی تشہیر ہو رہی تھی۔مولانا رحمانی نے اپنی تقریر میں ‘‘اس ریلی کو زبردست کامیاب بنانے میں ہر قسم کا تعاون پیش کرنے کے لئے’’ وزیر اعلیٰ کا شکریہ ادا کیا۔مقریرین نے جنوری سے پورے بہار میں رونما ہونے والے مسلم مخالف تشدد کے خلاف لب کشائی میں ایک لفظ بھی بولنے کی زحمت گوارہ نہیں کی۔

 

قانون نافذ کرنے والے کسی بھی ادارے کی عدم موجودگی میں خود مسلمانوں کو زندہ و جاوید حدیث کی شکل اختیار کرنا تھا۔ مطالعہ حدیث کو رواج بخشنے سے شاہ ولی اللہ کا ایک اور مقصد پورا ہوا کہ اس سے دیگر برادریوں کے ساتھ برصغیر کے مسلمانوں کے مشترکہ ثقافتی اور مذہبی اقدار کا نام و نشان تک مٹ گیا۔

 

اگر دیگر نمازیوں کی عبادت میں خلل واقع ہونے کی وجہ سے تلات قرآن میں بھی آواز بلند کرنے سے شریعت نے منع کیا ہے تو تیز آواز کے ساتھ آذان اور نماز میں قرآن کی تلاوت بھی ممنوع ہونی چاہئے اس لئے کہ اس سے پڑوس میں رہنے والے مریضوں، چھوٹے بچوں اور عمردراز لوگوں کو تکلیف ہوتی ہے۔ ہمیں یہ معلوم ہونا چاہئے کہ آذان نماز کا ایک لازمی حصہ نہیں ہے۔ مکہ میں تین سال اور ایک سال مدینہ میں بغیر آذان کے نمازیں ادا کی گئی ہیں۔

 

تاہم، اس میں بڑی الجھنیں ہیں ، اس لئے کہ اسلام کی تعین کا کوئی صحیح طریقہ ہے ہی نہیں ، لہٰذا اسلام کے حقیقی چہرے کی تلاش ہمیشہ ایک وہم ہی رہے گی۔ سب سے بڑی مصیبت یہ ہے کہ اسلام کے اندر انتہا پسندوں سے لیکر اعتدال پسندوں تک تمام جماعتیں حق پر ہونے کا دعوی کرتی ہیں۔ اسلامی روایت کی تکثیریت پسندی کو تسلیم کرنا ہی خود ایک فرحت بخش خیال ہے جس پر مجوزہ کونسل خاموش ہے۔

 

یہ پیغام ناامیدی کے تاریک صحرا میں ہمارے لئے امیدوں کی ایک کائنات ہے۔ اس سے ہمیں برائیوں کے مقابلے میں ثابت قدمی کی طاقت ملتی ہے۔ یہ پیغام ہمیں ہر کس و ناکس کے در پر سرجھکانے سے آزاد کردیتا ہے۔ اس سے ہمارے نقطہ نظر میں تبدیلی پیدا ہوتی ہے جس کے نتیجے میں ہماری پوری زندگی بدل جاتی ہے۔

 

اسلامی صحائف واضح طور پر طلاق دینے کا حق مردوں اور عورتوں دونوں کو عطا کرتے ہیں۔ لیکن خبروں کے مطابق بعض ائمہ گھریلو تشدد کا سامنا کرنے والی مسلم خواتین کو طلاق کا یہ اسلامی حق دینے کے لئے تیار نہیں ہیں جس کی وجہ سے بعض دفعہ ایسی خواتین کئی کئی سالوں تک ذلت آمیز رشتہ ازدواج میں بندھے رہنے پر مجبور ہوتی ہیں۔

 

اس دردناک سانحے کی طویل رات کے بعد بچوں کو بچانے کے لئے ان کی ہمدردی اور کوششوں پر ڈاکٹر کفیل کی میڈیا میں ہر جگہ تعریفیں ہونے لگیں۔ لیکن اس کے بعد ان کی پہچان انتہاپسندوں کو راس نہیں آئی۔ ایک مسلمان ہیرو کیسے بن سکتا ہے؟ آخر کار یہ ایک ایسی حکومت تھی جو مسلم مخالف مدوں پر انتخاب لڑ کر اقتدار میں آئی تھی اور ان کے لئے اس سے بھی بڑی تکلیف کی بات یہ تھی کہ حکومت کی مہلک خاموشی کے بیچ ایک ایسا مسلمان تھا جس کی مختلف مقامات پر تعریفیں کی جا رہی تھیں۔ ٹرول (troll) فعال ہوگئے۔ ڈاکٹر کفیل کے ماضی کے پنّے اُلٹے گئے اور ان پر احمقانہ الزامات عائد کئے گئے۔ جن میں مضحکہ خیز اور جھوٹے الزامات بھی تھے۔

 

قطر اخوان المسلمین کا استحصال نہیں کررہا ہے بلکہ سچائی اس کے برعکس ہے۔ لہٰذا ، سوال یہ ہے کہ کون سا جھٹکا قطر کی آنکھیں کھولنے کے لئے کافی ہو گا تاکہ اسے حقیقت کا ادراک ہو سکے؟ قطری اخوان المسلمین کو اور کون سی جانکاری اور کیسی شہادت چاہئے کہ جس سے اس کے عملہ کو اس بات کا احساس ہو سکے کہ وہ صرف قرضاوی اور ان کی تنظیم کے غلام ہیں اور وہ ان کا استعمال کر رہے ہیں ، انہیں بلیک میل (blackmail) کر رہے ہیں اور انہیں دھوکہ دے رہے ہیں؟

 

مختصر طور پر یہ عمل اسلام کے بنیادی ماخذ قرآن مجید کے احکام کی شدید خلاف ورزی ہے ، جس کا حکم یہ ہے کہ ایک زوجین کے درمیان مصالحت کی تمام تر کوششیں ناکام ہو جائیں تو انہیں طلاق کے ذریعہ مکمل طور پر علیحدہ کر دیا جاتا ہے۔ اب ان دو طلاق شدہ افراد کے درمیان دوبارہ عقد نکاح نہیں ہو سکتا جب تک کہ وہ عورت کسی نئے مرد سے شادی نہ کرے اور بھر ان دونوں کے درمیان بھی حسب سابق طلاق نہ ہو جائے۔ قرآن نے یہ طویل ترین مرحلہ اس لئے بیان کیا ہے کہ لوگ نکاح اور طلاق کو کھیل نہ بنا لیں۔

 

یہاں یہ نکتہ قابل ذکر ہے کہ حنفی اسلامی فقہاء نے عرفِ عام کا نظریہ قانون سازی کے لئے ایک ہدایتی اصول کے طور پیش کیا ہے۔ اگر ہندوستانی مسلمان کلاسیکی اسلامی قانون کے اندر عرف و عادت پر مبنی متعدد مفروضات کا بنظر غائر مطالعہ کریں تو وہ قرآنی اور سنت کی تازہ ترین تشریح کی بنیاد پر قرون وسطی کے بجائے موجودہ روایتی معمولات ، سماجی اقدار اور عہد حاضر کی اخلاقیات کی روشنی میں اپنے نقطۂ نظر کا دوبارہ جائزہ لینے کے قابل ہوں گے۔

 

‘‘کشمیر کے قانون سازوں نے پولیس اہلکار کو عصمت دری کے الزام میں گرفتار ہونے سے بچانے کے لئے احتجاجی مظاہرے کئے۔ عورتوں نے بھی بدکاروں کو بچانے کے لئے احتجاجی مظاہرے کئے: کیونکہ وہ ہندو ہیں اور جس بچی کی عصمت لوٹی گئی اور اس کے بعد اسے قتل کر دیا گیا وہ ایک مسلمان چرواہے کی بیٹی تھی۔ جب ذہنی پراگندگی اور ظلم و ستم کی سطح اس حد تک گر جائے تو مایوسی کے ساتھ آہ بھرنے کے علاوہ اور کوئی راستہ نہیں بچ جاتا ہے۔ لیکن جب غم و غصہ بڑھ جائے تو ناامیدی ختم ہو جاتی ہے۔"

 
God Is Greatest Mathematician  اللہ سب سے بڑا ریاضی دان ہے
Maulana Wahiduddin Khan
God Is Greatest Mathematician اللہ سب سے بڑا ریاضی دان ہے
Maulana Wahiduddin Khan, Tr. New Age Islam

خدا کے مظاہر اس کائنات میں ہزاروں طریقوں سے عیاں ہیں لیکن اس نعمت بے بہا سے صرف وہی لوگ بہرہ ور ہوتے ہیں جن کے دل اور دماغ اس کے مشاہدے کے لئے کھلے ہوئے ہیں۔ جو لوگ جو خدا کی تخلیق اور بے شمار مظاہر فطرت پر غور و فکر کرتے ہیں صرف انہیں ہی خالق کائنات کی اس قدر پختہ معرفت حاصل ہو سکتی ہے۔

 

ظلم کی داستان بیان کرتا آصفہ کا جسم اس انتہاپسند قوم پرستی کا نہ تو کوئی پہلا ثبوت تھا اور نہ ہی آخری ہوگا۔ کئی سال پہلے سورت میں بھی ایسا ہی ایک حادثہ پیش آ چکا ہے اور اس سے بھی کئی سال قبل کنان پوشپورا میں بھی اسی طرح کا ایک واقعہ پیش آیا تھا۔ اس بربریت کا شکار ہونے والے کچھ متاثرین تو انصاف تلاش کرتے کرتے اس دنیا سے چل بسے اور جو زندہ ہیں وہ اب بھی انصاف کی راہ تک رہے ہیں۔ اب یہ وقت ہی بتائے گا کہ آیا ہمارے غم و غصہ اور ہمارے اخلاقیات کا شعور آصفہ پر آ کر ختم ہو جاتا ہے یا یہ کہ آصفہ کے ساتھ پیش آنے والا یہ عظیم سانحہ ہمیں ہماری اجتماعی ذمہ داریوں کا گہرا محاسبہ کرنے پر آمادہ کرے گا۔

 

قرآن مجید کی مذکورہ بالا دونوں آیتوں کو پڑھنے کے بعد جنگ کا اسلامی تصور بہت واضح ہو جاتا ہے۔ جنگ سے متعلق آیتوں کا اطلاق ایسے علاقوں یا ملکوں پر نہیں کیا جا جاسکتا ہے جہاں مسلمان اور غیر مسلم کسی متفقہ قانون یا کسی بھی قسم کے امن معاہدے یا آئین کے تحت امن کے ساتھ رہتے ہیں۔ قرآن کی اس دلیل کی بڑے بڑے  فقہائے اسلام نے مکمل طور پیروی کی ہے اور فقہی احکام میں انہوں نے اسے بیان بھی کیا ہے۔ میں درج ذیل میں ان میں سے صرف چند کا حوالہ پیش کر رہا ہوں؛

 
There Is an Enormous Energy Reservoir in You  ہمارے اندر توانائی کا ایک بحر ذخار ہے
Maulana Wahiduddin Khan, Tr. New Age Islam
There Is an Enormous Energy Reservoir in You ہمارے اندر توانائی کا ایک بحر ذخار ہے
Maulana Wahiduddin Khan, Tr. New Age Islam

انسان خود اپنی تقدیر کا مالک ہے۔ انحصار صرف اس بات پر ہے کہ اس نے اپنے دماغ کو کس قدر استعمال کیا ہے اور اس کے دماغ نے اسے کتنی توانائی فراہم کی ہے۔ انسان کی بڑی یا چھوٹی کامیابی کا انحصار اس بات پر ہے کہ اس کے دماغ نے اسے کتنی توانائی فراہم کی ہے۔ ہر انسان اپنی شخصیت کی تعمیر خود کرتا ہے۔ لیکن کامیابی کی مقدار انسان کی اپنی منصوبہ بندی پر منحصر ہے۔ اچھی منصوبہ بندی انسان کو سب پر فائق کر دیتی ہے ، جبکہ غلط منصوبہ بندی سے انسان زندگی میں پچھڑا پن کا شکار ہو کر رہ جاتا ہے۔

 

اس کے بعد ہادیہ کو اس کے خاندان والوں کے حوالے کر دیا گیا اور ہادیہ نے کارکنوں اور عدالتوں کو بتایا ہے کہ اس کے والد نے اسے زد و کوب کیا اور اسے یوگا سینٹر میں داخل کر دیا ، جہاں ہادیہ کا کہنا ہے کہ اس پر تشدد کیا گیا اور اسے دوبارہ ہندو دھرم قبول کرنے پر مجبور کیا گیا۔ ہادیہ کے والد نے اس پر کچھ بھی بولنے سے صاف انکار کر دیا۔

 

تمام انبیاء کرام نے اپنی قوم و بت پرستی ، شرک اور اخلاقی و سماجی برائیوں سے روکنے کی کوشش کی ۔ نتیجے میں ان کی قوم نے ان کی مخالفت کی کیونکہ وہ اپنے آبا و جداد کے دین بت پرستی اور شرک کو چھوڑنے کو راضی نہیں تھے ۔ انبیا کرام کے دین اور پیغام کی مخالفت کی ایک وجہ یہ بھی تھی کہ وہ بھی بشر تھے اور اسی سماج کا حصہ تھے ۔ جب بھی کوئی بنی اپنی قوم سے کہتا کہ میں اللہ کا بھیجا ہوا بنی ہوں اور مجھے حکم ہواہے کہ تمہیں توحید کی تعلیم دوں اور بت پرستی و شرک سے روکوں تو ان کی قوم کے لوگ تعجب کرتے کہ انہی کے جیسا ایک بشر اللہ کا نبی یا رسول کیسے ہو سکتاہے جو انہی کی طرح کھانا کھاتا ہے اور بازاروں میں پھرتاہے۔

اس سال جس تعداد میں دہشت گرد عناصر کا انکشاف ہوا ہے اس میں گزشتہ برسوں کے مقابلے میں زبردست مثبت تبدیلی سامنے آئی ہے۔ اور مجھے پختہ یقین ہے کہ مختلف شعبوں میں اس کشادہ ذہنی کے دوام سے انتہاپسندی کا دائرہ مزید تنگ ہو گا اور دہشت گرد جماعتوں کو اپنے پیروکاروں کی تعداد میں اضافہ کرنے میں مزید پریشانیاں پیش آئیں گی۔

 

در اصل کشمیر میں تمام کی تمام شدت پسند جہادی بیانبازیاں جو سوشل میڈیا اور یوٹیوب پر مسلمانوں کو مشتعل کرنے کے لئے جاری ہیں ، ان میں کوئی خاص بات نہیں ہے اور ان کی تائید اسلامی احکام ات کے چار مصادر یعنی قرآن ، حدیث ، اجماع اور قیاس میں سے کسی ایک سے بھی نہیں ہوتی ہے۔ جو لوگ ہندوستانی علماء اور فضلاء کی تنقید کرتے ہیں اور ان پر 'حکومت کا ساتھ دینے' اور 'کشمیر میں جہاد کا فتویٰ دینے سے قاصر ہونے' کا الزام لگاتے ہیں انہیں اس بات کی فکر ہونی چاہئے کہ وہ کس طرح آخرت میں اللہ کو اپنا چہرہ دکھائیں گے۔

شریعت اسلامیہ نے جہاد کے جو شرائط  و استطاعات بیان کئے ہیں آج ہمارے زمانہ میں ان کا وجود نہیں۔مثال کے طور پر اس کی فرضیت کی ایک شرط تو عاقل و بالغ  ہونے کی ہے لیکن ان لوگوں کا کیا کہئے جو نفس کی غلامی و پیروی میں اس قدر ڈوب گئے ہیں کہ وہ گویا بے عقل و مجنوں ہو گئے ہیں  اور جہاد و فساد میں امتیاز کرنے کے قابل نہیں ۔ایسے مریضوں کو چاہیے کہ پہلے جہاد بالنفس کریں اور اس کی آزادی ہر ملک دیتا ہے  ۔ جب نفس کی غلامی سے آزاد ہو جائیں  تو دوسرے مسلمانوں کو  بھی نفس کی غلامی سے آزاد ہونے اور اسلام کے فرائض و واجبات کی  شریعت وحقیقت  اور  معرفت سے آگاہ کریں ۔

 


Get New Age Islam in Your Inbox
E-mail:
Most Popular Articles
Videos

The Reality of Pakistani Propaganda of Ghazwa e Hind and Composite Culture of IndiaPLAY 

Global Terrorism and Islam; M J Akbar provides The Indian PerspectivePLAY 

Shaukat Kashmiri speaks to New Age Islam TV on impact of Sufi IslamPLAY 

Petrodollar Islam, Salafi Islam, Wahhabi Islam in Pakistani SocietyPLAY 

Dr. Muhammad Hanif Khan Shastri Speaks on Unity of God in Islam and HinduismPLAY 

Indian Muslims Oppose Wahhabi Extremism: A NewAgeIslam TV Report- 8PLAY 

NewAgeIslam, Editor Sultan Shahin speaks on the Taliban and radical IslamPLAY 

Reality of Islamic Terrorism or Extremism by Dr. Tahirul QadriPLAY 

Sultan Shahin, Editor, NewAgeIslam speaks at UNHRC: Islam and Religious MinoritiesPLAY 

NEW COMMENTS

  • "The Mutazilite theologians argued that human free will was....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Excellent reply from Sultan Shaheen sahib to Zawahiri. However...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • This Man should be removed from human rights council because....
    ( By Prabhakar Chitrala )
  • Sultan do you want spread terrorism by muslims.? World....
    ( By Prabhakar Chitrala )
  • Does Hats Off understand anything at all? It is not that the western....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Good article
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Whether Hamza Yusuf is included in or excluded from the U.S. Government's ....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • This is not a freedom of religion issue. It is an equal rights issue.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • It's funny that women need a male guardian, women can drive and now can watch football matches....
    ( By Dr. D. Natarajan )
  • The efforts of Sultan Shahin are commendable.'
    ( By Amitabh Tripathi )
  • The issue is not defamation of Islam. The history of Islam is such that nobody ( non-Muslim ) ....
    ( By Biplab Sensarma )
  • How much do you know about Indian intolerance? # Angnao'
    ( By Sarajit Kumar Bairagi )
  • Indian people need loves each other such as Hindu, Christian, sikh, Muslim and others. If you....
    ( By Md Afuan )
  • @Kaushallya Hegde Kumblar Why are you supported pakistan Hindu, because they are not included...
    ( By Md Afuan )
  • @Kaushallya Hegde Kumblar Why are you supported pakistan Hindu, because they are not included ....
    ( By Md Afuan )
  • @Md Afuan Don’t be hypocrite,where is freedom of expression in Pakistan. The moment you write ....
    ( By Kaushallya Hegde Kumblar )
  • Very good attempt. All countries including India should be religiously tolerant'
    ( By Bhabesh Mitra )
  • @Sarajit Kumar Bairagi because both are victims of intolerance.
    ( By Bhabesh Mitra )
  • @Abu Basim Khan Why are you adding the question of Dalit to question of Muslim?'
    ( By Sarajit Kumar Bairagi )
  • Any comment about Indian democracy, follow up and implementation of constitutions, atrocities...
    ( By Abu Basim Khan )
  • By zehadi intolerance Muslims are harming themselves. See isis .'
    ( By Bhabesh Mitra )
  • @Md Afuan soudi arab is bombing Yemen'
    ( By Bhabesh Mitra )
  • @Abu Basim Khan He is trying to legitimate robbery n killing of Iraq n Afghanistan.'
    ( By Mansoor Hakkim Ahamed )
  • @Mansoor Hakkim Ahamed yes, it is hired by Modi and party. Some financial tips, he get from...
    ( By Abu Basim Khan )
  • Sameera Latif Journalist
    ( By Paul Jeyaprakash )
  • What nonsense is he talking about in India thousands of mobs have been done by bjp and Congress ...
    ( By Aamir Shaban )
  • Which human rights council biggest criminal and theives are sitting in UN nations.'
    ( By Aamir Shaban )
  • @Jasrotia Jjames Aabraham True tand is the principal cause of strife the world over'
    ( By Randeep Singh )
  • @A.J. Philip Cash Prize is very less. Sounds like double hiran oil sponsored award in the village tournament.'
    ( By Mohammad Arif )
  • @Liyakhath Ali Does not it mean that "content " he raised is not truth/facts?
    ( By Ananda Padmanabhan )
  • The act that hindu extreamist doing it is inherited from islam. Hindus always the believer of secularism. ...
    ( By Raju Dev Nath )
  • @Manorsnjan Mishra Good explaination'
    ( By Raju Dev Nath )
  • Hindustan is place Hindus in world .In past many religions came, converted people, damaged most...
    ( By Manorsnjan Mishra )
  • Jehadi are most successful in their mission and misguide immature muslim youth to be a part of. ...
    ( By Sanesh Ram Maurya Maurya )
  • They burnt, shoot many journalist openly making the video viral, if they will feel that type of torture ....
    ( By Prativa Dash )
  • Mr.Mohammad Arif The author has invincibly enlisted many instances of terrorism in which....
    ( By Dr.A.Anburaj )
  • Indian Muslims as far as possible drop Arabian tint , tilt and refrain from servitude to Arab world....
    ( By Dr.A.Anburaj )
  • Genocide of Hindu- Khafirs is still in full swing in Bangaladesh...
    ( By Dr.A.Anburaj )
  • "Laws of many Western democracies are more Islamic than the Sharia of Islamists." nothing can be ....
    ( By hats off! )
  • Even Sunnah also demands Muslims to love their enemies instead of promote hatred and yet Muslim extremists promote hatred with polytheists ....
    ( By zuma )