certifired_img

Books and Documents

Urdu Section (01 Aug 2018 NewAgeIslam.Com)


Sufi discourse: Every Creature in this world Obeys God’s Commands —Part-7 بزبانِ تصوف: اس کائنات کا ہر ذرہ اللہ کی طاعت و بندگی میں مصروف ہے

 

 

مصباح الہدیٰ قادری ، نیو ایج اسلام

28 جولائی 2018

یہ کار خانۂ قدرت ایک راز ہے جس میں خلاّق کائنات کے بے حد و حساب اسرار پوشیدہ ہیں۔ اس کائنات کی ہر مخلوق اللہ کی بندگی میں سر خمیدہ اس کی تسبیح و تہلیل میں ہمہ تن مصروف ہے ۔ صرف سرکش انسان ہی ہے جو نافرمانی اور بغاوت کا طوق گلے میں ڈالے پھر رہا ہے۔ اگر دل کی آنکھیں روشن ہوں تو انسان دیکھے کہ کس طرح کائنات کا ذرہ ذرہ اس کی طاعت و فرمانبرداری میں گم ہے۔

قرآن میں اللہ کا فرمان ہے:

وَمَا خَلَقْتُ الْجِنَّ وَالْإِنْسَ إِلَّا لِيَعْبُدُونِ (51:56)

ترجمہ: ‘‘اور میں نے جن اور آدمی اتنے ہی لیے بنائے کہ میری بندگی کریں،’’ (کنز الایمان)

أَلَمْ تَرَ أَنَّ اللَّهَ يُسَبِّحُ لَهُ مَن فِي السَّمَاوَاتِ وَالْأَرْضِ وَالطَّيْرُ صَافَّاتٍ ۖ كُلٌّ قَدْ عَلِمَ صَلَاتَهُ وَتَسْبِيحَهُ ۗ وَاللَّهُ عَلِيمٌ بِمَا يَفْعَلُونَ (24:41)

ترجمہ: ‘‘کیا تم نے نہ دیکھا کہ اللہ کی تسبیح کرتے ہیں جو کوئی آسمانوں اور زمین میں ہیں اور پرندے پر پھیلائے سب نے جان رکھی ہے اپنی نماز اور اپنی تسبیح، اور اللہ ان کے کاموں کو جانتا ہے،’’ (کنز الایمان)

الشَّمْسُ وَالْقَمَرُ بِحُسْبَانٍ (5) وَالنَّجْمُ وَالشَّجَرُ يَسْجُدَانِ (55:6)

ترجمہ: ‘‘سورج اور چاند حساب سے ہیں ، اور سبزے اور پیڑ سجدہ کرتے ہیں،’’ (کنز الایمان)

إِن كُلُّ مَن فِي السَّمَاوَاتِ وَالْأَرْضِ إِلَّا آتِي الرَّحْمَٰنِ عَبْدًا (19:93)

ترجمہ: ‘‘آسمانوں اور زمین میں جتنے ہیں سب اس کے حضور بندے ہو کر حاضر ہوں گے،’’ (کنز الایمان)

تُسَبِّحُ لَهُ السَّمَاوَاتُ السَّبْعُ وَالْأَرْضُ وَمَن فِيهِنَّ ۚ وَإِن مِّن شَيْءٍ إِلَّا يُسَبِّحُ بِحَمْدِهِ وَلَٰكِن لَّا تَفْقَهُونَ تَسْبِيحَهُمْ ۗ إِنَّهُ كَانَ حَلِيمًا غَفُورًا (4417:)

ترجمہ: ‘‘اس کی پاکی بولتے ہیں ساتوں آسمان اور زمین اور جو کوئی ان میں ہیں اور کوئی چیز نہیں جو اسے سراہتی ہوتی اس کی پاکی نہ بولے ہاں تم ان کی تسبیح نہیں سمجھتے بیشک وہ حلم والا بخشنے والا ہے،’’ (کنز الایمان)

 اسی نکتے کی وضاحت کرتے ہوئے حضرت شیخ شرف الدین احمد یحیٰ منیری رحمۃ اللہ علیہ فرماتے ہیں ،

‘‘تابدانی کہ خدا عز و جل را با آفریدگان خویش سر ہاست و کارہاست کہ عقل و فہم آنجا راہ نیابد و اِن من شئی الا یسبح بحمدہ شاہد بسند است سر اینست کہ گفت، مثنوی ؛ ہزاران قطرہ زین وادی بر آیند * بدین درگہ بزانو اندر آیند - ز عجز خویش میگویند ای پاک * تو ئی معروف و عارف ما عرفناک۔ ہرگز دیدۂ دولتت برین ورق نیفتادہ است کہ ‘و ما یعلم جنود ربک الا ھو’، اگر برقع جہولی از دیدہ فرو کشائی ہمہ عالم بجمال بندگی او آراستہ بینی و اگر از صفت ظلوی بردن آئی ہمہ آفریدگان را در طلبش دوان و پویان بینی۔

ترجمہ:( یہ تمام باتیں اس لئے کی گئیں) تاکہ تیرے دل میں یہ بات اتر جائے کہ اس کائنات سے اللہ کے اتنے اسرار و مہمات وابستہ ہیں کہ انسانی عقل میں ان کا احاطہ ممکن ہی نہیں ہے۔ اس کی دلیل میں قرآن کی یہ آیت ہی کافی ہے ، ‘‘وَإِن مِّن شَيْءٍ إِلَّا يُسَبِّحُ بِحَمْدِهِ وَلَٰكِن لَّا تَفْقَهُونَ تَسْبِيحَهُمْ’’، ترجمہ؛ ‘‘اور جو کوئی ان میں ہیں اور کوئی چیز نہیں جو اسے سراہتی ہوتی اس کی پاکی نہ بولے ہاں تم ان کی تسبیح نہیں سمجھتے’’۔ کسی عارف نے اسی راز کو افشاں کیا ہے؛

مثنوی ؛

ہزاران قطرہ زین وادی بر آیند       *      بدین درگہ بزانو اندر آیند

ترجمہ: اس وادیٔ (خلق) کے ہزاروں قطرے بارگاہِ (احدیت و صمدیت) میں سر کے بل حاضر آتے ہیں

ز عجز خویش میگویند ای پاک   *      تو ئی معروف و عارف ما عرفناک

ترجمہ: اور سراپا عجز و نیاز بن کر (زبان حال) سے گویا ہوتے ہیں ‘‘اے بار الٰہ تو ہی عارف بھی ہے اور توہی معروف بھی ، ہم تو (کما حقہ) تیرے عرفان سے عاجز ہیں’’۔

کیا تیرخوش قسمت نگاہیں کبھی اللہ کے اس پیغام پر نہیں پڑیں ، ‘‘وَمَا يَعْلَمُ جُنُودَ رَبِّكَ إِلَّا هُوَ(۳۱:۷۴)’’، ترجمہ: ‘اور تمہارے رب کے لشکروں کو اس کے سوا کوئی نہیں جانتا’،(کنز الایمان)۔ اگر تو اپنی نگاہوں پر پڑے جہالت کے پردے چاک کر دے تو تجھے ساری کائنات اللہ کی طاعت و بندگی میں کمربستہ نظر آئے۔ اور اگر جہالت و تاریکی کے سائے سے تو باہر آ سکے تو تجھے یہ معلوم ہو کہ اس کائنات کا ذرہ ذرہ اس کی طلب اور معرفت کے حصول میں سرگرداں ہے۔

جاری............

URL for Part -1: http://www.newageislam.com/urdu-section/misbahul-huda,-new-age-islam/sufi-discourse--piety-enables-us-to-achieve-salvation-–part-1---بزبان-تصوف--تقویٰ-حصول-نجات-کا-ذریعہ-ہے/d/115819

URL for Part-2: http://www.newageislam.com/urdu-section/misbahul-huda,-new-age-islam/sufi-discourse--piety-urges-us-to-purify-our-soul-and-heart-–-part-2---بزبان-تصوف--تقویٰ-تصفیہ-ٔقلب-و-باطن-کا-داعی/d/115864

URL for Part-3: http://www.newageislam.com/urdu-section/misbahul-huda,-new-age-islam/sufi-discourse--piety-goes-beyond-heaven-and-hellfire---part-3---بزبان-تصوف--تقویٰ-جنت-کی-طمع-اور-جہنم-کے-خوف-سے-آزاد-ہے/d/115908

URL for Part-4: http://www.newageislam.com/urdu-section/misbahul-huda,-new-age-islam/sufi-discourse--taqwah-cannot-be-pursued-until-our-all-deeds-are-only-for-allah-almighty—part-4---بزبان-تصوف--تقویٰ-کا-تقاضا-ہے-کہ-ہمارے-تمام-اعمال-صرف-اللہ-کے-لئے-ہی-ہوں/d/115919

URL for Part-5: http://www.newageislam.com/urdu-section/misbahul-huda,-new-age-islam/sufi-discourse--taqwah-is-an-antidote-to-haughtiness—part-5---بزبانِ-تصوف--تقویٰ-غرور-و-تکبر-کا-نشہ-توڑتا-ہے/d/115941

URL for Part-6: http://www.newageislam.com/urdu-section/misbahul-huda,-new-age-islam/sufi-discourse--every-creature-in-this-world-has-its-own-rights-—part-6---بزبانِ-تصوف--تمام-مخلوقات-کے-حقوق-کی-پاسداری-تقویٰ-تقاضا/d/115977

URL: http://www.newageislam.com/urdu-section/misbahul-huda,-new-age-islam/sufi-discourse--every-creature-in-this-world-obeys-god’s-commands-—part-7---بزبانِ-تصوف--اس-کائنات-کا-ہر-ذرہ-اللہ-کی-طاعت--و-بندگی-میں-مصروف-ہے/d/116000

New Age Islam, Islam Online, Islamic Website, African Muslim News, Arab World News, South Asia News, Indian Muslim News, World Muslim News, Women in Islam, Islamic Feminism, Arab Women, Women In Arab, Islamphobia in America, Muslim Women in West, Islam Women and Feminism

 




TOTAL COMMENTS:-    


Compose Your Comments here:
Name
Email (Not to be published)
Comments
Fill the text
 
Disclaimer: The opinions expressed in the articles and comments are the opinions of the authors and do not necessarily reflect that of NewAgeIslam.com.

Content