certifired_img

Books and Documents

Forward this page

Thank you for your interest in spreading the word on New Age Islam.
Your Email:
Your Name:
Send To: (To send to multiple addresses, please separate e-mail IDs with commas.)
Your Personal Message:
You are going to email the following:

قرآن کی بالکل پہلی آیت میں ہی حصول علم، دانشورانہ مزاج اور جدید ٹیکنالوجی کی ایجادات میں انسانی کوششوں کو بڑی اہمیت دی گئی ہے: ‘‘اور جو کچھ آسمانوں میں ہے اور جو کچھ زمین میں ہے سب کو اپنے (حکم) سے تمہارے کام میں لگا دیا۔ جو لوگ غور کرتے ہیں ان کے لئے اس میں (قدرت خدا کی) نشانیاں ہیں’’ (45:13)۔ کائنات کی تمام مخلوق اور اس کے رازہائے سر بستہ کی دریافت کو اس قدر اہمیت دینے اور دیگر مخلوقات کی قد و قامت اور ڈھانچے کے بارے میں غور و فکر کرنے کا حکم دینے کے پیچھے قرآن کا واضح مقصد انسانوں کے اندرتخلیقی صلاحیت اور سائنسی مزاج پیدا کرنا ہے، ‘‘یہ لوگ اونٹوں کی طرف نہیں دیکھتے کہ کیسے (عجیب )پیدا کیے گئے ہیں۔ اور آسمان کی طرف کہ کیسا بلند کیا گیا ہے۔ اور پہاڑوں کی طرف کہ کس طرح کھڑے کیے گئے ہیں۔ اور زمین کی طرف کہ کس طرح بچھائی گئی’’ (88:17-20)۔