certifired_img

Books and Documents

Urdu Section

ریاست جموں وکشمیر میں زائد از دودہائیوں سے چلی آرہی شورش نے اس جنت نشان خطے کے بنیادی و ساختیاتی ڈھانچے کو تہس نہس کر کے رکھ دیا ہے۔ نتیجے میں وادی میں سیاسی بدامنی کا ماحول وسیع تر ہوتا گیا۔ حالات کے منفی رخ اختیار کرنے کا جہاں تک تعلق ہے تو اس کے لئے کسی کو تنہا مورد الزام نہیں ٹھہرایا جاسکتا اور ایسی الزام تراشیوں سے حالات بدلے بھی نہیں جاسکتے ۔ البتہ یہ ضرور کہا جاسکتا ہے کہ بہتری کی کوششوں میں بعض اوقات لاشعوری نقص بھی امکانات کوموہوم کردیتے ہیں ۔....

پہلی دلیل کی طرح اس دلیل میں یہ بھی بڑا بھاری سقم ہے کہ اس فرق کو جو عارضی اسباب سے پیدا ہوا ہے خلقی فرق سمجھا جاتا ہے ۔ حالانکہ بالفرض محال اگر عورتوں کے دماغ مردوں کے دماغوں کی نسبت علم تشریح کے رو سے کسی قدر ناقص بھی ثابت ہوں تب بھی یہ کیوں نہ سمجھا جائے کہ یہ لازمی نتیجہ ہے موجودہ تمدنی حالت عورت کا جن کے رو سے ان کی صحت جسمانی کی طرف سے کمال بے توجہی کی جاتی ہے ۔ اور ان کے نظام عصبی پر ایسے مضر اثر ڈالے جاتے ہیں جن سے ان کے قویٰ دماغی کے مختل ہونے کا اور ان کو بے صبر جلد ناز متلون مزاج زو درنج ۔ زود اعتقاد اور سخیف الرائے بنادنے کا ہمیشہ اندیشہ رہتا ہے۔....

 

سب جانتے ہیں کہ مرد اور عورت حیوان کی انواع ہیں۔ خدائے تعالیٰ نے حیوان میں حیوانی صفات کی تیزی اور خونخواری اور وحشت اور غضبناکی کم کرکے اور اپنی حکمت بالغہ سے اس میں قویٰ ملکوتی رکھ کر حیوان کی ایک نئی نوع بنائی ہے جس کا نام انسان رکھا ہے۔ پس مرد اور عورت کے مقابلہ سے انہیں قویٰ ملکوتی میں مقابلہ مقصود ہے نہ خصایل حیوانی میں مرد کی فضیلت یا زیادتی ثابت کرنا خصایل انسانی کے لحاظ سے ان کی رذالت ثابت کرنا ہے۔ثانیاً اگر یہ تسلیم کر ہی لیا جائے کہ مردوں کو قوت جسمانی کے لحاظ سے عورتوں پر فضیلت ہے تب بھی یہ قطعی طور پر ثابت نہیں ہوتا کہ مردوں کو یہ قوت فطرتاً حاصل ہوئی ہے یا خاص طور پر تمدن نے ان کو قوی بنادیا ۔.....

 

ہمارے تمدن کے مختلف اوضاع و اطوار محض اس جھوٹے دعوے پر مبنی ہے کہ مرد حاکم ہیں اور عورتیں محکوم ہیں اور عورتیں مردوں کے آرام کے لئے پیدا کی گئی ہیں۔ اور ان لئے وہ ان پر تقریباً اسی قسم کے اختیارات رکھتے ہیں جس طرح وہ ہر قسم کی جائیداد پر رکھتے ہیں اور ان کےحقوق مردو ں کے حقوق کے برابر نہیں ہوسکتے ۔ اگر اس غلط اور ناپاک اصول کو مرد صرف اپنے متعصب اور خود پسندی کا نتیجہ سمجھتے اور اس کی تائید میں کسی دلیل کے لانے کا دعویٰ نہ کرتے تو بھی ہم کو صبر آتا۔ لیکن ظلم تو یہ ہے کہ اس جھوٹے دعوے کو انصاف پر مبنی اور عقلی دلائل سے موید اور مرضی الہٰی کے مطابق جانتے ہیں۔ انہیں خیالات کی غلطی کو کھول دینا اور ان کی بے ہودگی کو ظاہر کردینا ہماری اس تحریر کا موضوع ہے۔....

 

آج کی نسل نہیں جانتی کہ جمعیۃ علما کیا ہے اور دیوبند سے اس کا رشتہ کیا ہے، اس کے اغراض ومقاصد کیا ہیں اور اس نے ہندوستان کےمسلمانوں کے لیے وہ کون سی خدمات انجام دی ہیں کہ آج قیادت ماضی کے اس اثاثے کو سینے سےلگائے آگے بڑھ رہی ہے؟اس ملک میں اور بھی جماعتیں ہیں مگر کسی کا ماضی اس قدر تابناک نہیں ، اس کی وجہ یہ ہے کہ جن بزرگوں نے جمعیۃ قائم کی ، اس کو پروان چڑھایا، اس کے فکر ی ارتقا میں حصہ لیا ان میں اخلاص بھی تھا، سوز بھی تھا ، تڑپ بھی تھی، خدمت کا جذبہ بھی تھا ، آج بھی یہ جماعت ایک تناور درخت کی طرح کھڑی ہوئی ہے۔...

 

Presented below is the complete text of the presidential speech delivered by Qari Syed Usman Mansoorpuri at Deoband’s three-day national convention that began on Nov. 1, 2009:

جدید تعلیمی نظام پر بھی اگر غور کریں تو ہم دیکھ سکتے ہیں کہ ثانوی تعلیم کی سطح پر اس ملک میں تین بورڈ کا م کررہے ہیں۔ سینٹر بورڈ آف سیکنڈری ایجوکیشن (سی بی ایس سی) ،مختلف ریاستوں کے انٹر میڈیٹ بورڈ اور انڈین اسکول سرٹیفیکٹ اکزامینشن (آئی ۔سی۔ایس۔ ای) ۔سوال یہ ہے کہ اسی طرز پر ہمارے مکاتب ومدارس کیوں نہیں کام کرسکتے ہیں۔ جو ادارے آزاد رہ کر کام کرنا چاہتے ہیں انہیں اس کا پورا حق ہے۔ لیکن جو الحاق چاہتے ہوں ان کے لئے بھی پوری گنجائش اور آزادی ہونی چاہئے ۔

 

یہ مدرسہ بورڈ ایکٹ کی چند دفعات ہیں، جن کو مختصر اً پیش کیا گیا ہے۔ ان کے مضمرات مدارس کی آزادی کو سلب کرنا ہے۔ ان  کے نصاب تعلیم کوبدلنا ہے اور نظام تعلیم کو مفلوج بنانا ہے۔ مدارس ہمارا دین ہیں ، ہماری دنیا نہیں ہیں۔ میں یہ بات باور کرانا چاہتا ہوں کہ مدرسہ اور مسجد کوئی بہت زیادہ فرق نہیں ہے۔ اگر مسجد میں نماز پڑھی جاتی ہے تو مدرسہ میں نماز پڑھنا سکھا یا جاتا ہے۔ اگر مسجد میں قرآن پڑھا یا جاتا ہے تو مدرسہ میں قرآن پڑھنا سکھایا جاتا ہے ۔ غرض مدرسہ وہ بنیادی جگہ ہے جہاں مسلمان کا رشتہ قرآن اور مسجد سے قائم ہوتا ہے۔....

 

امریکیوں نے گو انتانامو جیل میں تعینات اپنے فوجیوں پر پابندی عائد کی ہے کہ وہ مسلمان قیدیوں سے دور رہیں ،غیر ضروری گفتگو سے اجتناب کریں اور بالخصوص ان سے دوستی سے منع کیا گیا کیونکہ انہیں ڈر ہے کہ مسلمان قیدیوں سے دوستی کے نتیجے میں امریکی فوجی اسلام قبول نہ کرلیں۔گو انتا نامو جیل میں تعینات امریکی فوجی اسلام اور اس کے ماننے والوں کےدلوں سے اس کی محبت کم کرنے میں تو ناکام رہے مگر ا ن کا ایک فوجی اسلام تعلیمات سے متاثر ہوکر اور اپنے ساتھیوں کے اسلام کے بارے میں رویے سے متنفر ہوکر مسلمان ہوگیا۔...

 

ٹوئن ٹاورز کی تباہی پر پاکستان میں جن مذہبی جماعتوں اور دینی کارکنوں نے بھنگڑ سے ڈالے تھے وہ آج جی ایچ کیو کی ہائی جیکنگ پر ہننہنارہے ہیں۔پاک فوج اور حکومتی اداروں کا فریضہ ہے کے وہ جی ایچ کیو کیس کے ملزمان ،ان کے سرپرستوں ،انہیں اسلحہ پیسہ وگاڑیاں فراہم کرنے والے اعانت کنندوں اور ان کے بہی خواہوں پر ہنی ہاتھ ڈالیں ۔ماضی میں جہاں فوجی ڈاکٹیٹر وں نے تخت اسلام آباد کی حفاظت کے لئے مذہبی ونسلی جماعتوں کو لاجسٹک ومالی امداد کی وہاں جمہوری سرکاروں نے بھی انتہا پسندوں اور مذہبی جھتوں کو پایہ زنجیر کرنے سے اغماض برتا جس کے کئی بھیانک نتائج سامنے آئے۔ تازہ نتیجہ اور منظر جی ایچ کیو کیس کی شکل میں سامنے آیا ۔جس نے پوری قوم کو لرزا کر رکھ دیا ۔  روف عامر پپا بیار

 

A medieval state

Thank God, I am NOT a citizen of the Islamic state of Pakistan. Imagine if my parents had been enamoured of Jaswant Singh''s newfound hero Mohammad Ali Jinnah and migrated to the Islamic State of Pakistan. What a tragedy could have befallen my family and me! I could have either myself turned into a bigot or my kids could have taken up guns in the pursuit of a puritanical Islamic state like Saudi Arabia. I am extremely indebted to my parents for sticking to their roots in Allahabad and happily accepting the citizenship of ''Hindu India'' instead of saltanat-e-khudadad-e-Pakistan (godly kingdom of Pakistan). Ironically, there is nothing godly or saintly about Pakistan today. Pakistan could never become a modern republican state. So the state eventually withered away and got out of everyone''s control. There was a time not too long ago when the world believed that it was the Pakistan army whose writ ran the country. How naive was this understanding. -- Zafar Agha

مزید برآں جسونت سنگھ کے بعد ہندوستان میں سخت گیر ہندو نظریاتی تنظیم کےسابق سربراہ کے سودرشن نے بھی قائد اعظم محمد علی جناح کی تعریف کی ہے۔ سودرشن نے پریس کانفرنس میں کہاکہ جناح وطن پرست تھے ۔اگر مہاتما گاندھی نے تقسیم نہ ہونے پر زیادہ زور دیا ہوتا تو ہندوستان تقسیم نہ ہوتا ۔تاہم جب ان سے جسونت سنگھ کے بارے میں پوچھا گیاتو انہوں نے کہا کہ یہ بی جے پی کا اندرونی معاملہ ہے ۔سابق وزیر قانون اور ممتا زسیاست داں رام جیٹھ ملانی نے بھی کہا ہے کہ جسونت سنگھ نے جو بھی لکھا ہے وہ قابل تردید حقیقت ہے ،اگر کیبینٹ مشن پلان 1946آنے کے بعد نہرو ہٹ دھرمی کا مظاہرہ نہ کرتے اور سردار پٹیل ان کا ساتھ نہ دیتے تو برصغیر کا نقشہ آج کچھ اور ہوتا۔ ایم عارف حسین

 
کشمیر اور کشمیریت
اداریہ روزنامہ ہمارا سماج ،نئی دہلی

پاکستانی آرمی نے ہمارے ان علاقوں کو دہشت گردوں کے حوالے کررکھا ہے ، جس نے کشمیریت کو پروان چڑھانے میں اہم کردار ادا کیا تھا ۔ طرح طرح کے دہشت گرد عناصر اور ان کے خطرناک کیمپوں کے قیام کی وجہ سے نہ صرف پاک مقبوضہ کشمیر کا حسن داغدار ہوا ہے بلکہ روایتی طور پر جن عناصر ترکیبی کا مجموعہ اس خطے کو سمجھا جاتا تھا اس کا دور دور تک نام نشان نہیں ہے۔ پاک آرمی نے دراصل نہ صرف ہندوستان بلکہ دنیا کے ان تمام جمال پرستوں کے سامنے ایک خطرناک چیلنج پیش کیا ہے، جس کی پشت پناہی اب چین کرنے لگا ہے ۔....

 
حقیقت کا ادراک کیجئے
پروفیسر یاسین شیخ

ان دنوں پے درپے سیکورٹی فورسیز پر حملوں اور جی ایچ کیو پر قبضہ کرنے والوں کی ہلاکتیں بڑی کامیابیاں ہیں لیکن اتنی بڑی بھی نہیں کہ پوری زندگی انہی حسین تصورات میں گزاری جاسکے۔ اب آئندہ کے سخت مراحل درپیش ہیں۔ یہ درست ہے کہ فوج کے عزائم بلند ، ادارے مضبوط سوچ میں استحکام ہےلیکن جب وہ دہشت گردوں کی کمین گاہوں کو تباہ کرنے کا فریضہ سرانجام دے رہی ہوتو عو ام کے تمام طبقات کو اس کی پشت پناہی کرنی ہوگی۔یہ پشت پناہی ان تمام عناصر کے ذریعے ممکن ہے جو یا حکومت میں شامل ہیں یا آئندہ بننے والی حکومتوں کے امیدوار ہیں۔ ان سب کو ایک ساتھ رکھنے کی حکمت عملی اختیار کی جائے۔ ملک کے کسی حصے کو سوات اور مالا کنڈی کی طرح زیادہ دیر تک کسی تنظیم یا گروہ کے رحم وکرم پر چھوڑ نے کی حماقت نہ کی جائے۔  پروفیسر یاسین شیخ

مجوزہ مرکزی مدرسہ بورڈ کے تعلق سےایک الزام یہ بھی عائد کیا گیا ہے کہ یہ مدارس پر شکنجہ کسنے کے امریکی پلان کا حصہ ہے۔ ایک گروہ نے یہ بھی کہا کہ بورڈ کا خیال اڈوانی کےدماغ کی اپج ہے۔ مجھے ان الزامات کی تردید کرنے کا کوئی حق نہیں ہے۔ لیکن میں اس سے بھی آگے بڑھ کر یہ کہتا ہوں کہ اگر یہ پلان امریکہ کے بجائے اسرائیل کا بھی ہواور اگر یہ خیال اڈوانی کے بجائے مودی اور توگڑیا کا بھی ہوتب بھی اس سے فائدہ اٹھانے میں حرج کیا ہے؟ پیمانہ یہ ہونا چاہئے کہ فائدہ عقیدہ کی قیمت پر نہ  ہو ۔....

 

گذشتہ ہفتہ جب ایک امریکی تحقیقی ادارے پیو (PEW)نے دنیا بھر کی مسلم آبادی کے اعداد وشمار جاری کئے تو اسے اخبارات میں نمایا ں جگہ ملی اور مسلمانوں میں خوشی کی لہر دوڑ گئی ۔ظاہر ہے مسلمانوں کے لئے اس سے بڑھ کر خوشی کی بات اور کیا ہوسکتی ہے کہ وہ مذہبی طور پر عیسائیوں کے بعد اب دنیا کی دوسری بڑی آبادی بن گئے ہیں ۔امریکی تحقیقی ادارے کا کہنا ہے کہ عیسائیت کے بعد اسلام دنیا کا دوسرا سب سے بڑا مذہب ہے ۔دنیا میں عیسائیوں کی مجموعی آبادی 2ارب 10کروڑ سے زائد ہے۔  معصوم مراد آبادی

 

By Farooq Argali

 

 

The opposition of Central Madrasa Board is needless. It is not in favour of Muslim community. This Board will obviously help in the development of Muslims. The present government is minority-favouring and they are trying to establish a greatly needed Board on the basis of Sachchar Committee recommendations. Unfortunately, that is being opposed by none other than the Muslims intellectuals and scholars of the country themselves. It will help our madrasa students to acquire Islamic and modern education, at the same time enabling them to reach to higher government posts. Sir Syed Ahmad Khan had founded Mohammedan Anglo-Oriental College in 1857 with the aim and ambition of the welfare of Muslim community. It is presently world-famous with the name Aligarh Muslim University for the great service it is doing for the welfare of the community. His effort too, was vehemently opposed at the initial stage by the then Islamic scholars and educationists. -- Mahmood Alam Siddiqui (Translated from Urdu by Raihan Nezami)

ہریانہ، ہندوستان اور اردو کے اس نامور فرزند کی ولادت 1837کو پانی پت کے محلّہ انصار یان میں ہوئی ۔ ان کے والد کا نام خواجہ ایزوبخش تھا۔ حالی کے جد اعلیٰ سلطان غیاث الدین بلبن کے عہد میں ایران سے ہندوستان آئے تھے ۔ مدت دراز تک یہ خاندان نہایت معزز ،مقبول اور خوشحال رہا۔ لیکن استداد زمانہ کے ہاتھوں حالی کے والدخواجہ ایز دبخش غربت وافلاس کی زندگی گزاررہے تھے۔حالی نے اسی تنگدستی اور ناداری کے ماحول میں آنکھ کھولی۔ ان کی پیدائش کے کچھ عرصہ بعد والدہ کا انتقال ہوگیا۔ جب وہ 9سال کے تھے والد بھی اس دنیا سے رخصت ہوگئے ۔ ان کی پرورش ان کے بڑے بھا ئی نے کی۔....

 

سرسیّد نے تعلیم پر اس لیے زیادہ زور دیا کہ انہیں اندازہ ہوگیا تھا کہ انگریزوں کو ہتھیار اور مادّی قوتوں سےشکست نہیں دی جاسکتی کیونکہ پوری دنیا میں مسلمان دھیرے دھیرے زوال کی طرف جارہے تھےاور یورپ نے 16ویں اور 17ویں صدی میں جو سائنسی برتری حاصل کی تھی اس کی زد میں دھیرے دھیرےسارے مسلمان ملک آرہے تھے ۔اسی لیے سرسیّد نے زیادہ زور جدید تعلیم پر دیا ان کو یہ بات سمجھ میں آگئی تھی کہ جدید تعلیم کے بغیرمسلمانوں کا مستقبل بالکل تاریک ہے۔سرسیّد کی دوربین نگاہوں نے دیکھ لیا تھا کہ زندگی نے جو رخ اختیار کرلیا ہے اس کو بدلا نہیں جاسکتا اس میں رکاوٹ پیدا کر کے اس کی رفتار کو بھی روکا نہیں جاسکتا بلکہ ایسا کرنے والے خود تباہ ہوکر رہ جائیں گے۔  ڈاکٹر شکیل صمدانی

سرسید احمد خاں 1817میں دہلی کے ایک معزز خاندان میں پیدا ہوئے ۔ آپ کے والد میر متقی اور والدہ بڑی نیک سیرت باہمت ،بااخلاق اور حوصلہ مند خاتون تھیں۔ آپ کی تعلیم وتربیت میں والدہ کا ہی سب سے بڑا حصہ ہے۔ انہوں نے آپ کو ایمانداری اور سچائی کی زندگی پر چلنے کا راستہ سکھایا۔ سرسید پڑھ لکھ کر 1838میں ایسٹ انڈیا کمپنی میں ملازم ہوگئے ۔ ان کی سچائی اور ایمانداری سےمثاثر ہوکر سرکار نے انعامات سے نوازہ اور ترقی کر کے جج بن گئے ۔ 1842میں بہادر شاہ ظفر نےسرسید کو ‘‘عارف جنگ جوالدولہ’’ کا خطاب عطا کیا ۔سرسید انگریز حکومت کے وفادار ہونے کے باوجود حق بات کہنے میں کبھی نہیں جھجکتے تھے ۔ انہوں نے انگریزوں کے خلاف سختی سے نکتہ چینی کی ہے۔....

آخر کیا وجہ ہے کہ کل تک اسلامی نظام کی بات کرنے والی یہ تنظیمیں بہت اچھی لگتی تھیں آج اچانک خراب لگنے لگیں ۔ جو کل تک روس، امریکہ اور اسرائیل کے خلاف اعلان جنگ کررہی تھیں آج وہی پاکستان اور ایران کے خلاف محاذ آرائی پراتر آئی ہیں۔مسلمانوں کا قتل عام کرکے ، مسلمانوں کو مار کر ، ان کے گھروں کو تباہ وبرباد کرکے، اپنی ہی بہن بیٹیوں کو بیوہ کر کے، اپنے ہی بچوں کو یتیم کرکے، آخر یہ کون سانظام مصطفیٰ نافذ کرنا چاہتے ۔ جس نظام میں سبھی لوگ لنگڑے ،لولے،اپاہج ،نابینا نظر آئیں گے۔....

 

مولانا رحمانی کے اس ا نقلابی اقدام نے  ہماری توجہ ایک اور حقیقت کی طرف بھی منعطف کرائی۔ مسلمانوں کی معاشی ، تعلیمی اور سماجی زندگی میں جس بہترین کی کوشش جنوبی ہندوستان میں کی جارہی ہیں ،شمالی ہندوستان میں ان کوششوں کا عشر عشیر بھی نظر نہیں آتا ۔ کیرل ،کرنانک، تمل ناڈو اور آندھرا کی غیر سیاسی مسلم تنظیمیں جوکام کررہی ہیں، شمالی ہندوستان میں بہت سے لوگوں کو ان کا علم بھی نہیں ہے۔ ایک تو شمالی ہندوستان میں غیر سیاسی مسلم تنظیمیں ہی عنقا ہیں اور جو ہیں بھی ،انہوں نے کوئی ایسا کارنامہ انجام نہیں دیا ہے ، جس کی مثال دی جاسکے ۔...

یونیورسٹی کا اقلیتی کردار عزیز ہے جائز بات ہے۔ علی گڑھ والوں کو مسلم یونیورسٹی میں مسلمانوں کی اکثریت برقرار رہنے کی فکر ہے صدفی صد اس کا حق ہے۔

لیکن ان خواہشات کی تکمیل کے لئے ہم اپنے علاوہ ہر دوسرے شخص کو ذمے دار سمجھتے ہیں ۔کبھی ہمیں حکومت سے شکایت ہوتی ہے کبھی ہمیں وائس چانسلر سے شکوہ ہوتا ہے ،کبھی ہم ملت کے اکابرین سے مطالبات کرتے ہیں ۔پھر الزام اور جوابی الزام کا سلسلہ شروع ہے۔ پھر گروپ بندیاں ہوتی ہیں، اخباری بیانات آتے ہیں، مقدمے بازی ہوتی ہے،یونیورسٹی بند ہوتی ہے ، پولس آتی ہے ، اخراج ہوتا ہے ، گرفتاریاں ہوتی ہیں، ہندی اور انگریزی اخبارات جم کر یونیورسٹی کو بدنام کرنےوالی خبریں ،مضامین اور رپورٹیں شائع کرتے ہیں ۔  جاوید حبیب

 

صاحبو! سندھ کی رواداری کے کیا کہنے ۔ہندو یہا ں کے جدی پشتی رہنے والے ’ بد ھ مت کے ماننے والے یہاں آباد’ فتح ایران کے بعد جان بچا کر بھاگنے والے آتش پرست جو پارسی کہلاتے ہیں ، یہاں ان کی اگیاریاں قائم ہوئیں اور ا نہیں پناہ ملی ۔انیسوی صدی میں قاچاریوں نے بہائیوں کے سروں میں میخیں ٹھونکیں اور ان کی کھالیں کھینچیں تو انہیں سندھ جائے امان نظر آیا ۔عیسائی یہا ں موجود ،ان کے کیسے شاندار گرجا گھر اپنی بہار دکھاتےہیں ۔ 20ویں صدی شروع ہوئی تو کراچی میں 2500یہودی رہتے تھے ۔تاجر ’ سول سرونٹ’ استاد اور ہنر مند ۔ ان کے لئے 1893میں مگین شلوم کے نام سے ایک سینی گاگ تعمیر ہوا۔ پاکستان بننے کے بعد یہاں یہودیوں کے خلاف جس طرح مہم شروع ہوئی اس کے بعد کراچی میں رہنے والے او رمراٹھی بولنے والے یہودیوں کے خلاف جس طرح مہم شروع ہوئی اس کے بعد کراچی میں رہنے والے اور مراٹھی بولنے والے یہودیوں نے ہندوستان ’ اسرائیل اور انگلستان کا رخ کیا۔    زاہدہ حنا

 


Get New Age Islam in Your Inbox
E-mail:
Most Popular Articles
Videos

The Reality of Pakistani Propaganda of Ghazwa e Hind and Composite Culture of IndiaPLAY 

Global Terrorism and Islam; M J Akbar provides The Indian PerspectivePLAY 

Shaukat Kashmiri speaks to New Age Islam TV on impact of Sufi IslamPLAY 

Petrodollar Islam, Salafi Islam, Wahhabi Islam in Pakistani SocietyPLAY 

Dr. Muhammad Hanif Khan Shastri Speaks on Unity of God in Islam and HinduismPLAY 

Indian Muslims Oppose Wahhabi Extremism: A NewAgeIslam TV Report- 8PLAY 

NewAgeIslam, Editor Sultan Shahin speaks on the Taliban and radical IslamPLAY 

Reality of Islamic Terrorism or Extremism by Dr. Tahirul QadriPLAY 

Sultan Shahin, Editor, NewAgeIslam speaks at UNHRC: Islam and Religious MinoritiesPLAY 

NEW COMMENTS

  • When Quran mentions to do things in the cause of Allah, it is meant for good deeds instead of evil. The following...
    ( By zuma )
  • Jihad in Quran does not imply physical violence. The following is an extract....
    ( By zuma )
  • Naseer sb. asks, "why if what I said would please....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • In his last comment Naseer sb. had said, "What I am saying on....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Naseer sb., You accuse me of not accepting the Quran....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Sounds good! But the struggle against ISIS and Al Qaeda has....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • GM sb, You have not answered the question "why if what I said would please the Wahhabis, it does not please you?"....
    ( By Naseer Ahmed )
  • This article is about the fact that our potential as human beings is both enabled and limited by biology...
    ( By Naseer Ahmed )
  • Gm sb says: “I asked what point were you trying to make by unnecessarily ....
    ( By Naseer Ahmed )
  • Thaks for updating.'
    ( By Naman Ojha )
  • Every nation goes through this kind of thing as they develop. Violence is bad way
    ( By Sudhir Kishor )
  • Amazing! As A Muslim Woman I can only say that this man Knows Qur'an. '
    ( By Vinayak deshmukh )
  • Thanks for sharing great Question by Sultan Shahin'
    ( By Vikas )
  • Naseer sb., The controversy is about whether Science......
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Good piece
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • The present monarchy is not likely to leave without....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Naseer sb. says, "while shirk is an unforgivable sin, what....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Naseer sb., Whether Allah's six days equal 14 billion years or not is not....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • 1slam, Welcome to the Dark Ages where our religion sets....
    ( By Kyle Reese )
  • Religion is riddled in darkness all of them, pedophilia is sick no matter....
    ( By Atheist )
  • Every nation goes through this kind of thing as they develop. Christianity....
    ( By Kelsey Bouchard )
  • every day muslims brag about how their religion is the fastest growing....
    ( By Himanshu Kukreja )
  • I can see clear cultural differences in the sob-continent. In one....
    ( By Weltshmerz )
  • WOW!!! As A Muslim Woman I can only say that this man Knows....
    ( By Yushra K )
  • The article ends with: It is however necessary to remind, that while.. .
    ( By Naseer Ahmed )
  • GM sb, after he has lost the argument, will. ..
    ( By naseer ahmed )
  • mr naseer ahmed displays an astounding ignorance of everything he...
    ( By hats off! )
  • The UN has failed to curb oppression over Muslims around the world
    ( By Sohail )
  • It is made amply clear in the article that a day that Allah speaks of in the context of creation....
    ( By Naseer Ahmed )
  • Naseer sb. continues to try to confuse us. Maybe he is confused....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Another article from Naseer sb. making some tall claims! He says, "Allah says....
    ( By Ghulam Mohiyuddin )
  • Hadith calls Muslims to strive Jihad with their tongues and wealth.....
    ( By zuma )
  • Hadith supports the same that jihad is not meant for fighting. The.....
    ( By zuma )
  • In all the quotes of Zuma, the word Jihad appears only in parenthesis, which means that the word ...
    ( By Naseer Ahmed )
  • Jihad and Khalifa are used in the Quran but they were not meant to be a doctrine of hate and violence.'
    ( By Arshad )
  • Well said although looks difficult considering the present situation! '
    ( By Naseer Ahmed )
  • Jihad in Quran can imply the way you spend your wealth. The following is the extract from Quran 2:195, Mohsin Khan....
    ( By zuma )
  • Justice Cornelius a practicing Christian, was a better Muslim than the rest. Unfortunately, ...
    ( By Naseer Ahmed )
  • If the words khilafat and Jihad appear in the Quran, these are eternal concepts. These words however, do ....
    ( By Naseer Ahmed )
  • GM sb continues to blubber nonsense contradicting himself. While he accuses me of saying that according to the Quran, human ....
    ( By Naseer Ahmed )