certifired_img

Books and Documents

Urdu Section

حضرت رسول پاکﷺ کی زندگی اہم مقاصد میں سے اہم ترین مقصد امت کو دین کی تعلیم دینا تھا۔ تعلیم کو بچوں تک پہنچانے میں خواتین کا اہم رول ہوتا ہے۔ اس اقدام سے یہ حقیقت بھی واضح ہوتی ہے کہ اسلام میں عورت کو کس قدر وقعت اور عظمت حاصل ہے۔ اسلام نے عورت کی عظمت واہمیت کو شروع ہی سے بڑی قدروقیمت سے پہچانا ۔اسلام ایک طرح سے اصلاح معاشرہ کا عظیم ترین تعلیمی ادارہ ہے۔ ان نکاحوں کے توسط سے قبائل کو اسلام سے جوڑا جاسکتا۔ نبی اکرم ﷺ سے قیامت میں انسانوں کے دوبارہ جی اٹھنے کا سوال کیا گیا اور عقلی نقطۂ نظر سے شکوک وشبہات پیش کئے گئے تو حضرت اکرم ﷺ نے قرآن کریم سے توضیحات کی روشنی میں جواب دیا کہ جس طرح مرد زمین بارش سے پہلے خشک اور بے رونق ہوتی ہے ، بارش آتے ہیں مردہ اجسام کے سفوف وذرات خاکی کیلئے بھی ایک بارش ہوگی اور اس سے مردو ں میں جان پڑجائے گی۔  عادل صدیقی

 

اس حقیقت سے انکا ر نہیں کیا جاسکتا کہ اس قدر تغیرات کے بعد بھی ہمارے نصاب تعلیم میں ان کتابوں کو غلبہ حاصل ہے جو مشکل پسندی میں شاہ کار کی حیثیت رکھتی ہیں، مثال کے طور پر نحوکی مشہور کتاب  کافیہ ابن حاجب ہی کو لے لیجئے ،اس کی مشکل پسندی کا عالم یہ ہے کہ یہ کتاب علم نحو کے قواعد تو کیا سمجھاتی اس کے بجائے وہ خود ایک چیستاں کی حیثیت رکھتی ہے، چھوٹے چھوٹے بچے اس چیستاں کی مشکلات حل کرنے میں شب وروز مصروف رہتے ہیں اور اپنا سرکھپاتے ہیں ،کافیہ اس قدر مشکل اور پیچیدہ کتاب ہے کہ اس کی پچاس سے زیادہ شروحات تو عربی زبان میں ہیں، اردو میں بھی نے شمار شروحات ہیں اور ان میں مسلسل اضافہ ہورہا ہے، اس کی ایک شرح ہے ‘‘شرح جامی’’ یہ شرح کافیہ کے مشکل مقامات تو کیا حل کرتی خود حل کی محتاج بن گئی ہے۔  مولانا ندیم الواجدی

 
لوگوں کانٹے نہ بونا
زاہدہ حنا (کراچی)

یہ ان صوفیا کی رواداری تھی جس نے ذات پات میں جکڑے ہوئے کروڑوں انسانوں کو اپنے سینے سے لگا یا اور ا ن کے لیے ایک ایسی دنیا کے دروازے کھول دیے جو کسی مسجد ،کسی درگاہ ، کسی خانقاہ میں قدم رکھنے کا اتنا ہی حق رکھتے تھے جتنا کسی سیدیا کیس صدیقی ،فاروقی کا حق تھا، وہ 9سلاطین کے دربار سے وابستہ رہنے والے ملک الشعرا ، امیر الامرا ،امیر خسرو کے برابر بیٹھ کر ‘‘محمدؐ میر محفل بود شب جائے کہ من بودم’’ سن سکتے تھے ۔ اور حضرت نظام الدین اولیا کے حضور رقص کرسکتے تھے۔....

 

ہندوستان میں علی گڑھ مسلم یونیورسٹی کے بعد مسلمانوں کے دوسرے سب سے زیادہ شہرت یافتہ اور باوقار تعلیمی ادارے جامعہ اسلامیہ کے وائس چانسلر نجیب جنگ (آئی اے ایس) کے حالیہ بیانات نے ملت کے درد مندوں کو ایک طرح کی تشویش میں مبتلا کردیا ہے.....خبررساں ایجنسی آئی اے این ایس سےبات کرتے ہوئے وائس چانسلر نجیب جنگ نے کہا کہ ‘‘ ہم کوئی اعلیٰ مدرسہ نہیں ہیں، پتہ نہیں کیوں بہت سے لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ یہ ایک طرح کی مسلم یونیورسٹی ہے۔...

 

شوہر وزوجہ کے درمیان رنجش کی وجہ زوجہ کے تعلیم یافتہ ہونے کی حالت میں کبھی یہ ہوتی ہے کہ زو جہ کسی خفیہ پتہ پر اپنے عزیزوں سے خط وکتابت رکھتی ہے، جس سے شوہر کو طرح طرح کے شبہات پیدا ہوتے ہیں۔ شوہر وزوجہ رشتہ اتحاد اور آپس کے پورے اعتماد کا ہے ۔ اس حالت میں زوجہ کو کوئی خط وکتابت بلا اجازت وعلم شوہر نہیں کرنی چاہئے اور سب سے بہتر انتظام یہ ہے کہ زوجہ ہمیشہ اپنے خطوط کھلے لفافہ میں شوہر کے حوالہ کرے۔ لیکن اگر بدقسمتی سے آپس میں اس قدر اتحاد و اعتماد نہ ہو تب شوہر کو بھی ہر گز زوجہ کے خطوط کو دیکھنے کے درپے نہیں ہوناچاہئے ۔ اس کا نتیجہ صرف یہ ہوگا کہ اس کی زوجہ کسی اور خفیہ پتہ پر خط وکتابت کرے گی جو زیادہ بدنامی کا موجب ہے۔....

 

خانہ داری کے متعلق سب سے ضروری اور سب سے مقدم امر یہ ہے کہ شوہرکے لئے جس کی ذات پر کل گھر کا آرام منحصر ہے عمدہ مفید صحت  اور مقوی غذا کا انتظام کرے۔ اس زمانہ میں کہ دماغی محنتیں بڑھتی جاتی ہیں اگر کوئی عورت اپنے شوہر کے اس ضروری فرض کو ترک کرتی ہے تو گویا وہ اپنے شوہر کو خود جان بوجھ کر مارتی ہے ۔تعلیم یافتہ شخصیتوں کی اشتہائیں اس زمانہ میں عموماً بگڑی ہوئی ہیں ان کے لئے ایسی غذا کی ضرورت ہے جو مقدار میں کم اور غذائیت میں زیادہ ہو اور تھوڑے تھوڑے اوقاف میں معینہ کے بعد مثلاًدن میں تین یا چار دفعہ ملنی چاہئے ۔ ہر بیوی کو اپنے شوہر کے مزاج سے اس باب میں پوری اگاہی حاصل کر کے اس پر نہایت پابندی کے ساتھ کار بند ہونا چاہئے ۔....

 

تاریخ اسلام اس پر گواہی دیتی ہے کہ حلقہ بگوش اسلام ہونے کے بعد آپس میں سخت سے سخت مخالف اوردشمن قبیلے بھی ایک دوسرے کے خیر خواہ ہوگئے تھے اور یہی اسلام کی دین تھی تو ہر ایک خود کو تکلیف میں محسوس کرتا تھا۔ یہ بھی اسلام کی ہی دین تھی کہ جب دوران جنگ پیاس لگی تو ایک دوسرے کی  پیاس بجھانے کو مقدم جان کر ہر پیاسے سے اور جاں بلب صحابی نے اپنے اگلے والے صحابی کے لئے پانی آگے بڑھادیا اور یوں تینوں پیاسوں نے جام شہادت نوش کرلیا۔اگر اسلام میں شامل ہونے سے پہلے کی تاریخ کا جائزہ لیا جائے تو آپس میں ایک دوسرے کی شکل بھی دیکھنا گوارا نہیں کرتے تھے لیکن اسلام قبول کرنے کے بعد ایک دوسرے کا دکھ درد محسوس کرنے لگے تھے اور ایسے وقت میں جب پیاس کے سبب حلق خشک ہے اور دم نکلنے کو ہے یہ خیال بدرجہ اتم موجود ہےکہ دوسرے کی پیاس پہلے بجھنی چاہئے ۔  مولانا اسرارالحق قاسمی

 

ہمارے یہاں کی انتظامیہ ظلم وستم کو روکنے میں ناکام ثابت ہورہی ہے اور یہی نکسلائٹ کی کامیابی کی وجہ ہے۔ہمارے یہاں غربت مزید غریب ہوتا جارہا ہے ۔ کسان غربت سے تنگ آکر خودکشی کرنے پر مجبور ہیں۔ یہ تمام حالات منفی اثرات پیدا کررہے ہیں جس سے خطرہ اور بھی زیادہ بڑھ گیا ہے۔ کہیں ایسا نہ کہ ان کی غربت ومفلسی کا فائدہ اٹھا کر کوئی انہیں دہشت گرد انہ کارروائیوں پر آمادہ کردے۔....

 

محبت کا مقتضا راز داری بھی ہے۔ بیوی کو چاہئے کہ اپنے شوہر کے رازوں کو بغیر اس کی اجازت کے کبھی افشانہ کرے۔ شوہر کے راز کو افشا کرنا نہایت بری عادت ہے اوربعض اوقات اس سے شوہر کے دل میں ایسی برائی بیٹھ جاتی ہے کہ عمر بھر نہیں جاتی ۔بعض بیویاں یوں تو افشائے راز نہیں کرتیں لیکن اگر کسی بات پرنا چاقی ہوجائے تو وہ سب کے روبرو کہہ دیتی ہیں کہ فلاں بات یوں نہ تھی؟ اور شوہر کو اس طرح کا  کہہ دیناسخت ناگوار گذرتا ہے ۔ ایسی حالت میں سخت ضبط کی ضرورت ہوتی ہے۔ اور اس طرح کے افشا سے بعض دفعہ نہایت خطرناک اور لاعلاج خرابیاں پیدا ہوجایا کرتی ہیں اور پھر تمام عمران کا تدارک نہیں ہوسکتا۔....

 

Why has no representative of 1500 million Muslim women won Nobel Prize in science, literature or in any respect? 

There may be a simple answer to this demanding question. How can it be possible in such an anti-women environment, when a Sudanese woman is whipped for wearing the so-called anti-Islamic dress “Jeans” in the first decade of 21st century?

The Islamic heads of Saudi Arabia become sleepless at the opening of the first co-education school. The women in U.S, Europe, Britain, and Israel or in any other part of the world are no more intelligent than the Muslim women, but they qualify for the prizes. The reason being – they get equal opportunities in education, research and training.

They have acquired equal status after a long struggle of about five centuries for their educational, social and political rights without demanding any favour or reservation but they only asked for equal opportunities. The Muslim women are criticized for their failures ignoring the facts that they are handcuffed and fettered, made unable to aspire and achieve anything. -- Zahida Hina, Karachi (Translated from Urdu by Raihan Nezami)

یہ پہلے دوصفوں سے بھی زیادہ ضروری ہے ۔بیوی وہ ہی ہے جس کے محبت بھر ے الفاظ شوہر کے دل سے دنیا کی کدورتوں اور کلفتوں کا غبار زائل کرتے ہیں اور اس کے متفکر دل سے تشویش ہٹا کے شگفتگی بخشتے ہیں ۔ ضرور ہے کہ عورت کی تمام حرکات وسکنات محبت والفت شوہر سے لبریز ہوں ۔ ایک بزرگ نے اپنی بیٹی کی شادی کے وقت جو نصیحت اس کوکی تھی وہ نہایت دلچسپ ہے اس نے کہا کہ ‘‘بیٹی جس گھر میں تو پیدا ہوئی تھی اس سے اب تو نکلتی ہے ۔ ایسے بستر پر جاتی ہے جس سے تو واقف نہ تھی۔ ایسے آدمی کے پاس رہے گی جس سے پہلے سے الفت نہ تھی۔ تو بیٹی تو اس کی زمین بننا وہ تیرا آسمان بنے گا۔تو اس کے آرام کا خیال رکھنا وہ تیرا دل آرام بنے گا۔ تو اس کی لونڈی ہونا وہ از خود تیرا غلام بنے گا۔....

 
اسلام اور اصلاح معاشرہ
ڈاکٹر اصغر انجینئر

ثال کے طور پر اس زمانے کے علماء نے عورتوں کے تعلق سے قرآن کی آیات واحکامات کو ایک مخصوص طریقے سے سمجھا اور اس تفہیم کی بنیاد پر شرعی احکامات قائم کئے گئے۔ آج کے حالات اگر کوئی اصلاح پسند یاعالم قرآن کی انہیں آیات اور ان کے مفہوم کو اپنے طور پر سمجھنے کی کوشش کرے تو اس کا مطلب یہ تو نہیں ہوگا کہ وہ قرآن سے مختلف جارہا ہے یا کوئی نئی چیز پیدا کررہا ہے۔ لیکن ہمارے علماء فوراً فتویٰ دیں گے کہ فلاح شخص قرآن میں تحریف کررہا ہے اور شریعت کو منسوخ کررہا ہے۔ ....

حضرت عائشہ سے روایت ہے کہ ایک جوان عورت آنحضرت کی خدمت میں حاضر ہوئی او رپوچھا شوہر کا حق عورت پرکیا ہے۔ آپ نے فرمایا کہ اگر بالقروض شوہر کے سر سے پاؤں تک پیپ ہو اورعورت اس کو چاٹے تب بھی اس کا پورا شکر ادا نہ کرسکے گی۔ یہ حکایات امام حجتہ الاسلام نے لکھی ہیں جو ان کی چشم دید نہیں ہیں۔ لیکن ہم نے خود ایک مصیبت زدہ لڑکی دیکھتی ہےجس کی پیاری ماں حالت نزع میں تھی اور شوہر کی ممانعت کی وجہ سے وہ ماں کو دیکھنے نہ گئی۔ تھوڑی دیر میں اس کی ماں مرگئی ۔ اور اس بدنصیب لڑکی نے کہلابھیجا کہ مجھے آنے کی اجازت نہیں ہے مگر تم میری ماں کا جنازہ میرے دروازہ کے آگے سے لے جانا کہ میں اس مسافر کو گذرتا دیکھ لوں۔...

 

‘‘نبی اکرم ﷺ نے فرمایا کہ میری امت کا پہلا لشکر جو قیصر کے شہر (قسطنطنیہ ) پر حملہ کرے گا وہ بخشا ہوا ہے’’ (بخاری شریف ج اول) ۔یزیدی گروہ کی اس دلیل کا جواب یہ ہے کہ اللہ عزوجل کے محبوبﷺ کا فرمان حق ہے لیکن قیصر کے شہر قسطنطنیہ پر پہلا حملہ کرنے والا یزید نے قسطنطنیہ پرکب حملہ کیا، اس کے بارے میں چار اقوال ہیں۔ ۴۹عیسوی ، ۵۰ہجری، ۵۲عیسوی، اور ۵۵عیسوی دیکھئے کامل ابن اثیر جلد ۳۔ بدایہ ونہایہ جلد ۸۔ عینی شرح بخاری جلد ۱۴۔ اور اصابہ جلد اول ۔معلوم ہوا کہ یزید ۴۹ ہجری سے ۵۵ہجری تک قسطنطنیہ کی کسی جنگ میں شریک ہوا۔ چاہے سپہ سالات رہا ہو یا حضرت سفیان بن عوف کا معمولی سپاہی رہا ہو مگر قسطنطنیہ پر اس سے پہلے حملہ ہوچکا تھا۔  انتخاب عارد صدیقی

میاں بیوی میں اگر اتفاقاً کوئی نا چاقی پیدا ہوجائے اور شوہر بیوی پر خفا ہو یا غہ- کے الفاظ سے کام لے تو اس بات کا خیال چاہئے کہ دیگر مستورات کے سامنے اس طرح نہ کیا جائے۔ بلکہ تنہائی میں جو چاہئے کہے سب کے روبرو کہنے سے بیوی کی وقعت میں فرق آتا ہے اوراس کو اپنے ہم چشمو میں خفت اٹھانی پڑتی ہے ، جس کا اس کو ہمیشہ رنج رہتا ہے ۔ گھر میں جو مائیں یا انائیں ملازم ہوتی ہیں ان سے آرام یا تکلیف خود مستورات کو ہی زیادہ پہنچتی ہے اور گھر کی بیوی کے ہاتھ پاؤ ہوتے ہیں جن سے وہ کام لے کر اپنے شوہر کو آرام پہنچاتی ہیں پس کسی خادمہ کو رکھنے یا موقوف کرنے پر مردہ کو کوئی اصرار مناسب نہیں ہے۔...

 

حقیقت تو یہ ہے کہ معرکۂ کربلا میں اگر خواتین نہ ہوتیں تو مقصد قربانی شید الشہد ا امام حسینؑ ادھورا ہی رہ جاتا۔ یہی سبب ہے کہ نواسۂ رسول ؐ حسینؑ مظلوم اپنے ہمراہ اسلامی معاشرے کی آئیڈ یل خواتین کو میدان کربلا میں لائے تھے۔کربلا کی شیردل خواتین نے شدت مصائب میں گھر کر بھی اپنے کردار وعمل سے ثابت کردکھایا کہ آزادی ضمیر انسانی کے سرخیل امام حسینؓ کربلا میں خواتین کو بے مقصد نہیں لائے تھے۔ فاتح کوفہ وشام خاتون کربلا جناب زینبؓ کے بے مثل کردار وقربانیوں سے تاریخ کربلا کا ہرورق منور نظر آتا ہے۔  علی ظہیر نقوی

 

کیا مظلوم مخلوق پر یہ ظلم و بیدا د ہوگی او ر ادنیٰ ادنیٰ نالائق پاجیوں کی تنگ مزاجیاں سیکڑوں بے گناہ لڑکیوں کا خون کریں گی اور چار دیواری کے پردہ میں عاجز بیکس بے وارث عورتوں کے سروں پرجوتیاں ماری جائیں گی اور تمام تعلیم یا فتہ خلقت خاموش رہے گی؟ کیا ان ستم رسیدوں کی صدائے الم واضعان قانون کے کانوں تک نہ پہنچے گی؟ کیا قانون انصاف عورتوں کے ستی ہونے کو جو گھنٹہ آدھ گھنٹہ کے جلنے کا عذاب تھاموقوف کرکے عورتوں کے عمر بھر کے جلاپے کو قائم رکھےگا؟ ہم صاف کہتے ہیں کےرحم دلی اور انسانیت اور عقل اور انصاف اور سب سے زیادہ شریعت سب کا اتفاق ہے کہ ایسے پاجیوں کی پردہ گاہوں کوحکما ً توڑ ا جائے۔....

 

Probably India is the only country in the world where Muharram (Chehlum and Chup Taazia) processions can pass through Raj Path adjacent to such important monuments as Parliament and President’s House. Our beloved country does not give this sort of permission to any other religious group. It is a matter of pride for us that this procession did not stop even in the stormy times of 1947. The compassion inherent in Indian culture is indeed unique, not to be found elsewhere. That is why the sacrifice rendered by Imam Hussain 14 centuries ago is remembered better and with greater fervour in India than perhaps anywhere else in the world. -- Ali Abdi

 

ظالم شوہر کو حقہ کا بہت شوق تھا اور وہ عاجز بڑے شوق سے اس بے درد کو حقے بھر بھر کر پلایا کرتی تھی ۔ رنجوں او رمصیبتو ں نے اس کا پھیپھڑا چھلنی کردیا اور وہ شہید دق وسل ہوئی۔ موت سے پہلے سب طاقتوں نے جواب دے دیا اور اس کا شوہر جو ہمیشہ اس کو ستانے اور دل دکھانے پر کمر بستہ رہتا تھا ،آخر انسان کا بچہ تھا۔ دل نرما گیا اور ارادہ کیا کہ اس چلتے مہمان کی کچھ خاطر کرلوں۔ رات کو پٹی کے نیچے بیٹھا تیمار داری کیا کرتا تھا۔ کہتے ہیں کے جب وہ حقہ بھرتا تھا تو بیمار غم بے چین ہوجاتی تھی اور اصرار کرتی تھی کہ مجھے نیچے اتار دو ،بضد مشکل نیچے اتاری جاتی ۔اپنے کانپتے ہوئے ہاتھوں سے حقہ بھرتی تھی او رکہتی تھی کہ جب تک دم میں دم ہے اپنی آنکھوں کے روبرو آپ کو تکلیف نہ کرنے دوں گی۔...

 

پاجامہ معمولی چھینٹ کا اکہرا رہتا ہے اور صبح شام دولائی یارضائی اوڑھ کر چارپایوں پر اسباب کے پوٹ بن کر بیٹھ جاتی ہیں۔ کون کہہ سکتا ہے کہ اس قسم کے سلوک وحشیانہ اور خلاف انسانیت و مروت نہیں ہیں اور کیا اس سے بڑھ نالائقی تصور میں آسکتی ہے۔ ہمارا یہ ہر گز مقصد نہیں کہ جن بیچارے آفت زدوں کو مقدور نہیں ہے وہ عورتوں کی جڑا دل کےلئے مقروض بنیں۔ بلکہ ہم صرف انتا جتلا نا چاہتے ہیں کہ ہر ایک ذی مقدور صاحب استطاعت باپ جو بیٹا او ربیٹی رکھتا ہے وہ خود سوچے کہ ہر جاڑے کے لباس میں وہ بیٹے اور بیٹی دونوں پر یکساں خرچ کرتا ہے۔ کیا اس وجہ سے کچھ لڑکیاں گھر میں چھپی رہنے والی ہیں اورشریعت کے پردہ کو توڑ کران کالباس بھی داخل پردہ کیا گیا ہے۔....

 

مسلمان مردوں کے ا س وحشیانہ طریق نے جو وہ عورتوں کے ہمراہ جائز رکھتے ہیں ،عیسائیوں کے دلوں میں ایک عجیب غلط خیال اسلام کی نسبت پیدا کردیا ہے جو ان کی تصانیف  میں بھی پہنچ گیا ہے۔ عیسائیوں نے سمجھا ہے کہ مسلمانوں کے مذہب کے روسے عورتوں میں روح نہیں ہوتی۔ اس غلطی کا منشا ومبنی صرف یہ ہی امر ہے کہ مسلمان مردوں کا طریق عورتوں کے ہمراہ اس قسم کا ہے جیسا انسانوں کا غیر ذی روح حیوان کے ساتھ ہوا کرتا ہے۔ کبھی یہ خرابیاں اس وجہ سے پیدا ہوتی ہیں کہ بی بی بوجہ تعلیم یافتہ ہونے کے صرف امور خانہ داری کے انتظام اور پیدائش اولاد کا ذریعہ ہوتی ہے۔ یعنی وہ خدمتگار او رمادہ حیوان سے زیادہ مرتبہ نہیں رکھتی اور تعلیم یافتہ شخص کی روحانی خواہشوں کو پورا کرنے اور خوش خیال رفیق بننے کے قابل نہیں ہوتی ۔...

 

اس طبقہ کے بعض لوگ ایک نہایت شرمناک تمیز قائم کیا کرتے ہیں۔ یعنی وہ اپنے لئے عمدہ نفیس کھانا علیحدہ تیار کرواتے ہیں اور عورتو ں کےلئے ادنیٰ درجہ کا علیحدہ تیار ہوتا ہے ۔بعض لوگ اپنی بیبیوں اور لڑکیوں کو پوشاک اپنی حیثیت کے لحاظ سے ایسی ذلیل پہناتے ہیں کہ ا س بے حد خست کے چھپانے کے لئے انہیں ایک اور جابرانہ قاعدہ باندھنا پڑتا ہے کہ وہ کہیں برادری میں نکلنے نہ پائیں اور نہ برادری کی کوئی عورت ان کے گھر آنے پائے۔ ہم نے اوپر بیان کیا ہے کہ غربا میں نکاح کا اصول یہ ہے کہ روٹی ٹکرہ کا آرام ہوجائے اور تسلیم کیا ہے کہ ا س طبقہ میں یہ قابل اعتراض نہیں ۔...

 

ہر سال محرم کا مہینہ آتے ہی ذکر غم حسینؓ اور یاد شہادت حسینؓ سے فضا ئیں گونجنے لگتی ہیں، کتنے ہی لوگ ہیں جو یاد حسینؓ میں سینہ کوبی کرتے نظر آتے ہیں مگر انہیں یہ معلوم ہی نہیں ہوتا کہ حضرت حسینؓ نے اپنی اور اپنے پیاروں اور جاں نثار وں کی قربانی کیوں دی، وہ مدینہ چھوڑ کر کس مقصد کے لیے عراق جارہے تھے، شہادت کا واقعہ کس طرح پیش آیا ،کون لوگ اس کے ذمہ دار تھے ،کس مقصد کے لیے ان کو شہید کیا گیا، وقت کے ساتھ ساتھ اس قصے میں بہت سی بے سروپا اور من گھڑت باتیں شامل ہوگئی ہیں اور اصل واقعہ دھندلاپڑتا جارہا ہے ،ضرورت ہے کہ اس واقعے کو اس کے حقائق کے ساتھ زندہ رکھا جائے اور اس مقصد کو بھی پیش نظر رکھا جائے جس کے لیے حضرت حسینؓ نے اپنی جان کا نذرانہ پیش کیا تھا۔  مولانا ندیم الواجدی

 

یعنی 1857کے بعد مسلمانوں نے باحیثیت مسلمان نظام میں اپنے حصے کی جو مانگ کی تھی ، رنگناتھ مشرا رپورٹ نے کسی حد تک اس مانگ پر اپنی مہر ثبت کردی ہے۔گو ابھی اس کی کوئی آئینی اہمیت نہیں ہے، لیکن فی الحال رنگناتھ مشرا رپورٹ کی مسلمانوں کےکئے وہی حیثیت ہے، جو منڈل کمیشن رپورٹ کی اس رپورٹ کے نافذ ہونےسے قبل پسماندہ ذاتوں کے لئے تھی۔....

 

پیپلز پارٹی کی قیادت اور حکومت اندازہ ہی نہ کرسکی کہ محترمہ کے قتل ، مشرف کی رخصتی ،ڈوگرہ راج کے خاتمے، مسلم لیگ(ن) سے دوری ،آزاد عدلیہ کی بحالی اور توانا میڈیا کے ابھارتے سب کچھ بدل دیا ہے۔انہیں یہ بھی احساس نہ ہوا کہ اب ان کی سپاہ میں کوئی بینظیر نہیں رہی۔اگر  ان حقائق کا ادراک ہوتا تو پیپلز پارٹی پھونک پھونک کر قدم اٹھاتی ۔مد مقابل سیاستدانوں کی نااہلیوں، گورنر راج اور تخت لاہور پر قبضے کی مہم جوئی سےگریز کرتی۔ چٹکیاں کاٹنے کے بجائے قومی ادارو ں سے بہتر تعلقات کار قائم کرتی۔ وعدوں کا بھرم رکھتی ۔میثاق جمہوریت میں موجود احتسابی نظام کو عملی شکل دیتی ۔میثاق میں ایک سچائی اور مفاہمت کمیشن کا واضح نقشہ بھی تجویز کیا گیا ہے۔ یہ کمیشن تشکیل دے کر این آر او کا مقدر اس کے حوالے کردیتی۔ معافی تلافی کا اطلاق 1986اور 1999کی درمیانی مدت تک محدود رکھنے کے بجائے حقیقی مفاہمت اور ایک نئے پاکستان کے عزم راسخ کے ساتھ سارے ماضی پر محیط کردیتی ۔  عرفان صدیقی

 


Get New Age Islam in Your Inbox
E-mail:
Most Popular Articles
Videos

The Reality of Pakistani Propaganda of Ghazwa e Hind and Composite Culture of IndiaPLAY 

Global Terrorism and Islam; M J Akbar provides The Indian PerspectivePLAY 

Shaukat Kashmiri speaks to New Age Islam TV on impact of Sufi IslamPLAY 

Petrodollar Islam, Salafi Islam, Wahhabi Islam in Pakistani SocietyPLAY 

Dr. Muhammad Hanif Khan Shastri Speaks on Unity of God in Islam and HinduismPLAY 

Indian Muslims Oppose Wahhabi Extremism: A NewAgeIslam TV Report- 8PLAY 

NewAgeIslam, Editor Sultan Shahin speaks on the Taliban and radical IslamPLAY 

Reality of Islamic Terrorism or Extremism by Dr. Tahirul QadriPLAY 

Sultan Shahin, Editor, NewAgeIslam speaks at UNHRC: Islam and Religious MinoritiesPLAY 

NEW COMMENTS

  • Nice bhai and right.
    ( By Md samir ansari )
  • Very sensible and prudent column.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • The Ummah and the Caliphate are obsolete concepts and have no....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Marxism, democratic socialism and enlightened capitalism are all laudable....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • UN has lost its credibility. It is simply a forum of debate. Hardly does...
    ( By Salman )
  • Adopting Christianity means adopting true religion of Allah.
    ( By Mahender Kumar )
  • Islam promotes violence ......etc against Khafirs.
    ( By Dr.A.Anburaj )
  • Talha's comment shows how talaq has been turned into a joke. People have derived new types of talaq...
    ( By Arshad )
  • The comment was posted thru mobile phone. And while typing on mobile, some errors occur and also it's automated dictionary takes pushes some words into ...
    ( By Arshad )
  • Saying that Islam emphasized education is hardly hubris except in the...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • کیوں نہ اہل ذکر سے مراد ماہرین لئیے جائیں یعنی جب بھی کوئی مسئلہ ہو اس علم کے ماہر سے پعچھع
    ( By qasim raza Tirmiz zi )
  • it is time for muslims globally - not just in india) to get out of their superiority...
    ( By hats off! )
  • Your article is in the same vein as current discourses in international....
    ( By Dr. Sharifah Munirah Alatas )
  • Good article! The author talks sense.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Hats Off hates any Muslim who favors peace, education and modernization....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Anything that promotes violence, coercion, intolerance, takfirism...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • such a breathtaking, once-in-a-millennium, nobel-prize-worthless comment...
    ( By hats off! )
  • Very interesting discussion, specially the brand new concept of "duty-free divorce." But....
    ( By Sultan Shahin )
  • No doubt, debate on Islamic ideologies must happen.
    ( By gholam ghouse )
  • I appreciate your thoughts.
    ( By Usha Jha )
  • If this is a religion of peace, then why is it not believed so by Jihadists and some Extremist non Muslims?,...
    ( By Talha )
  • These terrorists are weakening Muslims and therefore are playing the role of agents of anti-Islamic elements. '
    ( By Anjum )
  • لإخوان يستحلون قتل المخالف ولو كان ضعيفا محروما مقهورا، وفي أقل الأحوال يعملون على تشويهه وتقديم المبررات لاغتياله. '
    ( By عادل الشعبی )
  • Asking Zakir Naik to stop belittling the religions of others is tantamount to defanging him! He knows nothing else!
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Personal and family laws should be the responsibility of civil society. Religious scholars should keep out of....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • The United Kashmir Peoples National Party (UKPN) advocates a united...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Next move should be to bring the RSS on the path of Gandhi and Nehru...
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • It is not just Arab wealth. It is also Arab racism. The Prophet's last sermon....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • What a depraved and ignorant comment from Hats Off! She represents Christians, Jews, Muslims, Hindus and atheists of her little constituency in Minnesota.'
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • ilhan omar represents the free-booters and scalawags like some....
    ( By hats off! )
  • Ilhan Omar never said she represents all Muslims, or even Muslims....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • It is in the nature of fascist organizations to spread paranoia.
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Female circumcision must be prosecuted as a criminal assault with stiff penalties
    ( By Ghulam Mohiyuddin Faruki )
  • yahood o hanoodon se nafrat islami fitrat hai
    ( By hats off! )
  • are kafir admi ye Sarah edan BHI Muslim Nahi hai yahudi hai
    ( By Syed Mohammad Faizan )
  • This man is dishonest, mostly in western countries other minority's are well integrated and never....
    ( By Aayina )
  • Because democracy is run by Hypocrites and capitalist. Other factor added in last 70 years was ....
    ( By Aayina )
  • Instant Triple Thalak is banned and one Monolithic Arabian practice is eiiminated. Another Monolithic Arabian practice....
    ( By dr.A.Anburaj )
  • Shamless Hindu showing his Manhood power to grab girls, like Muslims. Shame on this kind of Hindus ....
    ( By Aayina )
  • Taha Deceiving is not explanation. Might be clear to you now.'
    ( By Aayina )