certifired_img

Books and Documents

Urdu Section

خواتین اور حق میراث
مولانا خالد سیف اللہ رحمانی

The attitude of the sharia to wealth and fortune is that it should not be frozen in one hand and keep circulating, that is, should be distributed among maximum number of people. Concentration of financial resources into one or a few hands is not only harmful in financial but social and ethical terms as well. The basic purpose of the economic system is that the needs of all the individuals of the society are fulfilled; no one remains hungry or undressed; there is no one who does not get treatment in sickness, neither is there a family who is deprived of shelter. -- Khalid Saifullah Rahmani


 

یہ ملت جب کبھی اپنی زیاں کاری کو جانے گی وجود اس جامعہ کا معجز ے سے کم نہ مانے گی لیکن جلد ہی یہ تمنائیں سوکھے پتے کی طرح خزاں کی حشر سامانیوں کی نذر ہوگئیں ۔ایک ایک کر کے امیدوں کے چراغ بجھتے گئے اور احساس زیاں کاری کے احساس کے باوجود کوئی کرامت ظاہر نہ ہوئی۔ اس صو رت حال کا انکشاف اس وقت ہوا جب ریڈیو جامعہ کے ذریعہ نشر کردہ ایک اشتہار میں ایک مخصوص فرقہ کے مذہبی جذبات سے کھلواڑ کرتے ہوئے ‘‘کنڈوم ’’کو ‘‘ٹوپی ’’ جیسے ‘‘مذہبی شعار’’ سے تشبیہ دی گئی اور اس کے رد عمل میں اوکھلا کمیونٹی نے شدید غم وغصہ کا مظاہرہ کیا۔  علیم اللہ اصلاحی

 

ایس اے سی ایف کے قیام کی 10ویں سالگرہ کی یہ تقریب لندن میں ہندوستانی ہائی کمیشن کے نہرو کلچرل سینٹر میں ہوئی۔ تقریب کی صدارت کرتے ہوئے معروف فلمساز اور ثقافتی کارکن ڈاکٹر چندر پرکاش دویدی نے کہا کہ ‘‘ مجھے یہ بات متاثر کرتی ہیں وہ ہے ہندوستان کے تئیں یاور صاحب کا جنون ،شفقت او رمحبت اور جس طرح سے انہوں نے اپنے مادروطن کے لوگوں کی تصویر کشی ہے، ان کی ہر ڈاکومینٹری میں ،بھلے وہ انڈیا مائی انڈیا ہو، چد انند ہو ،  کرونانند ہو، راجو گائیڈ ہو یا پھر جھاؤچودھری تانگے والا ہو، ہندوستان کے لئے ان کی محبت اور احترام صاب جھلکتا ہے۔’’....

 

Mumbai's Taj Mahal Palace Hotel was host to a seminar on Composite Culture and Terrorism on Feb 28 which was organised by a London-based website Urdutehzeeb.net run by Mr Ajit Singh Satbhimra. Muslim leader Maulana Mahmood Madani, DIG, Police of Maharashtra, Mr P S Pasricha, the editor of NewAgeIslam.com Sultan Shahin and Prof. A A Fatmi addressed the seminar among others. Ghazal singer Jagjeet Singh also presented some ghazals.

رسول اللہ ﷺ کی داعیانہ حیثیت کو قرآن مجید میں ‘‘بشر’’ (البقرہ :119) اور ‘‘میشر ’’ (الا خزاب :46) کے الفاظ سے بھی ذکر کیا ہے، یہ دونوں الفاظ قریب قریب ہم معنی ہیں، یعنی خوشخبری دینے والا ، خوش خبری ایسی خبر کو کہتے ہیں جو ،مخاطب کو مسرور اور شاد کام کردے، اس کی خبر انسان کے دل میں امید کے چراغ جلائے اور یاس ونا امیدی سے بچائے ،قرآن مجید میں زیادہ تر ایمان کی دعوت دیتے ہوئے جنت کی نعمتوں میں اور دنیا وآخرت کی فلاح وکامیابی کا ذکر ہے، داعی کا اسلوب یہی ہونا چاہئے کہ اس کی بات لوگوں کو خوشی او رمسرت کے احساس کے ساتھ حق کی طرف لے آئے ،آپ ﷺ کے چچا ابوطالب کی وفات کا وقت ہے،....

 

غالب نے دکھ بھری زندگی کو اپنے اوپر غالب نہیں آنے دیا اور زندگی بھر وہ اپنی زندگی کا مذاق اڑاتے رہے۔ میر اپنے دکھوں ،غموں ،تکلیفوں اور مصیبتوں سے مغلوب ہوگئے، خود بھی روئے اور دوسروں کو بھی رونے کی تلقین کی۔ میر نے حسرت ویاس کی سوگوار فضا پیش کی مگر غالب حزن وملال کی بیان میں بھی پر امید دکھائی دیتے ہیں۔  شمس کنول

 

بدقسمتی سے مغربی زبانوں بشمول انگریزی میں قرآنی تحقیقات پر مبنی کوئی ایسی کتاب یا تصنیف موجود نہیں جس کے ذریعہ قرآن کی اصلی روح تک رسائی حاصل کی جاسکے۔ ا نگریزی زبان میں قرآن کریم کے ترجمے اور تفاسیر موجود ہیں لیکن انسائیکلو پیڈیا کے نام پر ایسی کوئی تصنیف موجود نہیں ۔گزشتہ ایک صدی کے دوران قرآنی انسائیکلوپیڈیا کے نام پر لکھی جانے والی تصنیف کے کئی ایڈیشن موجود ہیں لیکن اس میں کئی قسم ہیں۔ انگریزی زبان میں اسلام کے بارے میں مکمل حوالہ جات کے ساتھ پہلی تصنیف 36۔1913میں انسا ئیکلو پیڈیا آف اسلام کے نام سے لکھی گئی ۔ اس کتاب کا مصنف برل نامی ایک عیسائی تھا جو نسلاً انگریز تھا، لیکن اسے عربی اور اسلامی علوم پرمکمل مہارت حاصل تھی۔    سلمان احمد عباسی

 

مکے میں آپ تیرہ سال تک اسلام کی دعوت دیتے رہے لیکن کوئی بھی ایسا واقعہ نہیں کہ جس میں آپ نے تشدد کا راستہ اختیار کیا ہو۔ آپ کو قرآن میں عفو اور اعراض کا حکم دیا گیا تھا ، آپ اس پر عامل رہے۔ آپ اور آپ کے اصحابؓ کو مختلف طرح سے ایذائیں دی جاتی رہیں، آپ کو بھڑکایا جاتا رہا لیکن آپ اشتعال پر مشتعل نہیں ہوئے ۔ آپ ہمیشہ مظلومین کو یہ کہہ کر صبر کی تلقین کرتے رہے کہ :‘‘ صبر کرو تمہاری جگہ جنت ہے۔’’ یہاں آپ کے اشاروں پر مر مٹنے والے صحابہ موجود تھے۔....

‘‘ اگر اللہ چاہتا تو تم سب کو ایک ہی امت بنادیتا ۔( لیکن اس نے نہیں کیا اور اس کی حکمت یہ ہے کہ ) وہ تمہیں آزمانا چاہتا ہے ان تمام شرعی احکام وقوانی میں جو اس نے تمہیں دیئے ہیں۔ تو تم نیکیوں کی طرف سبقت کرو ۔ اور یاد رکھو کہ تم سب کو آخر کار اسی کے پاس لوٹ کر جانا ہے’’۔ محمد الیاس ندوی رامپوری

شروع میں جب خود کشی دھماکوں کا سلسلہ شروع ہوا تو لوگوں کو سمجھ میں نہیں آیا کہ یہ کیا ہورہا ہے۔ تعلیم یافتہ مسلمانوں کو علم تھا کہ خود کش دھماکہ یا اپنے جسم سے بم باندھ کر دشمن کے حصار میں گھس جانا او ردشمن کے ساتھ ہی اپنے بدن کے بھی چتھڑے اڑا لینا ،جاپانیوں کا ایجاد تھا۔ جاپان کی ریڈآرمی نے سب سے پہلے یہ سلسلہ شروع کیا تھا۔ اس کے بعد ایل ٹی ٹی ای کے سری لنکا تملوں نے اسے اپنایا اور اسے اپنا خاص ہتھیار بنالیا، لیکن کسی مسلمان کا اس طرح اپنی جان دیناکسی کے سان وگمان میں بھی نہیں تھا۔....

 

یہ زہریلے صہیونی پروپیگنڈے کا یہ نتیجہ تھا کہ امریکہ کی یہودی لابی نے امریکہ کو عراق پر حملہ کرنے پر راضی کرلیا۔ یہ مجروح مسلمان سوچ پر ایک اور ضرب تھی ۔دنیا بھر کے مسلمان خواہ صدام حسین کے ہمدردنہ بھی ہوں، لیکن انہیں یقین تھا کہ امریکہ کا  حملہ بالکل غلط اور غیر اخلاقی تھا۔ امریکہ اور مغربی دنیا سے مسلمانوں کی خفگی اور بڑھ گئی۔ بالکل اسی طرح عالمی پیمانہ پر مسلمانوں کی اکثریت جڑواں ٹاورس کی تباہی پر غمزدہ تھی اور اسے بالکل غلط اور ناعاقبت اندیشی پر محمول حرکت خیال کرتی تھی، لیکن  مغربی دنیا جس طرح اور جن نعروں کے ساتھ (صدر جارج بش نے اسے ‘‘صلیبی جنگ’’ تک کہہ دیا تھا)حملہ کیا تھا، مسلمان اس سے متفق نہیں تھے۔....

12ربیع الاول کو پوری دنیا میں جشن منایا جاتا ہے۔ اپنی عقیدتوں کے پھول اور محبت والفت کا اظہار برتی روشنی اور گھر ودیگر مقامات پر قمقمے لگا کر کرتےہیں۔ آپؐ کی مدح وثنا میں اپنی زبان کو ترکرنے اور آپ ؐ کی مقدس زندگی کو اپنے لئے مشعل راہ بنانے کیلئے پوری دنیا میں فرزندان توحید اپنی عقیدت ومحبت کو اظہار کرنے کیلئے جلوس محمدیؐ نکا ل کر جشن مناتے ہیں۔ ہندوستان کی دیگر ریاستوں کی طرح کرناٹک، تمل ناڈو، کیرالا سمیت دیگر ریاستوں میں بڑے ہی دھوم دھام سے 12ربیع الاول منایا جاتا ہے۔....

 

ہمارے ملک کے مختلف حصوں میں اپنے اپنے طریقہ سےجشن میلاد النبیؐ منایا جاتا ہے ان میں لکھنؤ اور پورے اودھ کا انداز جدا گانہ ہے۔ یہاں اس دن کچھ لوگ چراغاں بھی کرتے ہیں لیکن سڑکوں اور محلوں میں برقی قمقموں کو روشن کرنے کا عام رواج ہے۔ محافل میلاد کا اہتمام ہوتاہے تو گھروں میں درود وسلام کے نذر انے پیش کرنے کے علاوہ نعت پرھنے کا عام رواج ہے۔ ربیع الاول کا چاند نظر آتے ہی لکھنؤ کی فضائیں درود وسلام سے گونجنے لگتی ہیں۔ گھروں سے نعت پڑھنے کی آواز یں بلند ہونے لگتی ہیں۔....

 

میرے حساب سے برقع عورتوں کو تنہا کردیتا ہے یہ مذہب کی نہیں خواتین کی غلامی کی علامت ہے۔ یہ کوئی پہلا موقع نہیں ہے کہ برقع تنازع کا مرکز بنا ہو چندسال قبل برطانوی وزیر جیک سٹرا نے اپنے مسلم ووٹرز سے کہا تھا کہ وہ خود کو نقاب کے پیچھے رکھنا ترک کردیں۔ برقع اور ہیڈ اسکارف متعدد یورپی ملکوں میں پہلے بھی باعث نزا ع بنا ہوا ہے اٹلی نے 2005میں اینٹی ٹیررزم کے تحت برقع پر پابندی لگاد ی تھی ، ترکی نے اسکولز ،کالج ، یونیورسٹیز اوردفاتر میں ہیڈ اسکارف کی ممانعت کی ہوئی ہے بلجیم کے پانچ شہروں میں اور جرمنی کی نوریاستوں میں ہیڈ اسکارف پر پابندی عائد ہے ۔اب جب کہ فرانس نے برقع پر مکمل پابندی کا قانون منظور کرلیا ہے تو میرے حساب سے تمام یورپ میں اس کے اثرات مرتب ہونے لازمی ہیں۔  اسد مفتی ایمسٹرڈم

 

ہم یہ بات پہلے بھی عرض کرچکے ہیں کہ 1813میں ہی برطانوی حکومت نے ایک لاکھ روپے سالانہ کی رقم ایسٹ انڈیا کمپنی کی پشت پناہی میں خرچ کرنی شروع کردی تھی اور یہ سلسلہ پھر نہیں رکا ،پاکستان کے وجود میں آنے کے بعد بھی 1955میں USAIDنے 10ملین ڈالر کے لگ بھگ پاکستان سے مشہور بزنس انسٹیٹیو ٹ کے بنیاد رکھی جس کا نام IBA ہے ۔ آج IBA کے طرز پر پاکستان میں بے شمار تعلیمی ادارے کام کررہے ہیں جن کو مغرب کے فریب زدہ آنکھیں بڑی قابل ستائش نظروں سے دیکھتی ہیں۔....

 

بے شک جامعہ ایک عظیم جدید اور سیکولر ادارہ ہے۔ یہاں ہمیشہ سے لڑکے لڑکیاں، ہندو مسلمان اور امیر وغریب ہر طبقہ کے لوگ ساتھ ساتھ پڑھتے رہے ہیں ، لیکن آپ اگر سرکوزی سے سیکولر ازم اور عظمت کردار کا درس لے رہے ہیں اور لڑکے لڑکیوں کا آزادانہ اختلاط او ر عریانیت اگر آپ کے نزدیک ماڈرن اور سیکولر ہونے کی لازمی شرط ہے، تو یہ جامعہ کی تاریخی عظمت کے منہ پر بھی طمانچہ ہے اور اس کے تابناک مستقبل کے لئے بھی خطرناک ۔ جامعہ عظیم اس لئے ہے کہ اس کا نصب العین عظیم ہے۔....

 

قوموں او رملکوں کو جنگی جنون میں مبتلا کردینا بہت آسان ہے لیکن انہیں امن وآشتی کا راستہ دکھانا ایک مشکل کام ہے۔ وہ لوگ جو آج کیمیائی ہتھیار وں یا ایٹمی اسلحے کی موجودگی پرفخر کرتے ہیں، یہ کہتے ہیں کہ اگر ان کی مرضی کے مطابق معاملات نہیں طے کیے گئے تو وہ ان ہتھیار وں کا استعمال کر گزر یں گے انہیں ذمہ دارانہ عہدوں پر نہیں، پاگل خانوں میں ہونا چاہئے۔....

 

جنگ ختم ہوئی تو جرمنی میں آئن اسٹائن کے خلاف بہت بڑے پیمانے پر مہم چلائی گئی، جس میں اس کے نظر یہ اضافیت کو بھی رد کرتے ہوئے باطل قرار دیا گیا ۔ یہ صورت حال اس کے ساتھیوں اور  دوسرے پروفیسر وں کے لیے صدمے اور تکلیف کا سبب تھی۔ لیکن ا ن کی بزدلی آرے آئی اور وہ اس کے حق میں آواز اٹھانے کی ہمت نہ کرسکے۔ آئین اسٹائن کو ہجوم سے گھبرا ہٹ ہوتی تھی اور وہ لوگوں کو سامنا کرنے سے کتراتا تھا ۔....

 

پاگلوں کے اس وارڈ میں رہتے ہوئے بھی اگر ایتھر لے کا ذہنی توازن برقرار رہا اور اگر امریکی محکمۂ دفاع اسے آزاد کرنے پر مجبور ہوا تو اس کا سہرا آسٹریا کے فلسفی اور دانشور کنٹر اینڈ رز کے سر ہے جس نے امریکی ہفت روزہ ‘‘نیو ویک’’ میں ضمیر کی ملامت کے عذاب میں گرفتار میجر ایتھر لے کی قید کا قصہ پڑھا اور عالمی ضمیر کی عدالت میں اس کا مقدمہ لڑنے کا فیصلہ کیا ۔کنٹر نے ایتھر لے کے نام پہلا خط 3جون؍ 1959کو اور آخری 11؍جولائی 1961کو تحریر کیا۔...

 

2009کا سال سوات ،مالا کنڈ ،دیر ،جنوبی وزیر ستان ،پشاور ،اسلام آباد، لاہور، پنڈی، اوکاڑہ، کامرہ اور دوسری متعدد بستیوں کو لاشوں کا تحفہ دیتا ہوا گزرا ہے۔ لیکن روز عاشور کراچی اور کراچی والوں کے ساتھ جو کچھ ہوا وہ دہشت گر دوں کا ماسٹر اسٹروک ہے۔ انہوں نے جہاں شہر والوں میں خوف وہراس کی لہر دوڑ ادی ۔وہیں انہوں نے اس شہر کی اقتصادی اور معاشی سرگرمیوں پر بھی کاری ضرب لگائی۔ شہر خوف کے آسیب  کی گرفت سے تو شاید چنددنوں میں نکل آئے لیکن اس کی اقتصادی سرگرمیوں پر جو کاری ضرب  لگائی گئی ہے اس کے اثرات پہلے دن سے ملک کی معیشت پر مرتب ہونے لگے ہیں ۔...

ان دوشہروں کی ہلاکت کو 55؍برس گزرچکے ۔ جاپان اب دنیا کی عظیم صنعتی طاقت ہے۔ دونوں شہر دو بارہ سے بسائے جاچکے لیکن ہیروشیما میں ‘‘امن پارک’’ کے شمال میں وہ پسماندہ علاقہ ہے جو ‘‘ایٹمی جھونپڑپٹی’’ کہلاتا ہے۔ یہ جھونپڑپٹی دریائے اوتاتک پھیلی ہوئی ہےاور یہاں تقریباً ایک ہزار خاندان رہتے ہیں جو چار ہزار افراد پر مشتمل ہیں۔ اس جھونپڑ پٹی میں بیشتر وہ لوگ رہتے ہیں جو ایٹمی حملے سے متاثر ہوئے۔ یہاں اور ہیروشیما کے دوسرے پسماندہ علاقوں میں آج بھی ایٹمی حملے کے وہ بیمار موجود ہیں جو 6؍ اگست 1945سےبستر پر پڑے ہیں۔....

 

ماحولیات کے کئی ماہرین کاکہنا ہے کہ ہندوستان اور پاکستان کے جو علاقے اس وقت بدترین خشک شالی کی لپیٹ میں ہیں، وہی ہیں جہاں ہندوستان اور پاکستان نے اپنے نیو کلیائی دھماکے کیے تھے ۔ ان دھماکوں نے ایک وسیع وعریض علاقے میں فطرت کے ماحولیاتی توازن کو درہم برہم کر دیا ہے۔ صحرائے تھر سے ملے ہوئے راجستھان کے علاقے پوکھران میں ہندوستان نے ایٹمی دھماکے کیے تھے اور پاکستان نے بلوچستان میں چاغی کو ان تجربات کے لئے منتخب کیا تھا۔ نیتجہ یہ نکلا ہے کہ پاکستان میں بلوچستان نادر تھر، ہندوستان میں پوکھران اور اس سے متصل علاقوں میں 1998اور 1999اور اب 2000کے جون تک پانی کی بوند نہیں برسی ہے۔کنویں خشک ہوچکے ہیں ،صدیوں پرانی زیر زمین نہریں سوکھی پڑی ہیں۔ وہ پانی جو 80فٹ کی گہرائی میں ملتا تھا اب 800اور ہزار فٹ کی گہرائی میں نہیں ملتا ۔....

 

مئی 1998کا مہینہ اب برصغیر کے جنگی جنونیوں کی جیت ایک ‘‘تاریخی باب’’ بن چکا ہے ۔ یہ وہ دن تھے جب ہندوستان او رپاکستان کے حکمرانوں کو یاد نہیں رہا تھا کہ وہ دنیا کے غریب ترین عوام پر حکمرانی کررہے ہیں۔ ان کی مملکتوں میں 40کروڑ افراد روزانہ بھوکے سوتے ہیں۔مزدور بچوں کی کل تعداد 3؍کروڑ 20؍لاکھ ہے ، 26؍کروڑ انسان طبی سہولتوں اور 83؍کروڑ افراد صفائی کی بنیادی سہولتوں سے محروم ہیں۔ یہاں کے 50؍کروڑ انسان غربت کی لکیر سے نیچے زندگی گزار رہے ہیں اور ان دونوں ملکوں کی دیہاتی عورتیں اپنے مویشیوں سے کم قیمت میں بیچی اور خریدی جاتی ہیں۔ ان تمام باتوں کو بھلا کر برصغیر کے مقتدرین نے اس خطے کے لوگوں کی مشکلات کم کرنے کی بجائے یہاں نیو کلیائی جہنم بھڑکانے کا اہتمام کیا اور اس کے لئے دونوں طرف سے کھربوں روپے خرچ کئے گئے ۔ کوئی بھی باشعور انسان یہ کیسے مان سکتا ہے کہ نیو کلیائی جن کو آزاد کرتے ہوئے برصغیر کے حکمران طبقات ان حقائق سے آگاہ نہیں تھے۔....

 

ہمارے ملک میں محلاتی سازشو ں کا پہلا شکار بانی پاکستان تھے اور ا ن کے قتل کے بعد ملک 24سالوں تک سیاسی استحکام سے محروم رہا۔ ان سازشوں کا دوسرا شکار پاکستان کے پہلے وزیر اعظم لیاقت علی خان بنے جن کے قاتلوں کا سراغ آج تک نہ مل سکا ۔1971سے 1977تک ملک کے پہلے منتخب وزیر اعظم ذوالفقار علی بھٹو نے جس طرح 6سال کے قلیل عرصے میں ایک منتشر قوم اور ہاری ہوئی فوج کو مضبوط ومستحکم اور متحد کیا مگر ملک دشمن اور ترقی کے دشمنوں کو ترقی کرتا ہوا ایٹمی پاکستان قبول نہ تھااس لئے دواداروں نے ایک بیرونی طاقت کے گٹھ جوڑ سے ایک مقبول عوامی شخص کو تختہ دار تک پہنچادیا مگر تاریخ نے اس لیڈر کو حسینیت کا پیروکار اور اناالحق کا نعرہ لگانے والے منصور بنادیا۔  نثار احمد کھوڑو

 

کتاب کاپہلا باب سرمایہ دارنہ نظام کی تعریف اس کے آغاز وار تقا اور اس کے اغراض ومقاصد سے متعلق تھا۔ نیا فن تھا، مضمون سمجھ میں آرہا تھا ،اس لیے دلچسپی برقرار رہی ۔ دوسرے باب میں جدید علم الاقتصاد کی دو اہم اصطلاحوں مائکرو (جزوی) اور میکرو (کلی) اکنامکس کے بارے میں پڑھا یا گیا۔ تیسرے باب میں طلب ورسد (Demand & Supply)کی بحث تھی۔ اس مضمون کو جب مثالوں سے سمجھا یا گیا اور بار گرافس اور ڈائگر امز کی مدد سے مضمون کو آسان کرنے کی کوشش کی گئی تو علم ریاضی اور الجبرا سے عدم واقفیت کی بنا پر طلب ورسید جیسے آسان نظریے کو سمجھنا میرے لیے انتہائی مشکل ہوگیا۔....

 


Get New Age Islam in Your Inbox
E-mail:
Most Popular Articles
Videos

The Reality of Pakistani Propaganda of Ghazwa e Hind and Composite Culture of IndiaPLAY 

Global Terrorism and Islam; M J Akbar provides The Indian PerspectivePLAY 

Shaukat Kashmiri speaks to New Age Islam TV on impact of Sufi IslamPLAY 

Petrodollar Islam, Salafi Islam, Wahhabi Islam in Pakistani SocietyPLAY 

Dr. Muhammad Hanif Khan Shastri Speaks on Unity of God in Islam and HinduismPLAY 

Indian Muslims Oppose Wahhabi Extremism: A NewAgeIslam TV Report- 8PLAY 

NewAgeIslam, Editor Sultan Shahin speaks on the Taliban and radical IslamPLAY 

Reality of Islamic Terrorism or Extremism by Dr. Tahirul QadriPLAY 

Sultan Shahin, Editor, NewAgeIslam speaks at UNHRC: Islam and Religious MinoritiesPLAY 

NEW COMMENTS

  • UN has lost its credibility. It is simply a forum of debate. Hardly does...
    ( By Salman )
  • Adopting Christianity means adopting true religion of Allah.
    ( By Mahender Kumar )
  • Islam promotes violence ......etc against Khafirs.
    ( By Dr.A.Anburaj )
  • Talha's comment shows how talaq has been turned into a joke. People have derived new types of talaq...
    ( By Arshad )
  • The comment was posted thru mobile phone. And while typing on mobile, some errors occur and also it's automated dictionary takes pushes some words into ...
    ( By Arshad )
  • Saying that Islam emphasized education is hardly hubris except in the...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • کیوں نہ اہل ذکر سے مراد ماہرین لئیے جائیں یعنی جب بھی کوئی مسئلہ ہو اس علم کے ماہر سے پعچھع
    ( By qasim raza Tirmiz zi )
  • it is time for muslims globally - not just in india) to get out of their superiority...
    ( By hats off! )
  • Your article is in the same vein as current discourses in international....
    ( By Dr. Sharifah Munirah Alatas )
  • Good article! The author talks sense.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Hats Off hates any Muslim who favors peace, education and modernization....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Anything that promotes violence, coercion, intolerance, takfirism...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • such a breathtaking, once-in-a-millennium, nobel-prize-worthless comment...
    ( By hats off! )
  • Very interesting discussion, specially the brand new concept of "duty-free divorce." But....
    ( By Sultan Shahin )
  • No doubt, debate on Islamic ideologies must happen.
    ( By gholam ghouse )
  • I appreciate your thoughts.
    ( By Usha Jha )
  • If this is a religion of peace, then why is it not believed so by Jihadists and some Extremist non Muslims?,...
    ( By Talha )
  • These terrorists are weakening Muslims and therefore are playing the role of agents of anti-Islamic elements. '
    ( By Anjum )
  • لإخوان يستحلون قتل المخالف ولو كان ضعيفا محروما مقهورا، وفي أقل الأحوال يعملون على تشويهه وتقديم المبررات لاغتياله. '
    ( By عادل الشعبی )
  • Asking Zakir Naik to stop belittling the religions of others is tantamount to defanging him! He knows nothing else!
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Personal and family laws should be the responsibility of civil society. Religious scholars should keep out of....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • The United Kashmir Peoples National Party (UKPN) advocates a united...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Next move should be to bring the RSS on the path of Gandhi and Nehru...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • It is not just Arab wealth. It is also Arab racism. The Prophet's last sermon....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • What a depraved and ignorant comment from Hats Off! She represents Christians, Jews, Muslims, Hindus and atheists of her little constituency in Minnesota.'
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • ilhan omar represents the free-booters and scalawags like some....
    ( By hats off! )
  • Ilhan Omar never said she represents all Muslims, or even Muslims....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • It is in the nature of fascist organizations to spread paranoia.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Female circumcision must be prosecuted as a criminal assault with stiff penalties
    ( By Ghulam Mohiyuddin Faruki )
  • yahood o hanoodon se nafrat islami fitrat hai
    ( By hats off! )
  • are kafir admi ye Sarah edan BHI Muslim Nahi hai yahudi hai
    ( By Syed Mohammad Faizan )
  • This man is dishonest, mostly in western countries other minority's are well integrated and never....
    ( By Aayina )
  • Because democracy is run by Hypocrites and capitalist. Other factor added in last 70 years was ....
    ( By Aayina )
  • Instant Triple Thalak is banned and one Monolithic Arabian practice is eiiminated. Another Monolithic Arabian practice....
    ( By dr.A.Anburaj )
  • Shamless Hindu showing his Manhood power to grab girls, like Muslims. Shame on this kind of Hindus ....
    ( By Aayina )
  • Taha Deceiving is not explanation. Might be clear to you now.'
    ( By Aayina )
  • Huzaifa I not saying without reason. I am not here for Sultan Shahin reply , but any non-Muslims....
    ( By Aayina )
  • Listen to another Kashmiri Pandit who denies lack of safety of Pandits living in the valley...
    ( By Naseer Ahmed )
  • t seems The global power wants Muslims either to be killed....
    ( By Urban )
  • काश कोई हिंदुत्व/बीजेपी समर्थक, मित्र Alok Mohan की इस पोस्ट पर कुछ कहे....
    ( By Karm )